ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

ایکواڈور جیل: گینگ جھڑپ میں 68 قیدی ہلاک، درجنوں زخمی

جنوب امریکی ملک ایکواڈور کی ایک جیل میں مختلف گینگ کے مابین جھڑپ کے نتیجے میں کم از کم 68 قیدی ہلاک ہو گئے ہیں۔ انتظامیہ کے مطابق جمعے کی شب گوآیاکوئل نامی شہر کی مرکزی جیل میں اچانک گینگوں کے مابین جھڑپ شروع ہو گئی۔ جیل کو لاس کانیروس نامی گینگ کا اہم مرکز مانا جاتا ہے، جسے مبینہ طور پر میکسیکو کے سینالاؤ کارٹل کی حمایت حاصل ہے۔

اطلاعات کے مطابق جھڑپ جیل کے بلاک نمبر 2 میں ہوئی جہاں مختلف مقامی گینگوں کے مابین شروع ہونے والی جھڑپ جلد خونی کھیل میں بدل گئی۔ جھڑپ کے وقت جیل کے اس حصے میں 700 افراد قید تھے، جن میں سے 68 ہلاک اور سینکڑوں زخمی ہیں۔

انٹرنیٹ پر کئی انسانیت سوز مناظر کی ویڈیو نشر کی گئی ہیں، جن میں کچھ میں مارنے کے بعد کراہتے قیدیوں کو جلانے کے مناظر بھی شامل ہیں۔

مقامی میڈیا کے مطابق پولیس نے اس دوران بیچ بچاؤ کی کوئی کوشش نہیں کی، اور اگلے دن صبح جب سب تھک ہار کر بیٹھ گئے تو جیل میں داخل ہوئی۔ ایکواڈور کی پولیس کے سربراہ نے اس حوالے سے وضاحت دیتے ہوئے کہا ہے کہ لڑائی کے دوران پولیس کا کوئی بھی اقدام صورتحال کو مزید خونی بنانے کے سوا کوئی نتیجہ برآمد نہ کرتا۔

مقامی میڈیا کے مطابق صفائی کے دوران پولیس کو نوکیلے ہتھیاروں کے علاوہ پستول اور دھماکہ خیز مواد بھی ملا ہے۔

یاد رہے کہ چند ماہ قبل ستمبر میں بھی اسی جیل میں ہوئی گینگ جھڑپ میں 119 قیدی ہلاک ہو گئے تھے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us