پیر, اکتوبر 25 Live
Shadow
سرخیاں
ترک صدر ایردوعان کا اندرونی سیاست میں مداخلت پر 10 مغربی ممالک کے سفراء کو ناپسندیدہ قرار دینے کا فیصلہبحرالکاہل میں چینی و روسی جنگی بحری مشقیں مکمل – ویڈیونائجیریا: جیل حملے میں 800 قیدی فرار، 262 واپس گرفتار، 575 تاحال مفرورترکی: فسلطینی طلباء کی جاسوسی کرنے والا 15 رکنی صیہونی جاسوس گروہ گرفتار، تحقیقات جاریامریکی انتخابات میں غیر سرکاری تنظیموں کے اثرانداز ہونے کا انکشاف: فیس بک کے مالک اور دیگر ہم فکر افراد نے صرف 2 تنظیموں کو 42 کروڑ ڈالر کی خطیر رقم چندے میں دی، جس سے انتخابی عمل متاثر ہوا، تجزیاتی رپورٹبنگلہ دیش: قرآن کی توہین پر شروع ہونے والے فسادات کنٹرول سے باہر، حالات انتہائی کشیدہ، 9 افراد ہلاک، 71 مقدمے درج، 450 افراد گرفتار، حکومت کا ریاست کو دوبارہ سیکولر بنانے پر غورنیٹو کے 8 روسی مندوبین کو نکالنے کا ردعمل: روس نے سارا عملہ واپس بلانے اور ماسکو میں موجود نیٹو دفتر بند کرنے کا اعلان کر دیاشام اور عراق سے داعش کے دہشت گرد براستہ ایران افغانستان میں داخل ہو رہے ہیں، جنگجوؤں سے وسط ایشیائی ریاستوں میں عدم استحکام کا شدید خطرہ ہے: صدر پوتنآؤکس بین الاقوامی سیاست میں کشیدگی و عدم استحکام بڑھانے اور اسلحے کی نئی دوڑ کا باعث ہو گا: چین اور مشرقی ممالک کے خلاف مغرب کے نئے عسکری اتحاد پر روسی ردعملایف بی آئی نے خفیہ کارروائی میں جوہری آبدوز ٹیکنالوجی بیچتے دو فوجی انجینئر گرفتار کر لیے

چین: مغربی ایماء پر کام کرنے اور دھوکہ دہی کے الزامات پر بڑی میڈیا کمپنی کا مالک گرفتار

ہانگ کانگ پولیس نے بروز سوموار ملک کے سب سے بڑے ذرائع ابلاغ گروپ کے مالک جمی لائے سمیت 10 افراد کو گرفتار کیا ہے۔ جمی لائے پر ملکی سلامتی کو خطرے میں ڈالنے، بیرونی ایجنڈے پر کام کرنے اور دھوکہ دہی کے الزامات درج ہیں۔ جمی لائے ہانگ کانگ مظاہروں کے دوران مظاہرین کی حمایت میں بھرپور میڈیا کوریج کرتے رہے ہیں۔

واقعے پر مغربی میڈیا کی جانب سے بھرپور تنقید کی جا رہی ہے جس پر چینی میڈیا گروپ گلوبل ٹائم نے تبصرے میں کہا ہے کہ چینی عوام مغربی حکومتوں کی دو رخی سے تنگ آچکی ہے، نیو یارک، پیرس اور لندن میں مظاہرے ہوں تو وہ فساد کہلاتے ہیں تاہم ہانگ کانگ اور دیگر ایشیائی ممالک میں مظاہرے جمہوری حق اور آزادی رائے گردانے جاتے ہیں۔ مغربی ممالک کو اپنی روش بدلنا ہو گی۔

معروف صحافی ہو شی جن کا کہنا ہے کہ جمی لائے کی گرفتاری اشارہ ہے کہ ہانگ کانگ حکومت نہ صرف اہم سیاسی قائدین پر لگنے والی حالیہ امریکی پابندیوں کا ردعمل دینا چاہتی ہے بلکہ وہ ہانگ کانگ میں غیر ملکی ایجنڈوں کے ذریعے مزید فساد کی اجازت بھی نہیں دے گی، جن میں جمی لائے سر فہرست تھے جو مسلسل ملکی سلامتی کے خلاف پراپیگنڈا کرتے پائے گئے۔

قانونی ماہرین کا کہنا ہے کہ جمی لائے کے رویے اور مظاہروں کے دوران کردار پر انہیں عمر قید تک کی سزا دی جا سکتی ہے۔

واضح رہے کہ ہانگ کانگ میں مسلسل ایک سال تک مظاہروں کی وجہ سے شہری زندگی اور ملکی معیشت بری طرح متاثر ہوئے تھے۔ جس پر چینی حکومت نے بالآخر قانون سازی کر کے معاملے سے سختی سے نمٹنے کی پالیسی اپنائی ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us