ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

فرانس میں 50٪ سے زائد شہری کووڈ-19 ویکسین نہیں لگوانا چاہتے: حکومت نے انکار کرنے والوں کے خلاف سفری پابندی کا قانون پیش کر دیا

فرانس نے کووڈ-19 کی ویکسین نہ لگوانے والے شہریوں پر سفری پابندیاں لگانے کے لیے قانون سازی کا عندیا دیا ہے۔ مقامی نشریاتی اداروں کے مطابق قانونی مسودہ تیار کر لیا گیا ہے اور جلد اسے پارلیمنٹ میں پیش کر دیا جائے گا۔

قانون کے مطابق ویکسین نہ لگوانے والے شہریوں پر عوامی ذرائع آمدرورفت استعمال کرنے، مخصوص علاقوں کے سفر کرنے اور اجتماعات میں جانے کی پابندی ہو گی۔ قانون کے مطابق صرف وہ افراد پابندیوں سے بچ سکیں گے جن کے پاس ویکسین کا سرٹیفکیٹ ہو گا یا وہ مثبت اینٹی باڈی ٹیسٹ رپورٹ کے حامل ہوں گے۔

قانونی مسودے کی عوامی حلقوں کے علاوہ فرانسیسی حزب اختلاف کی جانب سے بھی مذمت کی گئی ہے، انکا کہنا ہے کہ قانون آمریت کے مترادف ہے۔

دوسری جانب حکومتی جماعت نے قانون کے دفاع میں کہا ہے کہ حزب اختلاف کی تنقید بے جا ہے۔

واضح رہے کہ عوامی رائے پر مبنی سروے کے مطابق فرانسیسی عوام ویکسین کو لے کر شدید شکوک وشبہات میں مبتلا ہے۔ اور 50٪ سے زائد شہری ویکسین لگوانا ہی نہیں چاہتے۔ جبکہ حکومت کا ارادہ ہے کہ جون 2021 تک ڈیڑھ کروڑ افراد کو ویکسین لگا دی جائے۔

فرانس سے قبل برازیل میں بھی ایک عدالتی فیصلے کے تحت ملتی جلتی قانون سازی سامنے آئی ہے جس پر صدر جائل بولسونارو نے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے شہری گھروں میں قید ہو جائیں گے، حکومت عدالت سے فیصلے پر نظرثانی کی درخواست کرے گی۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us