Shadow
سرخیاں
پولینڈ: یوکرینی گندم کی درآمد پر کسانوں کا احتجاج، سرحد بند کر دیخود کشی کے لیے آن لائن سہولت، بین الاقوامی نیٹ ورک ملوث، صرف برطانیہ میں 130 افراد کی موت، چشم کشا انکشافاتپوپ فرانسس کی یک صنف سماج کے نظریہ پر سخت تنقید، دور جدید کا بدترین نظریہ قرار دے دیاصدر ایردوعان کا اقوام متحدہ جنرل اسمبلی میں رنگ برنگے بینروں پر اعتراض، ہم جنس پرستی سے مشابہہ قرار دے دیا، معاملہ سیکرٹری جنرل کے سامنے اٹھانے کا عندیامغرب روس کو شکست دینے کے خبط میں مبتلا ہے، یہ ان کے خود کے لیے بھی خطرناک ہے: جنرل اسمبلی اجلاس میں سرگئی لاوروو کا خطاباروناچل پردیش: 3 کھلاڑی چین اور ہندوستان کے مابین متنازعہ علاقے کی سیاست کا نشانہ بن گئے، ایشیائی کھیلوں کے مقابلے میں شامل نہ ہو سکےایشیا میں امن و استحکام کے لیے چین کا ایک اور بڑا قدم: شام کے ساتھ تذویراتی تعلقات کا اعلانامریکی تاریخ کی سب سے بڑی خفیہ و حساس دستاویزات کی چوری: انوکھے طریقے پر ادارے سر پکڑ کر بیٹھ گئےیورپی کمیشن صدر نے دوسری جنگ عظیم میں جاپان پر جوہری حملے کا ذمہ دار روس کو قرار دے دیااگر خطے میں کوئی بھی ملک جوہری قوت بنتا ہے تو سعودیہ بھی مجبور ہو گا کہ جوہری ہتھیار حاصل کرے: محمد بن سلمان

پوپ فرانسس کی یک صنف سماج کے نظریہ پر سخت تنقید، دور جدید کا بدترین نظریہ قرار دے دیا

کیتھولک عیسائیوں کے مذہبی پیشوا پوپ فرانسس نے لبرل نظریہ یک صنف کو جدید دور کا بدترین نظریہ اور فتنہ عظیم قرار دیا ہے۔ مرد-خاتون: خدا کی شبیہ نامی مجلس سے خطاب کرتے ہوئے 87 سالہ عیسائی پیشوا کا کہنا تھا کہ مرد و زن کے کردار اور ان سے وابستہ موضوعات پر گفتگو وقت کی اہم ضرورت ہے، کیونکہ دور جدید کا غلیظ ترین نظریہ یک صنفی نظریہ ہے، انسانوں کی دونوں اصناف کے مروجہ کرداروں کو ختم کرکے یک صنف کی ترویج کی کوشش کی جا رہی ہے۔ بڑے عالمی رہنما کا کہنا تھا کہ ایسا کرنا انسانیت کو تلف کرنے کے مترادف ہو گا۔

پوپ فرانسس نے دنیا کی تباہی کی پیشنگوئی پر مبنی کیتھولک پادری رابرٹ ہگ بینسن کے 1907 کے ناول کا حوالہ دیتے ہوئے خطاب میں کہا کہ اس میں بھی پیش گوئی کی گئی تھی کہ مرد و خواتین کے مابین تنازعات اور اختلافات شدید ہوں گے، اور مذہبی تعلیمات و اقدار کی کوئی جگہ نہیں ہو گی۔

پوپ فرانسس کے خطاب پر کچھ لوگوں کی جانب سے حیرانگی کا اظہار بھی کیا جا رہا ہے خصوصاً کیونکہ کچھ ہی ماہ قبل ویٹیکن نے ہم جنس پرستی اور ہم جنس شادیوں کے مخالف سخت مؤقف پہ کمزوری اختیار کرتے ہوئے کہا تھا کہ مخصوص صورتحال میں ان کے لیے رحمت کی دعا کیا جا سکتی ہے۔

واضح رہے کہ آرتھوڈاکس عیسائی کلیسا نے اس کمزوری پہ سخت ردعمل کا اظہار کیا تھا اور اسے خدا کی ناراضگی اور عیسائی تعلیمات کے بالکل برخلاف قرار دیا تھا۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

19 − nineteen =

Contact Us