ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

نہر سوویز میں پھنسے تجارتی بحری جہاز کو 6 روز کے بعد نکال لیا گیا: بندش سے فی گھنٹہ 40 کروڑ ڈالر کا نقصان ہوا

مصر کی نہر سوویز 6 روز کی بندش کے بعد کھل گئی ہے، 6 دنوں تک نہر ایک بڑے تجارتی بحری جہاز کے پھنس جانے کے باعث بند ہو گئی تھی، جسے بالآخر کھول دیا گیا ہے۔

ایور گون نامی جہاز تیز صحرائی ہوا کے باعث مڑ گیا تھا اور نہر کے دونوں کناروں میں پھنس گیا تھا۔

انتظامیہ کے مطابق نہر کے کنارے کی مرمت اور راہداری کھولنے کے لیے 2 سے 3 دن یا اس سے زیادہ وقت بھی لگ سکتا ہے۔

ایور گون جہاز کے پھنسی جگہ سے نکلنے پر انتظار میں کھڑے جہازوں نے ہارن بجا کر خوشی کا اظہار کیا جبکہ مصری انتظامیہ نے نعرہ تکبیر اور شکرانے سے خوشی منائی، ملکی انتظامیہ نے عملے کو مبارکباد دی ہے۔

اطلاعات کے مطابق راہداری سے گزرنے کے لیے اس وقت 360 سے زائد تجارتی جہاز انتظار میں کھڑے ہیں اور سوویز کنال اتھارٹی کی جانب سے سبز بتی کے منتظر ہیں۔

واضح رہے کہ نہر سوویز کی بندش کے باعث 40 کروڑ ڈالر فی گھنٹے کا نقصان درج کیا گیا ہے، بندش کے باعث نہر کی انتظامیہ کو یومیہ ڈیڑھ کروڑ ڈالر کا نقصان ہوا ہے۔ نہر سے یومیہ کم ازکم 50 بحری جہاز گزرتے ہیں،اور دنیا کی 15فیصد تجارت اسی نہر کے ذریعے ہوتی ہے، جس می نمایاں یورپ اور ایشیا کے مابین تجارت ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us