ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

انسانی امداد کے نام پر یو ایس ایڈ دنیا میں کیا گل کھلاتی ہے، وینزویلا میں تنظیم کی کارکردگی رپورٹ سامنے آںے سے سیاسی مداخلت کے بڑے راز عیاں

امریکہ کے دنیا بھر میں امدادی کاروائیوں کے نام پر اپنی تنظیموں کے ذریعے غیر پسندیدہ حکومتوں کو متاثر کرنے حتیٰ کہ گرانے کے اعتراف کی ایک رپورٹ منظر عام پر آئی ہے۔ یو ایس ایڈ (یو ایس اے آئی ڈی) نامی بین الاقوامی امریکی امدادی تنظیم کی جانب سے ویزوویلا میں تنظیمی کارکردگی پر مرتب رپورٹ میں باقائدہ اعتراف سامنے آیا ہے کہ تنظیم امدادی کاروائی کے نام پر حکومتی عمل میں رخنہ اندازی کرتی رہی ہے۔

تنظیم کے اعلیٰ عہدے دار نے متذکرہ رپورٹ میں واضح لکھا ہے کہ وہ امریکی محکمہ خارجہ اور قومی سلامتی کونسل کے احکامات کی تعمیل کرتے رہے ہیں، جس کا براہ راست اثر تنظیم کی امدادی کاروائیوں پر بھی پڑتا رہا ہے۔ دوسرے الفاظ میں تنظیم اعتراف کر رہی ہے کہ وہ دراصل سی آئی اے کا ہی ایک حصہ ہے، جو بظاہر اچھے کاموں کے نام ہر سیاسی مقاصد حاصل کرنے میں امریکہ کی مدد کرتی ہے۔

رپورٹ میں اعتراف کیا گیا ہے کہ جنوری 2019 میں ویزوویلا کے لیے تنظیم کی طرف سے جانے والی امداد مقامی حزب اختلاف کے رہنما گاڑو کی غیر آئینی عبوری حکومت کو مدد پہنچانے اور صدر مادورو پر دباؤ بڑھانے کے لئے استعمال ہوتی رہی ہے۔ یعنی ویزوویلا میں یو ایس ایڈ امدادی کاروائیوں کے پردے میں آئینی حکومت کا تختہ الٹنے کے لیے سرگرم رہی ہے۔

اس رپورٹ میں مزید انکشاف بھی ہوا ہے کہ یو ایس ایڈ مختلف ممالک میں سیاسی اختلافات کو ہوا دینے کے لیے محکمہ پولیس میں بھی اثرورسوخ بناتی ہے اور پھر اس سے امریکی مفادات کے لیے خطرناک سیاسی رہنماؤں کو نشانہ بنایا جاتا ہے، یو ایس ایڈ جن ممالک میں پولیس کے ذریعے حالات بگاڑنے میں ملوث رہی ہے ان میں انڈونیشیا، تھائی لینڈ، ویتنام، فلپائن، سعودی عرب اور ویزوویلا کے نام عیاں کیے گئے ہیں لیکن دیگر دنیا کے حوالے سے بھی قارئین خود تجزیہ کر سکتے ہیں۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us