جمعہ, فروری 23 https://www.rt.com/on-air/ Live
Shadow
سرخیاں
صدر ایردوعان کا اقوام متحدہ جنرل اسمبلی میں رنگ برنگے بینروں پر اعتراض، ہم جنس پرستی سے مشابہہ قرار دے دیا، معاملہ سیکرٹری جنرل کے سامنے اٹھانے کا عندیامغرب روس کو شکست دینے کے خبط میں مبتلا ہے، یہ ان کے خود کے لیے بھی خطرناک ہے: جنرل اسمبلی اجلاس میں سرگئی لاوروو کا خطاباروناچل پردیش: 3 کھلاڑی چین اور ہندوستان کے مابین متنازعہ علاقے کی سیاست کا نشانہ بن گئے، ایشیائی کھیلوں کے مقابلے میں شامل نہ ہو سکےایشیا میں امن و استحکام کے لیے چین کا ایک اور بڑا قدم: شام کے ساتھ تذویراتی تعلقات کا اعلانامریکی تاریخ کی سب سے بڑی خفیہ و حساس دستاویزات کی چوری: انوکھے طریقے پر ادارے سر پکڑ کر بیٹھ گئےیورپی کمیشن صدر نے دوسری جنگ عظیم میں جاپان پر جوہری حملے کا ذمہ دار روس کو قرار دے دیااگر خطے میں کوئی بھی ملک جوہری قوت بنتا ہے تو سعودیہ بھی مجبور ہو گا کہ جوہری ہتھیار حاصل کرے: محمد بن سلمانمغربی ممالک افریقہ کو غلاموں کی تجارت پر ہرجانہ ادا کریں: صدر گھانامغربی تہذیب دنیا میں اپنا اثر و رسوخ کھو چکی، زوال پتھر پہ لکیر ہے: امریکی ماہر سیاستعالمی قرضوں میں ریکارڈ اضافہ: دنیا، بنکوں اور مالیاتی اداروں کی 89 پدم روپے کی مقروض ہو گئی

امریکہ کو ایئربس سبسڈی کے بدلے میں یورپی یونین کے سامان پرمحصولات عائد کرنے کی اجازت ہے . ڈبلیو ٹی او

ورلڈ ٹریڈ آرگنائزیشن (ڈبلیو ٹی او) نے پیر کو باضابطہ طور پر طیارہ ساز کمپنی ایئربس کو سبسڈی دینے سے متعلق ثالثی کے فیصلے کے بعد ریاست ہائے متحدہ کو باضابطہ طور پر یورپی یونین کے سامان کی 7.5 بلین ڈالر تک کی قیمتوں پر محصولات عائد کرنے کا باضابطہ طور پر اختیار دے دیا۔

واشنگٹن اب یورپی یونین اور ایئربس پیدا کرنے والے ممالک برطانیہ ، فرانس ، جرمنی اور اسپین کے خلاف جوابی کارروائی کرنے میں آزاد ہے۔ ڈبلیو ٹی او کی ثالثی اس ماہ غیر قانونی سبسڈی لینے پر جوابی کارروائی کا حق دینے کی اجازت ایک باقاعدہ رسم تھی۔

امریکی تجارتی سفیر ڈینس شی نے اجلاس کو بتایا کہ واشنگٹن اب بھی مذاکرات کے حل کو ترجیح دیتا ہے۔ انہوں نے کہا ،

“یہ تب ہی ہوسکتا ہے جب یورپی یونین حقیقی طور پر موجودہ سبسڈیوں سے ایئربس کو حاصل ہونے والے فوائد کو ختم کرے اور اس بات کو یقینی بنائے کہ ائیربس کو دی جانے والی سبسڈی کو کسی دوسرے نام یا کسی اور طریقہ کار کے تحت بحال نہیں کیا جائے گا ۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

nineteen − 4 =

Contact Us