اتوار, نومبر 28 Live
Shadow
سرخیاں
نائیجیر: فرانسیسی فوج کی فائرنگ سے 2 شہری شہید، 16 زخمیامریکی فوج میں ہر 4 میں سے 1 عورت اور 5 میں سے 1 مرد جنسی زیادتی کا نشانہ بنتا ہے، بیشتر خود کشی کر لیتے، کورٹ مارشل کے خوف سے کوئی آواز نہیں اٹھاتا: سابقہ اہلکارروس کا غیر ملکی سماجی میڈیا کمپنیوں پر ملک میں کاروباری اندراج کے لیے دباؤ جاری: رواں سال کے آخر تک عمل نہ ہونے پر پابندی لگانے کا عندیاامریکہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی میں چین اور روس سے بہت پیچھے ہے: امریکی جنرل تھامپسنامریکی تفریحی میڈیا صنعت کس عقیدے، نظریے اور مقصد کے تحت کام کرتی ہے؟چوالیس فیصد امریکی اولاد پیدا کرنے کی خواہش نہیں رکھتے: پیو سروے رپورٹچینی کمپنی ژپینگ نے جدید ترین برقی کار جی-9 متعارف کر دی: بیٹری کے معیار اور رفتار میں ٹیسلا کو بھی پیچھے چھوڑ دیاماحولیاتی تحفظ کی مہم کیوں ناکام ہے؟: کینیڈی پروفیسر نے امیر مغربی ممالک کو زمہ دار ٹھہرا دیااتحادیوں کو اکیلا نہیں چھوڑا جائے گا، تحفظ ہر صورت یقینی بنائیں گے: امریکی وزیردفاعروس اس وقت آزاد دنیا کا قائد ہے: روسی پادری اعظم کا عیسائی گھرانوں کی امریکہ سے روس منتقلی پر تبصرہ

صدر ٹرمپ کا مقررہ وقت کے بعد ووٹوں کی گنتی رکوانے کے لیے سپریم کورٹ جانے کا اعلان، جو بائیڈن کا کہنا ہے کہ گنتی روکنے نہیں دیں گے

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے حزب اختلاف پر انتخابات میں دھاندلی کا الزام لگایا ہے۔ صدر کا کہنا ہے کہ وہ مقررہ وقت کے بعد ووٹوں کی گنتی رکوانے کے لیے سپریم کورٹ جائیں گے۔

صدر کے اعلان پر ڈیموکریٹ امیدوار جو بائیڈن نے کہا ہے کہ صدر کی کوشش امریکیوں سے جمہوری حق چھیننے کی کھلی کوشش ہے، تاریخ میں ایسا کبھی نہیں ہوا کہ کسی امریکی صدر نے شہریوں کی آواز دبانے کی کوشش کی ہو۔

دوسری طرف صدر ٹرمپ کا کہنا ہے کہ انکے لاکھوں ووٹروں کو ووٹ سے روکا گیا، اور ڈیموکریٹ نے ڈاک کے ذریعے ووٹ سے قوم کے ساتھ دھوکہ کیا ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ قانون پر اسکی روح کے مطابق عمل ہو، اور اس کے لیے ہم سپریم کورٹ جائیں گے۔

جو بائیڈن کی انتخابی مہم کے منتظم کا کہنا ہے کہ ووٹوں کی گنتی نہیں رکے گی یہاں تک کہ تمام ووٹ گن لیے جائیں اور جیتنے والے کا اعلان کر دیا جائے، اور یہی قانون ہے۔ اور اگر صدر ٹرمپ کی جانب سے ایسی کوشش کی گئی تو اسکی بھرپور مخالفت کی جائے گی۔

واشنگٹن سمیت 21 ریاستوں سے بذریعہ ڈاک آنے والے ووٹ 3 نومبر تک الیکشن کمیشن پہنچیں گے اور انکی گنتی اس کے بعد شروع کی جائے گی، یوں پنسلوینیا کے اہم 21 الیکٹورل ووٹوں کا فیصلہ 6 نومبر تک ممکن ہے۔

واضح رہے کہ صدر ٹرمپ پہلے سے ہی ڈیموکریٹ جماعت پر ڈاک کے ذریعے ووٹوں سے دھاندلی کا الزام لگا چکے ہیں، اور گزشتہ ہفتے انہوں نے میڈیا سے گفتگو میں کہا تھا کہ انہیں امید ہے عدالتیں 3 نومبر کے بعد ووٹوں کی گنتی کو قبول نہیں کریں گی۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us