پیر, دسمبر 6 Live
Shadow
سرخیاں
امریکی سی آئی اے اہلکاروں کے ایک بار پھر کم عمر بچوں بچیوں کے ساتھ جنسی جرائم میں ملوث ہونے کا انکشافامریکہ کا مشرقی افریقہ میں تاریخ کے سب سے بڑے فوجی آپریشن کا اعلان: 1 ہزار سے زائد مزید کمانڈو تیارروسی صدر کی ثالثی: آزربائیجان اور آرمینیا کے مابین سرحدی جھڑپیں ختم، سرحدی حدود کے تعین پر اتفاق، جنگ سے متاثر آبادی اور دیگر انسانی حقوق کے تحفظ کی بھی یقین دہانینائیجیر: فرانسیسی فوج کی فائرنگ سے 2 شہری شہید، 16 زخمیامریکی فوج میں ہر 4 میں سے 1 عورت اور 5 میں سے 1 مرد جنسی زیادتی کا نشانہ بنتا ہے، بیشتر خود کشی کر لیتے، کورٹ مارشل کے خوف سے کوئی آواز نہیں اٹھاتا: سابقہ اہلکارروس کا غیر ملکی سماجی میڈیا کمپنیوں پر ملک میں کاروباری اندراج کے لیے دباؤ جاری: رواں سال کے آخر تک عمل نہ ہونے پر پابندی لگانے کا عندیاامریکہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی میں چین اور روس سے بہت پیچھے ہے: امریکی جنرل تھامپسنامریکی تفریحی میڈیا صنعت کس عقیدے، نظریے اور مقصد کے تحت کام کرتی ہے؟چوالیس فیصد امریکی اولاد پیدا کرنے کی خواہش نہیں رکھتے: پیو سروے رپورٹچینی کمپنی ژپینگ نے جدید ترین برقی کار جی-9 متعارف کر دی: بیٹری کے معیار اور رفتار میں ٹیسلا کو بھی پیچھے چھوڑ دیا

وٹس ایپ 15 مئی تک ڈیٹا کی فیس بک کو رسائی کی اجازت نہ دینے پر صارفین کے پیغامات روک دے گا: پالیسی عیاں

وٹس ایپ نے گفتگو تک رسائی اور اسے کاروباری مقاصد کے لیے استعمال کرنے کی اجازت نہ دینے والے صارفین کو خدمات بند کرنے کی پالیسی واضح کر دی ہے۔ مقررہ تاریخ تک معلومات تک رسائی نہ دینے والے صارفین نہ تو انہیں موصول ہونے والے پیغامات پڑھ سکیں گے اور نہ ہی کسی کو پیغام بھیج سکیں گے۔

واضح رہے کہ وٹس ایپ نے صارفین کی مکمل گفتگو تک فیس بک کو رسائی دینے کا مطالبہ کر رکھا ہے، جس کے باعث دنیا بھر میں متبادل ایپلیکیشنوں پر منتقل ہونے کا رحجان مزید تیز ہو گیا ہے۔ صارفین ٹیلی گرام، بِپ اور دیگر ابلاغی ایپلیکیشنوں کا رخ کر رہے ہیں۔

ابلاغی ٹیکنالوجی کی نشریاتی ویب سائٹ نے وٹس ایپ کی ایک ای میل کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ پہلے مرحلے میں تو صرف محل وقوع، نمبر اور نام وغیرہ کی معلومات تک رسائی لی جائے گی، تاہم فیس بک، وٹس ایپ کی مالک کمپنی مکمل گفتگو کو استعمال میں لے آئے گی۔

ویب سائٹ نے دعویٰ کیا ہے کہ کمپنی نے اپنے لیے 15 مئی کا ہدف مقرر کیا ہے، صارفین کو خدمات کے تسلسل کے لیے پابند کیا جائے گا کہ وہ معلومات کی رسائی کی اجازت دیں۔ شرائط قبول نہ کرنے پر وٹس ایپ پیغامات کی اطلاع ت دے گا لیکن صارف پیغامات دیکھ نہیں سکے گا۔

یاد رہے کہ وٹس ایپ نے پہلے 8 فروری کی تاریخ مقرر کی تھی لیکن صارفین کی شدید تنقید کے باعث اسکی حد میں اضافہ کر دیا تھا۔ کمپنی نے اپنی وضاحت میں کہا تھا کہ وہ صارفین کی نجی معلومات کے تحفظ کو یقینی بنائیں گے، تاہم کاروباری مقاصد کے لیے معلومات کی فراہمی صارف کی اپنی مرضی پر منحصر ہو گی۔

وٹس ایپ کی جارحانہ پالیسی کے خلاف جہاں دنیا بھر میں صارفین نالاں ہیں وہیں ہندوستان، جو کہ وٹس ایپ کی سب سے بڑی مارکیٹ ہے، میں ایک وکیل نے دہلی کی عدالت میں صارفین کے نجی حقوق کی خلاف ورزی اور ملکی تحفظ کو خطرے کو لے کر درخواست دائر کر دی ہے۔ عدالت نے درخواست قبول کرتے ہوئے کمپنی کو فوری جواب جمع کروانے کا حکم دیا ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us