ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

جدید ترین ہتھیاروں کی سمگلنگ: صیہونی انتظامیہ نے دفاعی صنعت سے وابستہ اہلکاروں سمیت 20 افراد کو گرفتار کر لیا

مقبوضہ فلسطین کی قابض صیہونی انتظامیہ نے دفاعی صنعت سے وابستہ اہلکاروں سمیت 20 افراد کو گرفتار کیا ہے جو کسی نامعلوم ایشیائی ملک کو حساس ہتھیاروں کی سمگلنگ میں مبینہ طور پر ملوث تھے۔ قابض انتظامیہ کی سکیورٹی ایجسنی شِم بیت کا کہنا ہے کہ ملزمان نے خودکش ڈرون بنائے، انکا تجربہ کیا اور اسے نامعلوم ملک کو بیچا۔

کامیکیز ڈرون طیارے جدید ترین ہتھیار ہیں جو دی گئی ہدایات کے مطابق اپنے ہدف کو تلاش کرنے اور ملتے ہی خودکش حملہ کرکے اسے مار دینے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

صیہونی انتظامیہ کی جاری کردہ ویڈیو میں تین افراد کو تجربہ کرتے دیکھا جا سکتا ہے۔

تحقیقات میں صیہونی انتظامیہ کو خودکش ڈرون خریدنے والے ملک کا پتہ چل گیا ہے تاہم اس نے نام عیاں نہیں کیا۔ البتہ یہ ضرور بتایا ہے کہ خودکش ڈرون جس ملک کو بیچا گیا ہے وہ دشمن ملک نہیں ہے، اور مبینہ طور پر وہاں کی فوج نے پیسوں اور تعلقات کے عوض خودکش ڈرون حاصل کیے ہیں۔ البتہ انتظامیہ نے خوف کا اظہار کیا ہے کہ خفیہ نیٹ ورک سے کوئی دشمن ملک بھی جدید ہتھیاروں تک رسائی حاصل کر سکتا ہے۔

تحقیقات میں ملزمان کے زیر استعمال خفیہ رابطے اور رقوم کی ترسیل کے نئے ذرائع کا انکشاف بھی ہوا ہے۔

واضح رہے کہ ملزمان کو تاحال کسی عدالت میں پیش نہیں کیا گیا ہے اور نہ ہی ان پر کوئی مقدمہ قائم کیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے بھی صیہونی انتظامیہ نے مغربی کنارے کے علاقے میں تین افراد کو جدید رائفل کی سمگلنگ کرتے گرفتار کیا تھا، جس پر انتظامیہ کا شبہہ تھا کہ اسے خطرناک ہتھیار میں بدلا جا سکتا ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us