Shadow
سرخیاں
مغربی طرز کی ترقی اور لبرل نظریے نے دنیا کو افراتفری، جنگوں اور بےامنی کے سوا کچھ نہیں دیا، رواں سال دنیا سے اس نظریے کا خاتمہ ہو جائے گا: ہنگری وزیراعظمامریکی جامعات میں صیہونی مظالم کے خلاف مظاہروں میں تیزی، سینکڑوں طلبہ، طالبات و پروفیسران جیل میں بندپولینڈ: یوکرینی گندم کی درآمد پر کسانوں کا احتجاج، سرحد بند کر دیخود کشی کے لیے آن لائن سہولت، بین الاقوامی نیٹ ورک ملوث، صرف برطانیہ میں 130 افراد کی موت، چشم کشا انکشافاتپوپ فرانسس کی یک صنف سماج کے نظریہ پر سخت تنقید، دور جدید کا بدترین نظریہ قرار دے دیاصدر ایردوعان کا اقوام متحدہ جنرل اسمبلی میں رنگ برنگے بینروں پر اعتراض، ہم جنس پرستی سے مشابہہ قرار دے دیا، معاملہ سیکرٹری جنرل کے سامنے اٹھانے کا عندیامغرب روس کو شکست دینے کے خبط میں مبتلا ہے، یہ ان کے خود کے لیے بھی خطرناک ہے: جنرل اسمبلی اجلاس میں سرگئی لاوروو کا خطاباروناچل پردیش: 3 کھلاڑی چین اور ہندوستان کے مابین متنازعہ علاقے کی سیاست کا نشانہ بن گئے، ایشیائی کھیلوں کے مقابلے میں شامل نہ ہو سکےایشیا میں امن و استحکام کے لیے چین کا ایک اور بڑا قدم: شام کے ساتھ تذویراتی تعلقات کا اعلانامریکی تاریخ کی سب سے بڑی خفیہ و حساس دستاویزات کی چوری: انوکھے طریقے پر ادارے سر پکڑ کر بیٹھ گئے

بریگزٹ: سکاٹ لینڈ میں خودمختاری کی آوازیں دوبارہ زور پکڑنے لگیں – اہم سیاسی رہنماؤں نے تجارتی معاہدے کو سکاٹ لینڈ کے لیے غربت کا پروانہ قرار دے دیا

سکاٹ لینڈ کابینہ کی سربراہ نکولس سٹرگن نے بریگزٹ معاہدہ ے پانے پر ایک بار پھر ملک کی خودمختاری کی دوہائی دی ہے۔ ٹویٹر پر اپنے خصوصی پیغام میں سکاٹ لینڈ کی نمائندہ سربراہ حکومت نے کہا کہ بریگزٹ سکاٹ لینڈ کی منشاء کے برخلاف ہوا، سکاٹ لینڈ کی عوام نے برطانیہ کی متحدہ سلطنت کے یورپی اتحاد میں شامل رہنے کے لیے ووٹ دیا تھا۔ ہم سے بریگزٹ نے وہ چھینا ہے جو کوئی معاہدہ ہمیں دے نہیں سکتا، لہٰذا اب وقت آگیا ہے کہ ہم ایک خودمختار یورپی قوم کے طور پر ابھریں۔

اس سے قبل سکاٹ لینڈ کی قومی جماعت کے سربراہ نے بھی معاہدے پر کڑی تنقید کی اور کہا کہ اس کے سکاٹ لینڈ کے لیے انتہائی نقصان دہ اثرات سامنے آئیں گے، برطانیہ نے اپنے کسانوں کے لیے یورپی اتحاد سے معاہدہ کر لیا ہے لیکن اب سکاٹ لینڈ کی سبزیاں، خصوصاً آلو اور دالوں کی برآمدات کا کوئی معاہدہ نہیں کیا گیا۔

واضح رہے کہ بریگزٹ نے سکاٹ لینڈ کی خودمختاری کی جدوجہد میں ایک بار پھر نئی روح پیدا کر دی ہے، جس کی بڑی وجہ مقامی آبادی کی بڑی تعداد 62٪ عوام نے یورپی اتحاد میں شامل رہنے کے حق میں ووٹ دیا تھا۔

سکاٹش نیشنل پارٹی کے رہنما آئن بلیک فورڈ نے بھی بریگزٹ معاہدے پر تنقید میں کہا ہے کہ اس کے نتیجے میں سکاٹ لینڈ مزید غربت میں گر جائے گا۔ تاہم انہوں نے خودمختاری کے حوالے سے سابق عوامی ریفرنڈم کو مانتے ہوئے آئندہ کی نئی حکمت عملی اپنانے پر زوردیا ہے، یاد رہے کہ سکاٹ لینڈ کی خود مختاری کے حوالے سے سابق عوامی ریفرنڈم میں 55٪ شہریوں نے یو کے کے ساتھ رہنے کے حق میں ووٹ دیا تھا۔ تاہم یہ ریفرنڈم 2014 میں ہوا تھا اور اس وقت بریگزٹ کی بحث نہ تھی۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

seventeen − twelve =

Contact Us