جمعرات, اکتوبر 28 Live
Shadow
سرخیاں
جمناسٹک عالمی چیمپین مقابلے میں روسی کھلاڑی دینا آویرینا نے 15ویں بار سونے کا تمغہ جیت کر نیا عالمی ریکارڈ بنا دیا، بہن ارینا دوسرے نمبر پر – ویڈیویورپی یونین ہمارے سر پر بندوق نہ تانے، رویہ نہ بدلا تو بریگزٹ کی طرز پر پولیگزٹ ہو گا: پولینڈ وزیراعظمسابق سعودی جاسوس اہلکار سعد الجبری کا تہلکہ خیز انٹرویو: سعودی شہزادے محمد بن سلمان پر قتل کے منصوبے کا الزام، شہزادے کو بے رحم نفسیاتی مریض قرار دے دیاملکی سیاست میں مداخلت پر ترکی کا سخت ردعمل: 10 مغربی ممالک نے مداخلت سے اجتناب کا وضاحتی بیان جاری کر دیا، ترک صدر نے سفراء کو ملک بدر کرنے کا فیصلہ واپس لے لیاترکی کو ایف-35 منصوبے سے نکالنے اور رقم کی تلافی کے لیے نیٹو کی جانب سے ایف-16 طیاروں کو جدید بنانے کی پیشکش: وزیر دفاع کا تکنیکی کام شروع ہونے کا دعویٰ، امریکہ کا تبصرے سے انکارترک صدر ایردوعان کا اندرونی سیاست میں مداخلت پر 10 مغربی ممالک کے سفراء کو ناپسندیدہ قرار دینے کا فیصلہبحرالکاہل میں چینی و روسی جنگی بحری مشقیں مکمل – ویڈیونائجیریا: جیل حملے میں 800 قیدی فرار، 262 واپس گرفتار، 575 تاحال مفرورترکی: فسلطینی طلباء کی جاسوسی کرنے والا 15 رکنی صیہونی جاسوس گروہ گرفتار، تحقیقات جاریامریکی انتخابات میں غیر سرکاری تنظیموں کے اثرانداز ہونے کا انکشاف: فیس بک کے مالک اور دیگر ہم فکر افراد نے صرف 2 تنظیموں کو 42 کروڑ ڈالر کی خطیر رقم چندے میں دی، جس سے انتخابی عمل متاثر ہوا، تجزیاتی رپورٹ

روسی انتخابات میں مداخلت کا معاملہ: وفاقی کونسل برائے قومی خودمختاری کا اجلاس منعقد، ایپل اور گوگل نے فوری متنازعہ ایپلیکیشنیں سٹور سے ہٹا دیں

گوگل اور ایپل نے جیل میں قید روسی سیاستدان الیگژے ناوالنے کی جانب سے پارلیمانی انتخابات کو متنازعہ بنانے کی سازش کے لیے متعارف کروائی گئی آن لائن غیر سرکاری ایپلیکیشنوں کو اپنے ایپ سٹوروں سے ہٹا دیا ہے۔ امریکی مواصلاتی ٹیکنالوجی کمپنیوں سے روسی حکومت نے باقائدہ اس حوالے سے اقدامات کرنے کا مطالبہ کیا تھا، اور امریکی حکومت پر بھی روسی انتخابات میں مداخلت کی سازش میں ملوث ہونے کا الزام لگایا تھا۔

گوگل اور ایپل نے سمارٹ ووٹنگ نامی ایپلیکیشنیں انتخابات سے ایک رات پہلے تلف کی ہیں۔ روس نے کمپنیوں کو تنبیہ کی تھی کہ اگر انہوں نے انتخابات میں مداخلت کے ہتھکنڈے نہ روکے اور سازش کو نہ روکا تو کمپنیوں پر بھاری جرمانوں کے ساتھ ساتھ سخت کارروائی بھی کی جا سکتی ہے۔ روسی حکومت مسلسل امریکی کمپنیوں کو تنبیہ کر رہی تھی تاہم ردعمل ملکی خود مختاری اور اندرونی معاملات میں مداخلت کو روکنے کے لیے قائم قائمقام وفاقی کونسل کے اجلاس کے بعد سامنے آیا ہے۔ کونسل اجلاس میں ایپل اور گوگل کے رویے کو زیر بحث لایا گیا تھا اور انکی جانب سے انتخابات میں مداخلت، غلط معلومات کی تشہیر اور دیگر غیر قانونی کارروائیوں کو زیر بحث لایا گیا تھا۔ اس کے علاوہ وی پی این کو بھی پابندی لگائی ویب سائٹوں کی رسائی کے لیے راہ ہموار کرنے اور ملک میں انتشار پھیلانے کے جرم میں زیر بحث لایا گیا تھا۔

یاد رہے کہ روسی عدالت نے الیگژے ناوالنے کی سمارٹ ووٹنگ نامی ایپلیکیشن پر رواں سال کے آغاز میں پابندی لگا دی تھی تاہم کیونکہ ایپلیکیشنیں تاحال ایپل اور گوگل سٹور پر موجود تھیں لہٰذا انہیں وی پی این سے ڈاؤنلوڈ کر کے استعمال کیا جا رہا تھا۔ روسی حکومت نے باقائدہ سرکاری انتخابات کو متنازعہ بنانے کی اس سازش کے خلاف بروقت کارروائی کی اور کمپنیوں کے خلاف امریکی حکومت کو باقائدہ ثبوت کے ساتھ شکایت درج کی۔ روسی حکومت نے امریکی سفیر کو بھی بار بار اس حوالےسے طلب کیا اور جواب طلبی کی۔

روسی پارلیمان کی 450 نشستوں کے لیے رائے دہی کا عمل مشرقی علاقوں سے شروع ہو گیا ہے، اور یہ بروز اتوار تک جاری رہے گا۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us