اتوار, اکتوبر 25 Live
Shadow

اسٹیٹ بینک کا تارکین وطن کے لیے سود پر بانڈ اور کھاتے متعارف کروانے کا فیصلہ

زر مبادلہ کے ذخائر بڑھانے کےلیے اسٹیٹ بینک نے نئی حکمت عملی بنائی ہے۔ گورنر اسٹیٹ بینک رضا باقر نےکہا ہے کہ بیرون ملک مقیم پاکستانی آئندہ ہفتےسے ڈیجیٹل اکاؤنٹ کھول سکیں گے۔

روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ کی بازگشت کئی روز سے سنائی دے رہی تھی، گورنر اسٹیٹ بینک رضا باقر نے وزیراعظم عمران خان کو ڈیجیٹل اکاؤنٹ کے خدوخال اور اس کے اجراء کے بارے میں بریفنگ بھی دی تھی لیکن اب عالمی جریدے کو انٹرویو میں اکاؤنٹ کی تفصیلات فراہم کیں ہیں جس کے مطابق بیرون ملک مقیم پاکستانی روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹ آٹھ مقامی بینکوں کے ذریعے ڈالر اور پاکستانی روپے میں کھول سکیں گے۔

ڈیجیٹل اکاؤنٹ کے ذریعے بنیادی بینکنگ سہولت کے ساتھ ساتھ پاکستان اسٹاک ایکسچینج اور حکومت پاکستان کے تمسکات کی خریداری کی جاسکے گی۔

عالمی جریدے کے مطابق گورنر اسٹیٹ بینک نے آئندہ چند ہفتوں میں ڈالر اور روپے میں پانچ مختلف مدت کے ڈیجیٹل سرٹیفکیٹس جاری کرنے کا عندیہ بھی دیا ہے۔ 

ڈالر سرٹیفکیٹ پر 5 سے 7 فیصد جبکہ روپے اکاؤنٹ پر 9 سے 11 فیصد منافع دیے جانےکا عندیہ دیا ہے۔

انٹرویو کے دوران گورنر اسٹیٹ بینک نے ملکی معیشت پر بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ مہنگائی کی صورتحال سے مطمین ہیں، تاہم شرح سود کا تعین کرنے کا اختیار مانیٹری پالیسی کمیٹی کا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پالیسیوں کا محور معاشی نمو اور روزگار بڑھانے پر ہے۔

ڈاکٹر رضا باقر نے کہا کہ مقامی اور برآمدی شعبے کا منظر نامہ قدرے بہتر ہے، امید ہے کہ معاشی ترقی کا سفر پائیدار ہوگا۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں