ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

نیوزی لینڈ: 2025 تک سیگریٹ سے پاک ملک بننے کے لیے پرعزم، سنجیدہ اور دور است اقدامات کا قانون متعارف

نیوزی لینڈ نے سیگریٹ نوشی کے خلاف سخت اقدام اٹھانے کا فیصلہ کیا ہے اور اس سلسلے میں مختلف تجاویز پر غور کیا جارہا ہے۔ اطلاعات کے مطابق ملک میں 2004 کے بعد پیدا ہونے والے افراد کو سیگریٹ بیچنے پر مکمل پابندی لگانے پر بھی غور کیا جا رہا ہے۔

نیوزی لینڈ 2025 تک ملک سے سیگریٹ نوشی کو مکمل ختم کرنے کے منصوبے پر کام کر رہا ہے۔ جس کے لیے جامع حکمت عملی پر کام ہو رہا ہے، منصوبے کے تحت سیگریٹ میں نیکوٹین کی مقدار میں اور فروخت کے مقامات میں نمایاں کمی کرنے کے ساتھ ساتھ قیمتیں بڑھانے پر بھی غور کیا جا رہا ہے۔

وزارت داخلہ کا کہنا ہے کہ اس سے پہلے اٹھائے اقدامات کے تحت گزشتہ دس برسوں میں سیگریٹ نوشی میں کمی ہوئی ہے لیکن ابھی اسے مکمل ختم کرنا باقی ہے۔ حکومت نے اس حوالے سے شہریوں سے بھی رائے طلب کی ہے اور 31 مئی تک انہیں مزید تجاویز دینے کا وقت دیاگیا ہے۔

اس موقع پر معاون وزیر صحت عائشہ ویرال کا کہنا تھا کہ نیوزی لینڈ میں سالانہ 4500 شہری سیگریٹ نوشی سے منسلک بیماریوں کے باعث مرتے ہیں، اس لیے حکومت اب اسے مکمل ختم کرنے کا فیصلہ کر چکی ہے۔

سیگریٹ کے خلاف سنجیدہ اقدامات کے فیصلے پر جہاں شہری خوش ہیں وہیں کچھ کی رائے میں نئے اقدامات سے سیگریٹ کی غیر قانونی درآمد اور چور بازاری میں اضافہ ہو گا۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us