ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

امریکی صدر کی چینی و روسی قائدین کے بارے میں ہرزہ سرائی جاری: کہا؛ ان میں جمہوریت کی “ج” بھی موجود نہیں، مطلق العنان شخصیات ہیں

نئی امریکی انتظامیہ کی جانب سے روسی و چینی قیادت پر لفاظی حملوں کا سلسلہ جاری ہے، صدر بائیڈن نے ایک بار پھر دو اہم مشرقی طاقتوں سے تعلقات کو خطرے میں ڈالتے ہوئے انکی قیادت کے بارے میں ہرزہ سرائی کی ہے اور انہیں نہ صرف غیر جمہوری بلکہ مطلق العنان بھی قرار دیا ہے۔

سرائے ابیض میں میڈیا سے گفتگو میں صدر بائیڈن کا کہنا تھا کہ وہ چینی صدر ژی کو پرانا جانتے ہیں، صدر اوباما کے دور میں وہ ان سے کئی بار مل چکے ہیں، اور انہوں نے انہیں دوٹوک بات کرنے والا پایا ذہین اور سمجھدار شخص ضرور پایا البتہ ان کے جسم میں جمہوریت کی “ج” بھی موجود نہیں اور وہ جمہوریت کو غیرموزوں سمجھتے ہیں۔

بیان کو بلاشبہ چین میں منفی طور پر دیکھا جائے گا جسے کچھ نرم کرنے کے لیے صدر بائیڈن نے چین کے ہمسایہ روس کے صدر کو بھی انکی نقل قرار دیا ہے۔ صدر بائیڈں کا کہنا تھا کہ صدر ژی بھی صدر پوتن کی طرح جمہوریت کا کوئی مستقبل نہیں دیکھتے، اور انہیں مطلق العنانی کا مسقتبل روشن لگتا ہے۔ امریکی صدر کے مطابق صدر پوتن اور صدر ژی کو اس پیچیدہ دنیا میں جمہوریت غیر کارآمد چیز لگتی ہے۔

گزشتہ ہفتوں میں بھی صدر بائیڈن نے صدر پوتن کو قاتل قرار دیا تھا جس کے ردعمل میں صدر پوتن نے کہا تھا کہ انسان کو خود کی خصلتیں دوسروں میں نظر آتی ہیں۔

روس نے امریکی انتظامیہ کے رویے پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ انکے لیے اسکا مطلب ہے کہ امریکہ تعلقات کو بہتری کی طرف لے کر نہیں جانا چاہتا۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us