اتوار, جنوری 17 Live
Shadow

Author: مخبر

گزشتہ سال دنیا بھر میں موبائل فون کی طلب میں 9 فیصد کی نمایاں کمی آئی: ڈیجی ٹائمز رپورٹ

گزشتہ سال دنیا بھر میں موبائل فون کی طلب میں 9 فیصد کی نمایاں کمی آئی: ڈیجی ٹائمز رپورٹ

معیشت
ٹیکنالوجی کے بارے میں چین کے معروف نشریاتی ادارے ڈیجی ٹائمز کی نئی تحقیق کی مطابق سال 2020 میں دنیا بھر میں موبائل فون کی فروخت میں 9 فیصد کی نمایاں کمی آئی ہے۔ رپورٹ میں کورونا وباء کے باعث معاشی سرگرمیوں میں ہونے والی رکاوٹ کو کمی کا باعث قرار دیا گیا ہے۔تحقیق کے مطابق فروخت میں سب سے زیادہ گراوٹ 2020 کے پہلے 4 ماہ میں دیکھی گئی، اس دوران موبائل فونوں کی طلب میں 20 فیصد تک ریکارڈ کمی ہوئی۔ دوسرے حصے میں 10 فیصد سے زیادہ جبکہ جولائی سے ستمبر کے دوران 10 فیصد سے کم گراوٹ ہوئی۔ سال کے آخری ایک چوتھائی حصے میں گراوٹ کا سلسلہ بالآخر رک گیا اور وباء سے پہلے کی صورتحال بحال ہو گئی۔ڈیجی ٹائمز کی تحقیقاتی رپورٹ کے مطابق سال 2020 میں مجموعی طور پر سوا ارب موبائل فروخت ہوئے، جو تناسب میں 2019 کی نسبت 8 اعشاریہ 8 فیصد کم تھے۔رپورٹ میں موبائل فونوں کے حوالے سے رحجانات پر بھی بات کی گئی...
کورونا تالہ بندی کے خلاف ویانا میں بڑا مظاہرہ، پولیس بے بس، مظاہرین کا حکومت سے استعفے کا مطالبہ

کورونا تالہ بندی کے خلاف ویانا میں بڑا مظاہرہ، پولیس بے بس، مظاہرین کا حکومت سے استعفے کا مطالبہ

بصری مواد
آسٹریا کے دارلحکومت ویانا میں 10 ہزار شہریوں نے کورونا تالہ بندی اور دیگر سماجی پابندیوں کے خلاف مظاہرہ کیا ہے، مظاہرین نے چانسلر سیباسٹین کرز سے استعفے کا مطالبہ بھی کیا ہے۔آسٹریوی حکومت ملک میں دوسری تالہ بندی کی معیاد ہونے سے پہلے اسکی معیاد بڑھانا چاہتی ہے۔ اعلان آج بروز اتوار متوقع ہے جس پر شہری سخت نالاں ہیں اور حکومت سے کاروبار زندگی کو کھولنے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔https://twitter.com/karolineoliro/status/1350469199412531206?s=20مقامی نشریاتی اداروں کے مطابق ویانا میں مظاہرے نہ ہونے کے برابر ہوتے ہیں، تاہم شہری حکومت کے فیصلے سے ناراض ہیں اور انہوں نے پولیس کی ہدایات کو بھی مکمل طور پر نظر انداز کرتے ہوئے شہر کی سڑکوں پر مظاہرہ کیا ہے، بلکہ مظاہرین اس دوران ایک دوسرے کو چومتے، گلے لگاتے اور آپس میں گلتے ملتے رہے۔https://twitter.com/deutsch365/status/1350509529000...
ٹویٹر کے بانی کی صدر ٹرمپ اور امریکی روایت پسندوں کے خلاف متعصب کارروائی کا پول کھل گیا: جیک ڈورسی کی عملے سے ہوئی آن لائن بیٹھک کی ویڈیو سامنے آگئی

ٹویٹر کے بانی کی صدر ٹرمپ اور امریکی روایت پسندوں کے خلاف متعصب کارروائی کا پول کھل گیا: جیک ڈورسی کی عملے سے ہوئی آن لائن بیٹھک کی ویڈیو سامنے آگئی

سیاست
ٹویٹر کی جانب سے غیر لبرل آوازوں کو دبانے کے لیے متعصب پالیسیوں کا باقائدہ انکشاف ہونے لگا ہے، سماجی میڈیا ویب سائٹ کے بانی کی ایک سامنے آنے والی ایک ویڈیو میں جیک ڈورسی کو واضھ طور پر یہ کہتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ کیسے ویب سائٹ امریکہ میں روایت پسندوں خصوصاً صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی آواز کو بند کرے گی اور ان کے آئندہ کیا منصوبے ہیں۔ویڈیو میں جیک ڈورسی 8 جنوری 2021 کو عملے کے ایک بندے سے ویڈیو کال میں گفتگو کررہے ہیں اور کہتے پائے گئے ہیں کہ آئندہ کچھ ماہ میں صدر ٹرمپ کا اکاؤنٹ بند کرنے کے بعد کیسے حالات سے نمٹنا ہے۔https://twitter.com/JamesOKeefeIII/status/1349860758444765184?s=20ڈورسی کہتے ہیں کہ ہم فی الحال ایک اکاؤنٹ (صدر ٹرمپ) پر نظر جمائے ہوئے ہیں، لیکن یہ معاملہ صرف ایک کھاتے تک محدود نہیں رہے گا، اور نہ ہی صرف ایک اہم دن (حلف برداری) تک رک جائے گا۔ویڈیو میں ڈورسی، "کی...
ایتھوپیا کے شمال میں حکومتی عملداری کے لیے فوجی آپریشن جاری: سابق وزیر خارجہ سمیت 3 اہم سیاسی رہنما ہلاک

ایتھوپیا کے شمال میں حکومتی عملداری کے لیے فوجی آپریشن جاری: سابق وزیر خارجہ سمیت 3 اہم سیاسی رہنما ہلاک

سیاست
ایتھوپیا کے شمالی علاقے میں ریاست کی عملداری قائم رکھنے کے لیے شروع عسکری کارروائی میں سابق وزیر خارجہ صیوم میسفن سمیت علاقے کے تین سیاسی رہنماؤں کے مارے جانے کی اطلاع ہے۔ یاد ریے کہ تغرے کے علاقے میں نومبر 2020 کے آغاز میں فوجی کارروائی کا آغاز کیا گیا تھا۔فوج کے ترجمان نے ٹویٹ میں کہا ہے کہ صیوم، عابے تسیہائے، اسمیلاش ولڈایسیلاس اور کرنل کیروس ہاگوس فائرنگ کے تبادلے میں مارے گئے ہیں۔ ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ کہ سابق وزیر خارجہ کو ہتھیار ڈالنے کا موقع دیا گیا تھا تاہم انہوں نے اسے قبول نہ کیا، اور فوج پر حملہ جاری رکھا۔واضح رہے کہ صیوم میسفن عوامی جمہوریہ ایتھوپیا کے پہلے وزیر خارجہ تھے۔ جو 1991 میں آمر حکمران منگیستو ہائیلے کا تحتہ الٹنے کے بعد بننے والی حکومت کے اہم ترین مرکزی عہدے دار تھے۔ صیوم نے اپنا عہدہ 2010 میں چھوڑا اور اس کے بعد چین میں ایتھوپیا کے سفیر بھی رہے ہیں۔...
سائبر دنیا میں جوہری دھماکہ، دنیا کی سب سے بڑی ڈیجیٹل ہجرت کا باعث، 9/11 کی طرز پر نئے دور کا پیش خیمہ: لبرل سماجی میڈیا کمپنیوں کی جانب سے صدر ٹرمپ کی آواز بندی پر روس سمیت عالمی رہنماؤں کا شدید ردعمل

سائبر دنیا میں جوہری دھماکہ، دنیا کی سب سے بڑی ڈیجیٹل ہجرت کا باعث، 9/11 کی طرز پر نئے دور کا پیش خیمہ: لبرل سماجی میڈیا کمپنیوں کی جانب سے صدر ٹرمپ کی آواز بندی پر روس سمیت عالمی رہنماؤں کا شدید ردعمل

روس
روسی دفتر خارجہ کی ترجمان ماریہ زاخارووا نے ٹویٹر کی جانب سے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے کھاتے کو بند کرنے کے اقدام کو جمہوری روایات کے خلاف کڑا وار قرار دیا ہے۔ روسی عہدے دار کا کہنا تھا کہ ایک نجی کمپنی کی جانب سے ریاست کے سربراہ کی آواز کو بند کرنے کی روایت کے نتائج اچھے نہیں ہوں گے۔ماریہ زاخاور کا کہنا تھا کہ واقعہ سائبر دنیا میں جوہری دھماکے کے برابر ہے، اس کے بہت دور رس نتائج برآمد ہوں گے۔روسی عہدے دار کا مزید کہنا تھا کہ واقعہ دراصل مغربی سماج کی حقیقی عکاسی ہے، جو ہر وقت دنیا کو آزادی رائے کا پرچار کرتا ہے پر اپنے ممالک میں عمومی سماج سے لے کر سائبر دنیا میں بھی سخت سنسرشپ لاگو ہے۔ دنیا کی بڑی ابلاغی ٹیکنالوجی کمپنی نے ان آوازوں کو تقویت دی ہے جو سائبر دنیا کو منظم کرنے کے نام پر مخالف آوازوں کو دبانا چاہتے ہیں۔سماجی میڈیا پر شائع تحریر پر روسی ترجمان کا کہنا تھا کہ ٹوی...
یورپی ایجنسی برائے خوراک نے حشرات کی بطور خوراک منظوری دے دی

یورپی ایجنسی برائے خوراک نے حشرات کی بطور خوراک منظوری دے دی

صحت و خوراک
یورپ میں حشرات کو خوراک کا حصہ بنانے کی منظوری دے دی گئی ہے، یورپی ایجنسی برائے تحفظ خوراک نے پروٹین کے حصول کے لیے باقائدہ طور پر پیلی سنڈیوں کو محفوظ قرار دیتے ہوئے اسے یورپ میں کھانوں کی فہرست میں شامل کرنے کی اجازت دے دی ہے۔اجازت کا بلواسطہ مطلب ہے کہ یورپ میں آئندہ پاستہ، برگر یا بسکٹ کھانے والے اپنے کھانے میں سنڈیوں کو موجود پائیں گے۔ جو خشک یا سفوف کی صورت میں بھی ہو سکتے ہیں، جبکہ کچھ افراد انہیں برگر میں دبا کر کھاتے بھی پائے جائیں گے۔یورپی ایجنسی کا کہنا ہے کہ انکی تفصیلی تحقیق میں سامنے آیا ہے کہ پیلی سنڈیوں کو خشک کر کے استعمال کرنا محفوظ ہے اور غذایت کے لحاط سے بھی اسکا کوئی نقصان نہیں ہے۔ واضح رہے کہ پیلی سنڈی عمومی طور پر آٹے کو لگنے والے کیڑے کا لاروا ہوتی ہے۔یورپی ایجنسی کا کہنا ہے کہ اگرچہ پیلی سنڈی میں پروٹین کی بڑی مقدار پائی جاتی ہے تاہم یہ سب کے لیے قا...
کورونا وباء آئندہ موسم گرما میں ختم ہو جائے گی تاہم کووڈ-19 موسمی نزلے کے وائرس کے طور پر برقرار رہے گا: روسی طبی ماہر

کورونا وباء آئندہ موسم گرما میں ختم ہو جائے گی تاہم کووڈ-19 موسمی نزلے کے وائرس کے طور پر برقرار رہے گا: روسی طبی ماہر

روس
روسی طبی ماہر البرت رزوانوو نے دعویٰ کیا ہے کہ کورونا وباء آئندہ موسم گرما میں ختم ہو جائے گی تاہم کورونا وائرس ایک موسمی فلو پھیلانے والے جراثیم کے طور پر برقرار رہے گا۔ روسی ماہر کا مزید کہنا ہے کہ انسانوں میں اینٹی باڈی پیدا ہو جانے کے باعث اموات کا سلسلہ ضرور رکے گا تاہم انسانوں کو اب اس نئے وائرس کے ساتھ رہنا سیکھنا ہو گا۔میڈیا سے گفتگو میں وفاقی جامعہ کازان کے شعبہ طب کے سربراہ کا مزید کہنا تھا کہ کورونا سے انسانوں کے بیمار ہونے کا سلسلہ برقرار رہے گا، لہٰذا حکومتوں کو اسکی تیاری کرنی چاہیے اور لوگوں کو بدلتے وائرس کے ساتھ رہنے کی تربیت دینی چاہیے۔ماضی کا حوالہ دیتے ہوئے ڈاکٹر البرت کا کہنا تھا کہ موسمی وبائیں موسم بہار کے آخر یا گرما کے آغاز میں ختم ہو جاتی ہیں، اس لیے انکا خیال ہے کہ روس میں جلد وائرس سے بیماری کا پھیلاؤ رک جائے گا اور کووڈ-19 بھی دیگر موسمی وائرسوں کی طر...
کیپیٹل ہل فوجی چھاؤنی میں تبدیل: تصاویر شائع ہونے پر امریکیوں کا غم وغصے کا اظہار

کیپیٹل ہل فوجی چھاؤنی میں تبدیل: تصاویر شائع ہونے پر امریکیوں کا غم وغصے کا اظہار

بصری مواد
امریکہ میں کیپیٹل ہل پر فوجیوں کی تعیناتی کی تصاویر نے انٹرنیٹ پر وبال مچا دیا ہے۔ دنیا بھر کے انٹرنیٹ پر آگ کی طرح پھیل جانے والی تصویر پر ہر حلقے کی جانب سے غم و غصے کا اظہار کیا جا رہا ہے۔ ڈیموکریٹ اس کا ذمہ دار صدر ٹرمپ کو ٹھہرا رہے ہیں جبکہ ریپبلک کے حامیوں کے مطابق ڈیموکریٹ کی سیاست نے ملک کے دارالحکومت میں عراق اور افغانستان سے بھی زیادہ فوجیوں کو لا کھڑا کیا ہے۔https://twitter.com/RT_com/status/1349444567184019457?s=20https://twitter.com/benrileysmith/status/1349351512384925697?s=20https://twitter.com/Kazcat134/status/1349479467350175746?s=20...
اٹلی میں 30 سال بعد بڑے مافیا گروہوں کے خلاف عدالتی کارروائی کا آغاز: 300 سال سے منظم جرائم میں ملوث مافیا گروہ کے 350 ملزمان پیش ہوں گے، کارروائی میں 900 شاہدین اور 24 ہزار منٹ کی ریکارڈنگ بھی سنی جائے گی

اٹلی میں 30 سال بعد بڑے مافیا گروہوں کے خلاف عدالتی کارروائی کا آغاز: 300 سال سے منظم جرائم میں ملوث مافیا گروہ کے 350 ملزمان پیش ہوں گے، کارروائی میں 900 شاہدین اور 24 ہزار منٹ کی ریکارڈنگ بھی سنی جائے گی

سیاست
اٹلی میں بڑے مافیا گروہوں کے کارندوں کے خلاف قانونی کارروائی کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ تین دہائیوں بعد شروع ہونے والی عدالتی کارروائی میں متعدد سابق سیاستدانوں اور گروہوں کے سربراہوں کو قانون کے سامنے پیش کیا جائے گا۔https://twitter.com/tomkington/status/1349311115415724032?s=20اطلاعات کے مطابق کاروائی میں 350 سے زائد افراد کو منظم انداز میں قتل، چوری، ڈکیتی، منشیات فروشی اور پیسے کے خردبرد جیسے مختلف الزامات کا سامنا ہے۔ تمام افراد کا تعلق 300 سال پرانے مافیا گروہ ندرانگیتا مافیا سے بتایا جا رہا ہے۔ ملزمان میں مافیا گروہ کا سربراہ لوئیگی مانکوسو عرف انکل بھی شامل ہے، جو پچھلے 20 سال سے جیل سے ہی گروہ کو چلا رہا ہے۔ اس کے علاوہ سابق قانون دان و رکن پارلیمنٹ گنکارلو پتیلی بھی ملزمان کی فہرست میں شامل ہے، جسے 2019 میں گرفتار کیا گیا تھا۔عدالتی کارروائی کا سامنا کرنے والے 350 ملزم...
صدر ٹرمپ کے خلاف مواخذے کی دوسری تحریک کی منظوری

صدر ٹرمپ کے خلاف مواخذے کی دوسری تحریک کی منظوری

سیاست
امریکہ میں ڈیموکریٹ کی صدر ٹرمپ سے نفرت اپنے عروج پر ہے. ایوان نمائندگان نے ریپبلک صدر کے مواخذے کے لیے ایک نیا مسودہ جمع کروایا ہے اور اس پہ بحث کی منظوری بھی دے دی ہے۔ مواخذے کی قرارداد ایسے وقت میں آئی ہے جب صدر ٹرمپ کے اقتدار میں صرف چند روز ہی باقی بچے ہیں۔ اسپیکر ایوان نمائندگان نینسی پلوسی نے اظہار خیال میں کہا ہے کہ ٹرمپ ایک خطرناک انسان ہے اسکا مواخذہ ضرور ہونا چاہیے اور اسے سزا بھی ملنی چاہیے۔مواخذے کی تحریک میں صدر پر عوام کو ورغلانے اور بغاوت کے الزام کا سامنا ہو گا، جس کا تناظر کیپیٹل ہل پر صدر ٹرمپ کے حامیوں کا دھاوا بولنا ہے۔صدر ٹرمپ کے اقتدار کا سورج ڈوبتا دیکھ بعض ریپبلک ارکان نے بھی صدر کا ساتھ چھوڑ دیا ہے تاہم اکثریت کا ماننا ہے کہ ایسے وقت میں مواخذے سے ملک میں سیاسی تفریق میں اضافہ ہو گا۔ دوسری طرف ڈیموکریٹ ارکان بل کی حمایت میں زوروشور سے مہم چلا رہے ہیں۔...