اتوار, جنوری 16 Live
Shadow
سرخیاں
قازقستان ہنگامے: مشترکہ تحفظ تنظیم کے سربراہ کا صورتحال پر قابو کا اعلان، امن منصوبے کی تفصیلات پیش کر دیںبرطانوی پارلیمنٹ میں منشیات کا استعمال: اسپیکر کا سونگھنے والے کتے بھرتی کرنے کا عندیاامریکی سی آئی اے اہلکاروں کے ایک بار پھر کم عمر بچوں بچیوں کے ساتھ جنسی جرائم میں ملوث ہونے کا انکشافامریکہ کا مشرقی افریقہ میں تاریخ کے سب سے بڑے فوجی آپریشن کا اعلان: 1 ہزار سے زائد مزید کمانڈو تیارروسی صدر کی ثالثی: آزربائیجان اور آرمینیا کے مابین سرحدی جھڑپیں ختم، سرحدی حدود کے تعین پر اتفاق، جنگ سے متاثر آبادی اور دیگر انسانی حقوق کے تحفظ کی بھی یقین دہانینائیجیر: فرانسیسی فوج کی فائرنگ سے 2 شہری شہید، 16 زخمیامریکی فوج میں ہر 4 میں سے 1 عورت اور 5 میں سے 1 مرد جنسی زیادتی کا نشانہ بنتا ہے، بیشتر خود کشی کر لیتے، کورٹ مارشل کے خوف سے کوئی آواز نہیں اٹھاتا: سابقہ اہلکارروس کا غیر ملکی سماجی میڈیا کمپنیوں پر ملک میں کاروباری اندراج کے لیے دباؤ جاری: رواں سال کے آخر تک عمل نہ ہونے پر پابندی لگانے کا عندیاامریکہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی میں چین اور روس سے بہت پیچھے ہے: امریکی جنرل تھامپسنامریکی تفریحی میڈیا صنعت کس عقیدے، نظریے اور مقصد کے تحت کام کرتی ہے؟

ویانا حملے میں بوڑھی عورت کی جان بچانے والے دو ترک جوان قومی ہیرو قرار

ویانا حملے میں شہریوں اور پولیس کو بچانے میں اہم کردار ادا کرنے والے دو ترک مسلمانوں کو ہیرو کا درجہ دیا جا رہا ہے۔ میکائیل اوزین اور رجب گلتیکن نے اپنی جان خطرے میں ڈال کر ایک عورت کی جان بچائی جبکہ ایک زمی پولیس والے کو بھی ابتدائی امداد فراہم کی۔ اس سارے منظر نامے کو سی سی ٹی وی کیمرے نے محفوظ کیا۔

سوشل میڈیا پر جاری ایک ویڈیو کے مطابق رجب کو اس دوران چوٹیں بھی آئیں۔

ترک میڈیا سے گفتگو میں رجب کا کہنا تھا کہ جب گولیاں چل رہی تھیں تو انہوں نے دیکھا کہ ایک بوڑھی عورت حملے والے علاقے کی طرف چلتی جا رہی ہے۔ جس پر انہوں نے اسے روکا اور پاس ہی ایک میٹرو اسٹیشن میں گھس گئے، جہاں انہوں نے ایک پولیس والے کو زخمی پایا۔

انٹرنیٹ پر دونوں ترک شہریوں کو خوب ستائش مل رہی ہے، شہریوں کا کہنا ہے کہ خطرے میں بھی دوسروں کی مدد کرناقابل ستائش ہے، جبکہ ویانا کے شہری انہیں ویانا کا ہیرو قرار دے رہے ہیں۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us