منگل, جون 15 Live
Shadow
سرخیاں
ترکی: 20 ٹن سونا اور 5 ٹن چاندی کا نیا ذخیرہ دریافت، ملکی سالانہ پیداوار 42 ٹن کا درجہ پار کر گئی، 5 برسوں میں 100 ٹن تک لے جانے کا ارادہحکومت پنجاب کا ویکسین نہ لگوانے والوں کے موبائل سم کارڈ معطل کرنے کی پالیسی لانے کا فیصلہموساد کے سابق سربراہ کا ایرانی جوہری سائنسدان اور مرکز پر سائبر حملے کا اعترافی اشارہ: ایرانی سائنسدانوں کو منصوبہ چھوڑنے پر معاونت کی پیشکش کر دییورپی اشرافیہ و ابلاغی اداروں کے برعکس شہریوں کی نمایاں تعداد نے روس کو اہم تہذیبی شراکت دار و اتحادی قرار دے دیاروسی بحریہ نے سٹیلتھ ٹیکنالوجی سے لیس جدید ترین بحری جہاز کا مکمل نمونہ تیار کر لیا: مکمل جہاز آئندہ سال فوج کے حوالے کر دیا جائےگاٹویٹر کو نائیجیریا میں دوبارہ بحالی کیلئے مقامی ابلاغی اداروں کی طرح لائسنس لینا ہو گا، اندراج کروانا ہو گا: افریقی ملک کا امریکی سماجی میڈیا کمپنی کو دو ٹوک جواب، صدر ٹرمپ کی جانب سے پابندی پر ستائش کا بیانکاراباخ آزادی جنگ: جنگی قیدی چھڑوانے کے لیے آرمینی وزیراعظم کی آزربائیجان کو بیٹے کی حوالگی کی پیشکشمجھ پر حملے سائنس پر حملے ہیں: متنازعہ امریکی مشیر صحت ڈاکٹر فاؤچی کا اپنے دفاع میں نیا متنازعہ بیان، وباء سے شدید متاثر امریکیوں کے غصے میں مزید اضافہچین 3 سال کے بچوں کو بھی کووڈ-19 ویکسین لگانے والا دنیا کا پہلا ملک بن گیاایرانی رویہ جوہری معاہدے کی بحالی میں تعطل کا باعث بن سکتا ہے: امریکی وزیر خارجہ بلنکن

تم لوگوں نے ساڑھے 3 سال صرف صدر ٹرمپ کی حکومت ختم کرنے میں لگا دیے، امریکی نائب صدر کا مباحثے میں حریف کو کراڑا جواب

امریکی نائب صدر مائیک پینس نے صدارتی مباحثے میں اقتدار کے پر امن منتقلی پر صدر ٹرمپ کے اعتراض پر کہا کہ ہم ہی انتخابات جیتیں گے، واشنگٹن میں 47 سال سے ہونے کی وجہ سے امریکی عوام جو بائیڈن کو بخوبی پہچانتی ہے، انکی مظبوط لابیاں ہیں تاہم امریکی عوام ان لوگوں سے تنگ ہیں، صدر ٹرمپ عام آدمی کے لیے جدوجہد کے لیے آئے، صدر ٹرمپ نے عسکری قوت کو بڑھایا ہے، معیشت کو درست راہ دکھائی ہے، تجارتی توازن کو حاصل کیا ہے، وفاقی عدالتوں میں ایسے قاضی تعینات کیے ہیں جو امریکی اقدار کے پاسدار ہیں، نہ کہ لبرل نظریے کے، یوں ہم نے پچھلے ساڈھے تین سالوں میں عام آدمی کے لیے اسکی خواہشات کے مطابق کام کیا ہے۔

نائب صدر کا مزید کہنا تھا کہ ڈیموکریٹ پارٹی کی گزشتہ ساڑھے تین سالوں میں صرف ایک ہی کوشش رہی، کہ کیسے انتخابی نتائج کو پلٹا جائے۔ نائب صدر کے بیان کا حوالہ گزشتہ انتخابات میں روسی مداخلت تھا۔ تحقیقات میں تمام الزامات کی تردید ہو گئی اور اب سامنے آرہا ہے کہ یہ سارا کھیل ہیلری کلنٹن نے اپنے ای میل اسکینڈل سے توجہ ہٹانے کے لیے سی آئی اے سے مل کر شروع کیا تھا۔

نائب صدر نے ہیلری کلنٹن کے بیان کا حوالہ دیتے ہوئے مزید کہا کہ دراصل ڈیموکریٹ انتخابی نتیجے کو قبول کرنے سے انکاری ہے۔ یاد رہے کہ آگست میں سابق صدارتی امیدوار اور سابق وزیر برائے خارجہ امور اور سابق خاتون اول ہیلری کلنٹن نے ایک بیان میں موجودہ صدارتی امیدوار جو بائیڈن کو مشورہ دیا تھا کہ وہ کسی بھی صورت میں ہار قبول نہ کریں، وہ ہی جیتیں گے اگر وہ بھی مخالف امید وار کی طرح رویہ اختیار کریں۔

جواب میں کیمیلا حیرث نے تحقیقاتی رپورٹ کے برعکس کہہ دیا کہ روسی مداخلت تھی اور یہ آئندہ انتخابات میں بھی ہو گی۔ خاتون امیدوار کا کہنا تھا کہ وہ سینیٹ کمیٹی برائے جاسوسی کی رکن بھی ہیں، اور ہماری اطلاعات کے مطابق 2016 میں بھی روسی مداخلت تھی اور آئندہ انتخابات میں بھی ہو گی۔

کیمیلا حیرث کا مزید کہنا تھا کہ صدر ٹرمپ روسی جاسوس اداروں کی نسبت روسی صدر پیوتن کے بیانات کو زیادہ سچا مانتے ہیں۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us