اتوار, April 10 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

Author: مخبر

افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشاف

افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشاف

پاکستان
افغانستان میں امریکی جاسوس ادارے سی آئی اے کی جانب سے قیدیوں پر مظالم کے نئے تجربات اور فوجیوں کو تشدد کی تربیت دینے جنگی قیدیوں پر مشق کرنے کا انکشاف ہوا ہے۔ سامنے آنے والے دستاویزات کے مطابق اس دوران کچھ قیدیوں کا دماغ بھی ضائع ہو گیا۔ سن 2008 کی ایک رپورٹ کے مطابق عمار بلوچی نامی ایک 44 سالہ قیدی کو فوجیوں کی تربیت کے لیے استعمال کیا گیا۔ والنگ نامی تشدد کی تکنیک کی تربیت پاکستانی کمپیوٹر انجینئر قیدی پر کی گئی، جس پر مسلسل 2 گھنٹے تک تشدد کیا گیا۔ اعلیٰ افسر نے مراسلے میں لکھا کہ تشدد کی تربیت کو اس لیے 2 گھنٹے تک دوہرایا گیا تاکہ تربیت کی توثیق ہو سکے۔ والنگ نامی بدنام زمانہ تکنیک میں کم ترین تشدد کے تحت انسان کو تیزی سے اپنی طرف کھینچا جاتا اور پھر ایک دم جھٹکے سے پیچھے دیوار سے ٹکرا دیا جاتا ہے۔ سامنے آنے والے مراسلے کے مطابق امریکی فوجیوں کو افغانستان میں تشدد کی مشق ...
ہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعمل

ہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعمل

پاکستان
ہندوستان کے مبینہ غلطی سے پاکستان کی طرف چلے میزائل پر چین اور امریکہ کی جانب سے ردعمل سامنے آیا ہے۔ چین نے پاکستان اور ہندوستان کو نصیحت کی ہے کہ دونوں ممالک معلومات کے تبادلے کے طریقہ کار کو تیز کریں جبکہ امریکہ نے اسے حادثہ قرار دیتے ہوئے مزید تبصرے سے انکار کیا ہے۔ یاد رہے کہ 9 مارچ کو ہندوستان سے ایک بیلسٹک میزائل پاکستانی حدود میں داخل ہوا اور میاں چنوں میں گِرا۔ہندوستان نے اس پر معذرت کرتے ہوئے اسے تکنیکی خرابی گردانا تاہم پاکستان کے لیے سب سے بڑھ کر عالمی برادری کا اس حوالے سے ردعمل تھا۔ دنیا بھر میں جدید ہتھیاروں کے غیر سنجیدہ ہاتھوں میں آنے کے حوالے سے مغربی دنیا خصوصاً امریکہ سب سے زیادہ تحفظات کا اظہار کرتا ہے تاہم یہ تحفظات بھی شدید تعصب کا شکار ہیں اور صرف پاکستان یا مسلم ممالک کے حوالے سے ان کا اظہار سامنے آتا ہے۔ ہندوستان کی جانب سے مبینہ غلطی پر امریکہ نے انتہا...
میٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گی

میٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گی

فن/ٹیکنالوجی
امریکی کمپنی میٹا یعنی فیس بک اور انسٹاگرام آسٹریلوی سیاستدانوں کے لیے خصوصی تربیتی منصوبے کا انتظام کر رہی ہے، جس میں انہیں سماجی میڈیا خصوصاً فیس بک پر جعلی خبروں سے متعلق آگاہی فراہم کی جائے گی۔ منصوبے کا اعلان ملک میں عام انتخابات سے قبل کیا گیا ہے، جس میں انتخابی مہم کو منظم اور سیاسی کشیدگی کو کنٹرول کرنے میں مدد ملے گی۔ میٹا کے آسٹریلیا میں نمائندے جوش ماکن نے منصوبے پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ کمپنی ان کی ویب سائٹ سے متعلق تمام امور بشمول مسائل و سماجی خطرات پر گہری نظر رکھتی ہے اور اسی کے پیش نظر اس منصوبے کو متعارف کر رہی ہے۔ انکا کہنا تھا کہ منصوبے کا مقصد متعلقہ افراد اور عوامی آگاہی کو بڑھانا ہے، جس سے آسٹریلیا میں انتخابات کو مزید شفاف اور قابل اعتماد بنانے میں مدد ملے گی۔ میٹا نمائندے کا مزید کہنا تھا کہ انکی کمپنی آسٹریلوی حکومت خصوصاً سکیورٹی اداروں سے مکمل تعاو...
یوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گے

یوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گے

روس
مغربی ممالک کی جانب سے شہریوں کو یوکرین میں روس کے خلاف لڑنے کے لیے ورگلانے کی مہم تیز ہوتی جا رہی ہے۔ ایسے میں روس نے اعلان کیا ہے کہ اسکی افواج اس سارے معاملے پر نظر رکھے ہوئے ہیں، اور ایسے افراد کو چن چن کر مارا جائے گا۔ گزشتہ روز یاووروو کے علاقے میں روس نے ایک کیمپ پر حملے میں مغربی ممالک سے آکر جمع ہوئے 180 سے زائد جنگجوؤں کو نشانہ بنایا اور سب کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ برطانوی میڈیا کے مطابق حملے میں 3 برطانوی جنگجو بھی مارے گئے ہیں۔ روسی فوج کے ترجمان میجر جنرل لگور کوناسینکوو نے اپنے بیان میں کہا کہ مغربی ممالک سے روس کے خلاف لڑنے کے لیے آنے والے جنگجوؤں پر نظر رکھے ہوئے ہیں، ہم انہیں تنبیہ کرتے ہیں کہ جنگجوؤں پر کسی قسم کا رحم نہیں کیا جائے گا، انہیں یوکرین میں چھپنے کی جگہ بھی نہیں ملے گی، وہ اپنی موت کے خود زمہ دار ہوں گے۔ فوجی ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ مغربی ممالک ک...
اسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلف

اسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلف

فن/ٹیکنالوجی
مقبوضہ فلسطین پر قابض صیہونی انتظامیہ کی بیشتر ویب سائٹوں پر سائبر حملہ کیا گیا ہے۔ مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق داخلی اور صیہونی آبادی کی بہبود کی انتظامیہ کے ساتھ ساتھ وزیراعظم کے دفتر کی ویب سائٹ بھی ہیک کر کے اسے تلف کر دیا گیا ہے اور اب ان تک رسائی نہیں ہو پا رہی۔ صیہونی انتظامیہ نے سائبر ایمرجنسی لاگو کرتے ہوئے بیشتر حساس ویب سائٹوں کی سکیورٹی بڑھا دی ہے جبکہ ہیک کردہ ویب سائٹوں کی بحالی کا کام جاری ہے۔ مقامی میڈیا کے مطابق عوامی خدمت اور معلومات کی حامل ویب سائٹیں بھی حملے کی زد میں ہیں۔ صیہونی انتظامیہ کے مطابق یہ اسرائیل پر اب تک کا سب سے بڑا سائبر حملہ ہے اور اس کے پیچھے انتظامیہ کے اندر سے کوئی فرد یا بڑا ادارہ زمہ دار ہے۔ سائبر سکیورٹی انتظامیہ کے اہلکار نے میڈیا سے گفتگو میں کہا ہے کہ تاحال حملہ آور کا پتہ نہیں چلایا جا سکا تاہم اس پر کام کیا جا رہا ہے۔ صیہونی صحافی ...

روس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کار

عالمی
روس اور یوکرین کے مابین جنگ بندی اور امن معاہدے کے لیے جاری مذاکرات میں جلد کامیابی کی امید کا اظہار سامنے آیا ہے، روسی مذاکرات کار لیوند سلاتسکی نے رشیاٹوڈے عربی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مذاکرات میں جاری پیش رفت سے لگتا ہے کہ جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا۔ سلاتسکی کا کہنا تھا کہ اگر مذاکرات کے آغاز اور چوتھے دور کا موازنہ کیا جائے تو کہا جا سکتا ہے کہ صورتحال انتہائی بہتر ہے، دونوں فریقین کے رویوں میں امن معاہدے کے لیے کوشش واضح نظر آرہی ہے۔ انکا کہنا تھا کہ میرے خیال میں آئندہ چند روز میں باقائدہ امن معاہدے پر دستخط ہو سکتے ہیں۔ واضح رہے کہ سلاتسکی مذاکرات کار کے ساتھ ساتھ نئی خود مختار ریاست دونباس میں خارجہ امور کے سربراہ بھی ہیں۔ ان کے خیال میں امن معاہدہ خطے میں امن اور مزید قیمتی انسانی جانوں کو محفوظ بنانے میں مددگار ثابت ہو گا۔ مذاکرات کے حوالے سے روسی صدر کے مشیر میخا...
یوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہ

یوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہ

عالمی
اقوام متحدہ کے ادارہ برائے مہاجرین کے سربراہ فلپو گراندی نے میڈیا سے گفتگو میں کہا ہے کہ یوکرین پر روسی حملے کے نتیجے میں بے گھر ہونے والوں کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی ہے، ملکی آبادی کا 15٪ اس وقت دربدر مدد کی تلاش میں ہے۔ عالمی ادارے کے زمہ دار کے مطابق ان مہاجرین کی تقریباً ملک میں دوسرے محفوظ مقامات پہ منتقل ہو گئ ہے جبکہ باقی آدھی تعداد ہمسایہ ممالک میں پناہ کی تلاش میں ہے۔ گراندی کے مطابق آئندہ چند روز میں اس تعداد میں مزید 30 لاکھ کا اضافہ ہو سکتا ہے، انکا کہنا تھا کہ یورپی تاریخ میں جنگ عظیم اول اور دوم کے بعد یہ بدترین انسانی المیہ ہے، جنگ بلقان میں بھی اتنی تیزی سے صورتحال نہیں بگڑی تھی جتنی اب یوکرین میں بگڑ چکی ہے۔ اقوام متحدہ کے ادارے کے سربراہ کا مزید کہنا تھا کہ یوکرینی آبادی کی بڑی تعداد یورپ میں مقیم ہے، اور وہ اپنے ہم وطنوں کے لیے ہر ممکن امداد کا بندوبست کر رہے ہی...
فیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریں

فیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریں

فن/ٹیکنالوجی
امریکی ابلاغی ٹیکنالوجی کمپنی میٹا المعروف فیس بک اور انسٹاگرام نے متعصب سیاسی وابستگی کی ایک اور بدترین مثال قائم کر دی ہے، دور جدید میں انسانی معاشرے خصوصاً جوانوں پر بدترین نفسیاتی اثرات چھوڑنے والی ابلاغی کمپنیاں اب صارفین کو نفرت آمیز مواد شائع کرنے نہ تو روکیں گی اور نہ ہی انکا شائع کردہ مواد ویب سائٹوں سے ہٹایا جائے گا، بشرط یہ کہ مواد روس کے خلاف ہو۔ رائٹرز کی انکشافات سے بھرپور رپورٹ کے مطابق میٹا کے نفرت انگیز مواد سے متعلق پالیسی کا اطلاق صرف کچھ ممالک پر ہو گا، جبکہ باقی ممالک پر پالیسی اپنی روح کے مطابق عمل نہیں کرے گی۔ رائٹرز نے فیس بک اور انسٹاگرام کے ملازمین کی باہمی ای میلوں کے لیک ہونے سے حاصل معلومات کی بنیاد پر رپورٹ شائع کی ہے۔ رائٹرز نے خبر کی سرخی لگاتے ہوئے کہا کہ؛ فیس بک اور انسٹاگرام روس کے خلاف نفرت انگیز مواد شائع کرنے کی عارضی اجازت دے رہی ہیں۔ سرخی کو ...
ترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلان

ترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلان

تجارت
ترکی نے روس سے تجارت کے لیے مقامی پیسے یعنی لیرے اور روبل کے استعمال کا اعلان کر دیا ہے۔ مقامی نشریاتی ادارے آ خبر نے صدر طیب ایردوعان کا حوالہ دیتے ہوئے خبر دی ہے کہ یوکرین تنازعے پر روسی اور ترک صدور کے مابین ٹیلی فون پر تفصیلی گفتگو ہوئی ہے جس میں امریکہ کی معاشی پابندیوں کے نتیجے میں ڈالر اور یورو کے برخلاف روبل میں تجارت کرنے پر اتفاق ہوا ہے۔ ٹیلی فون پر گفتگو کے دوران یوکرین تنازعے کے بعد کی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال ہوا اور دونوں علاقائی رہنماؤں نے مل کر اس صورتحال سے نمٹنے پر اتفاق کیا۔ آ خبر کے مطابق صدر ایردوعان نے روس کے ساتھ تعلقات اور رابطے کو اہم قرار دیا اور تجارت کو جاری رکھنے پر اتفاق کیا۔ صدر ایردوعان نے بحیرہ ایزوو میں اجازت کے لیے کھڑے 30 روسی تجارتی جہازوں کو جن میں گندم اور سورج مکھی کا تیل ترکی کو برآمد ہونا ہے، کو ملکی حدود میں فوری داخل ہونے کی اجازت دینے...
مغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

مغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

ابلاغ
یورپ اپنی ضرورت کی 40٪ گیس روس سے خریدتا ہے۔ برطانیہ سمیت بیشتر یورپی ممالک نے اعلان کیا ہے کہ وہ اپنی گیس اور تیل کی ضروریات کے لیے روس سے درآمدات جاری رکھیں گے۔ برطانوی محکمہ ذرائع آمدورفت نے وضاحت دیتے ہوئے کہا کہ اگرچہ روسی جہازوں پر ملکی حدود میں داخل ہونے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے لیکن برطانیہ اپنی ضرورت کے لئے روس سے توانائی کی درآمد جاری رکھے گا۔ یاد رہے کہ برطانیہ نے یوکرین تنازعہ شروع ہونے پر روس سے تعلق رکھنے والی تمام آمدورفت کی کمپنیوں، جس میں بری، بحری یا فضائی تمام ذرائع شامل ہیں پر پابندی عائد کر دی ہے۔ یہ پابندی نہ صرف روسی کمپنیوں بلکہ ماسکو سے کام کرنے والی کمپنیوں پر بھی لگائی گئی ہے۔ ملک میں توانائی کا بحران پیدا ہوتے دیکھ حکومت کو اعلان کرنا پڑا کہ روس پر تجارتی پابندیاں ضرور لگائی گئی ہیں لیکن برطانیہ اپنی ضرورت کی توانائی اس سے خریدنا جاری رکھے گا، البتہ...

Contact Us