روسی ایس-300 میزائل سسٹم کی خریداری کے لیے بات چیت جاری ہے ۔ تہران میں عراقی سفیر

ایران میں عراق کے سفیر سعد جواد قندیل نے تصدیق کی ہے کہ بغداد حکومت روس کا ایس-300 فضائی دفاعی میزائل سسٹم خریدنے کے لیے روس کے ساتھ مذاکرات کر رہی ہے۔ روسی خبر رساں ایجنسی اسپٹنک نے سفیر کے حوالے سے بتایا ہے کہ مذکورہ سسٹم کی خریداری جلد عمل میں آ سکتی ہے۔

سفیر کے مطابق ایس۔300 سسٹم کی خریداری کا معاملہ روس اور عراق کے درمیان بات چیت کی میز پر موجود ہے۔

سعد جواد کا کہنا ہے کہ عراق اپنے ہتھیاروں کے ذرائع کو متنوع بنانے کا خواہش مند ہے اورعراق کے روس کے ساتھ ہتھیاروں سے متعلق سمجھوتے موجود ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ “عراق روس تعلقات بہت اچھے ہیں … بغداد تمام ہمسایہ ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات کا خواہاں ہے”۔

اس سے قبل عراقی پارلیمنٹ میں دفاع اور سیکورٹی سے متعلق کمیٹی کے سربراہ محمد رضا یہ بتا چکے ہیں کہ بغداد حکومت نے ایس-300 سسٹم کی خریداری کے حوالے سے ماسکو کے ساتھ دوبارہ بات چیت کا آغاز کر دیا ہے۔

یاد رہے کہ عراق 2017 سے مذکورہ روسی فضائی دفاعی سسٹم خریدنے کی کوشش کر رہا ہے۔ تاہم امریکہ کی جانب سے اقتصادی پابندیاں عائد کرنے کی دھمکی ابھی تک مذاکرات کی راہ میں رکاوٹ بنی ہوئی ہے۔

Care to Share?

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

four × two =