اتوار, April 10 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

ویانا حملے میں بوڑھی عورت کی جان بچانے والے دو ترک جوان قومی ہیرو قرار

ویانا حملے میں شہریوں اور پولیس کو بچانے میں اہم کردار ادا کرنے والے دو ترک مسلمانوں کو ہیرو کا درجہ دیا جا رہا ہے۔ میکائیل اوزین اور رجب گلتیکن نے اپنی جان خطرے میں ڈال کر ایک عورت کی جان بچائی جبکہ ایک زمی پولیس والے کو بھی ابتدائی امداد فراہم کی۔ اس سارے منظر نامے کو سی سی ٹی وی کیمرے نے محفوظ کیا۔

سوشل میڈیا پر جاری ایک ویڈیو کے مطابق رجب کو اس دوران چوٹیں بھی آئیں۔

ترک میڈیا سے گفتگو میں رجب کا کہنا تھا کہ جب گولیاں چل رہی تھیں تو انہوں نے دیکھا کہ ایک بوڑھی عورت حملے والے علاقے کی طرف چلتی جا رہی ہے۔ جس پر انہوں نے اسے روکا اور پاس ہی ایک میٹرو اسٹیشن میں گھس گئے، جہاں انہوں نے ایک پولیس والے کو زخمی پایا۔

انٹرنیٹ پر دونوں ترک شہریوں کو خوب ستائش مل رہی ہے، شہریوں کا کہنا ہے کہ خطرے میں بھی دوسروں کی مدد کرناقابل ستائش ہے، جبکہ ویانا کے شہری انہیں ویانا کا ہیرو قرار دے رہے ہیں۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us