اتوار, نومبر 28 Live
Shadow
سرخیاں
نائیجیر: فرانسیسی فوج کی فائرنگ سے 2 شہری شہید، 16 زخمیامریکی فوج میں ہر 4 میں سے 1 عورت اور 5 میں سے 1 مرد جنسی زیادتی کا نشانہ بنتا ہے، بیشتر خود کشی کر لیتے، کورٹ مارشل کے خوف سے کوئی آواز نہیں اٹھاتا: سابقہ اہلکارروس کا غیر ملکی سماجی میڈیا کمپنیوں پر ملک میں کاروباری اندراج کے لیے دباؤ جاری: رواں سال کے آخر تک عمل نہ ہونے پر پابندی لگانے کا عندیاامریکہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی میں چین اور روس سے بہت پیچھے ہے: امریکی جنرل تھامپسنامریکی تفریحی میڈیا صنعت کس عقیدے، نظریے اور مقصد کے تحت کام کرتی ہے؟چوالیس فیصد امریکی اولاد پیدا کرنے کی خواہش نہیں رکھتے: پیو سروے رپورٹچینی کمپنی ژپینگ نے جدید ترین برقی کار جی-9 متعارف کر دی: بیٹری کے معیار اور رفتار میں ٹیسلا کو بھی پیچھے چھوڑ دیاماحولیاتی تحفظ کی مہم کیوں ناکام ہے؟: کینیڈی پروفیسر نے امیر مغربی ممالک کو زمہ دار ٹھہرا دیااتحادیوں کو اکیلا نہیں چھوڑا جائے گا، تحفظ ہر صورت یقینی بنائیں گے: امریکی وزیردفاعروس اس وقت آزاد دنیا کا قائد ہے: روسی پادری اعظم کا عیسائی گھرانوں کی امریکہ سے روس منتقلی پر تبصرہ

یورپ: ایک سال کے دوران نسلی تعصب، مہاجرین اور اقلیتوں کے خلاف نفرت کے واقعات کی درج شکایات کی تعداد 6649

یورپ میں گزشتہ ایک سال کے دوران نفرت پر مبنی رویے کے خلاف 6649 شکایات درج کی گئیں۔ ان میں سب سے زیادہ شکایات نسلی تعصب اور مہاجرین سے نفرت کے اظہار کے واقعات پر مبنی تھیں۔ فہرست میں دوسرے نمبر پر یہودیوں کے خلاف نفرت جبکہ تیسرے نمبر پر جنسی تفریق کی شکایات درج ہوئیں۔

یورپی تحقیقاتی اداروں کی مرتب کردہ رپورٹ کے مطابق ایک سال کے دورانیے میں مجموعی طور پر 6694 شکایات میں سے 3033 نسلی تعصب اور مہاجرین کے خلاف تعصب کے واقعات پر مبنی تھیں جبکہ 1704 یورپ میں یہودیوں کے ہولو کاسٹ یا ان سے نفرت کے حوالے سے درج کروائی گئیں۔ جنسی تفریق کے خلاف اور دیگر اقلیتوں کے خلاف متعصبانہ رویوں کی شکایات بالترتیب تیسرے اور چوتھے نمبر پر تھیں۔

تحقیق میں 39 ممالک کو شامل کیا گیا۔ رپورٹ کے مطابق سب سے زیادہ شکایات فرانس اور جرمنی میں نسل پرست گروہوں کے خلاف درج ہوئیں، جن میں سے خصوصاً کورونا کے پھیلاؤ میں مہاجرین اور غیر ملکیوں کے ملوث ہونے کے پراپیگنڈے کی شکایات سب سے زیادہ تھیں۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us