اتوار, مئی 9 Live
Shadow
سرخیاں
روسی بحریہ میں ایک اور جدید ترین آبدوز کازان شاملچینی راکٹ خلائی اسٹیشن منزل پر کامیابی سے پہنچا کر بحیرہ ہند کی فضاؤں میں جل کر بھسم: آبادی والے علاقے میں گرنے کے مغربی پراپیگنڈے پر چین کا افسوس کا اظہارکابل: اسکول پر راکٹ حملے میں متعدد طالبات سمیت 30 جاں بحق، 50 زخمیروس: دوسری جنگ عظیم میں نازی جرمنی کے خلاف فتح کا جشن، ماسکو میں فوجی پریڈ کا انعقاد – براہ راست ویڈیومالدیپ کے سابق صدر محمد نشید بم حملے میں بال بال بچ گئےبرازیل میں پولیس کے منشیات فروشوں کے خلاف چھاپے جاری: 3 روز میں 1 پولیس افسر سمیت 28 ہلاکعراق: نیٹو افواج کے زیر استعمال ہوائی اڈے پر ڈرون حملہ، کوئی جانی نقصان نہ ہونے کا دعویٰامریکی تیل ترسیل کی سب سے بڑی کمپنی پر سائبر حملہ: ملک بھر میں پہیہ جام ہونے کا خطرہ منڈلانے لگااسرائیل کوئی ریاست نہیں ایک دہشت گرد کیمپ ہے: ایرانی ریاستی سربراہ علی خامنہ ایاطالوی پولیس افسر کے قتل کے جرم میں دو امریکی سیاحوں کو عمر قید کی سزا

فائزر کا 2021 کے آخر تک کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے گولی کی شکل میں دوا متعارف کروانے کا دعویٰ

امریکی دوا ساز کمپنی فائزر نے 2021 کے آخر تک کورونا وائرس کی انسان پر حملے کی صلاحیت کو ختم کرنے کی دوائی مہیا کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ کمپنی کا کہنا ہے کہ اگر انکی تحقیق اسی رفتار سے چلتی رہی اور حکومت نے پیدا کردہ دوا کے اندراج میں رکاوٹیں نہ ڈالیں تو وہ 2021 کے آخر تک سارس-کوو-2 وائرس کو انسانی جسم میں بڑھنے کے لیے درکار انزائم کی دستیابی روک کر وائرس کے پیداوار کو روکنے کی دوا مہیا کر سکیں گے۔

واضح رہے کہ وائرس کی خود کو بڑھانے کی صلاحیت روکنے کا مطلب ہو گا کہ اسکے شدید ترین نقصان سے انسان بچ جائیں گے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر فائزر ایسا کرنے میں کامیاب وہ جاتی ہے تو اس کا مطلب ہو گا کہ تعداد میں کم اور حملے میں کمزور وائرس سے انسانی قوت مدافعت نمٹ سکے گی۔

طبی ماہرین گولی کی شکل میں دستیاب اس دوا کو انتہائی اہم تحقیق قرار دے رہے ہیں اور انکا کہنا ہے کہ اسکی آسان دستیابی اور ٹیکے کے بغیر لینے کی صلاحیت اسے وباء کے خاتمے میں انتہائی مؤثر بنا دے گی۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us