پیر, دسمبر 6 Live
Shadow
سرخیاں
امریکی سی آئی اے اہلکاروں کے ایک بار پھر کم عمر بچوں بچیوں کے ساتھ جنسی جرائم میں ملوث ہونے کا انکشافامریکہ کا مشرقی افریقہ میں تاریخ کے سب سے بڑے فوجی آپریشن کا اعلان: 1 ہزار سے زائد مزید کمانڈو تیارروسی صدر کی ثالثی: آزربائیجان اور آرمینیا کے مابین سرحدی جھڑپیں ختم، سرحدی حدود کے تعین پر اتفاق، جنگ سے متاثر آبادی اور دیگر انسانی حقوق کے تحفظ کی بھی یقین دہانینائیجیر: فرانسیسی فوج کی فائرنگ سے 2 شہری شہید، 16 زخمیامریکی فوج میں ہر 4 میں سے 1 عورت اور 5 میں سے 1 مرد جنسی زیادتی کا نشانہ بنتا ہے، بیشتر خود کشی کر لیتے، کورٹ مارشل کے خوف سے کوئی آواز نہیں اٹھاتا: سابقہ اہلکارروس کا غیر ملکی سماجی میڈیا کمپنیوں پر ملک میں کاروباری اندراج کے لیے دباؤ جاری: رواں سال کے آخر تک عمل نہ ہونے پر پابندی لگانے کا عندیاامریکہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی میں چین اور روس سے بہت پیچھے ہے: امریکی جنرل تھامپسنامریکی تفریحی میڈیا صنعت کس عقیدے، نظریے اور مقصد کے تحت کام کرتی ہے؟چوالیس فیصد امریکی اولاد پیدا کرنے کی خواہش نہیں رکھتے: پیو سروے رپورٹچینی کمپنی ژپینگ نے جدید ترین برقی کار جی-9 متعارف کر دی: بیٹری کے معیار اور رفتار میں ٹیسلا کو بھی پیچھے چھوڑ دیا

ایکواڈور جیل: گینگ جھڑپ میں 68 قیدی ہلاک، درجنوں زخمی

جنوب امریکی ملک ایکواڈور کی ایک جیل میں مختلف گینگ کے مابین جھڑپ کے نتیجے میں کم از کم 68 قیدی ہلاک ہو گئے ہیں۔ انتظامیہ کے مطابق جمعے کی شب گوآیاکوئل نامی شہر کی مرکزی جیل میں اچانک گینگوں کے مابین جھڑپ شروع ہو گئی۔ جیل کو لاس کانیروس نامی گینگ کا اہم مرکز مانا جاتا ہے، جسے مبینہ طور پر میکسیکو کے سینالاؤ کارٹل کی حمایت حاصل ہے۔

اطلاعات کے مطابق جھڑپ جیل کے بلاک نمبر 2 میں ہوئی جہاں مختلف مقامی گینگوں کے مابین شروع ہونے والی جھڑپ جلد خونی کھیل میں بدل گئی۔ جھڑپ کے وقت جیل کے اس حصے میں 700 افراد قید تھے، جن میں سے 68 ہلاک اور سینکڑوں زخمی ہیں۔

انٹرنیٹ پر کئی انسانیت سوز مناظر کی ویڈیو نشر کی گئی ہیں، جن میں کچھ میں مارنے کے بعد کراہتے قیدیوں کو جلانے کے مناظر بھی شامل ہیں۔

مقامی میڈیا کے مطابق پولیس نے اس دوران بیچ بچاؤ کی کوئی کوشش نہیں کی، اور اگلے دن صبح جب سب تھک ہار کر بیٹھ گئے تو جیل میں داخل ہوئی۔ ایکواڈور کی پولیس کے سربراہ نے اس حوالے سے وضاحت دیتے ہوئے کہا ہے کہ لڑائی کے دوران پولیس کا کوئی بھی اقدام صورتحال کو مزید خونی بنانے کے سوا کوئی نتیجہ برآمد نہ کرتا۔

مقامی میڈیا کے مطابق صفائی کے دوران پولیس کو نوکیلے ہتھیاروں کے علاوہ پستول اور دھماکہ خیز مواد بھی ملا ہے۔

یاد رہے کہ چند ماہ قبل ستمبر میں بھی اسی جیل میں ہوئی گینگ جھڑپ میں 119 قیدی ہلاک ہو گئے تھے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us