ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

تیل کی حدِ درجہ فروخت کا زمانہ گیا: روس کا بھی مشرق وسطیٰ کی طرح تیل پر انحصار کم کرنے کا ارادہ، آئندہ سال 1/3 کمی متوقع

روسی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ تیل کی فروخت کی نئی حدود قائم کرنے کا زمانہ گزر چکا ہے، اور اس رحجان کے باعث روسی معیشت کو بھی شدید نقصان پہنچے گا۔

وزیر خزانہ ولادیمیر کولیچیو کا کہنا تھا کہ نامیاتی وسائل سے توانائی کے حصول کی صنعت کا عروج ماضی کا حصہ بن چکا ہے، اب تو اسکے کم ترین فروخت کے اندازے بھی غلط ثابت ہوتے نظر آرہے ہیں۔

روسی مرکزی بینک کی آئندہ تین سال کی مالیاتی رپورٹ کے مطابق اگر کووڈ-19 وباء کا تسلسل جاری رہا تو 2021 میں روسی تیل کی طلب میں کمی سے فی بیرل قیمت 25 ڈالر تک گر سکتی ہے، یعنی تیل کی موجودہ قیمت سے 50 فیصد کم، جبکہ 2023 میں یہ قیمت زیادہ سے زیادہ 35 ڈالر فی بیرل تک جائے گی۔

روسی صدر نے بھی رواں ماہ ایک کانفرنس میں خطاب سے کہا تھا کہ آئندہ پانچ سالوں میں عالمی مارکیٹ میں تیل کی طلب میں زیادہ سے زیادہ ایک فیصد کا اضافہ ممکن ہے، اس لیے روس قومی بجٹ میں تیل پر انحصار کو مسلسل کم کر رہا ہے، اور یہ آئندہ سال 1/3 رہ جائے گا۔

واضح رہے کہ یورپ اور مشرق وسطیٰ کے متعدد ممالک کی طرح روس بھی تیل پر اپنے انحصار کو کم کررہا ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us