اتوار, April 10 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

پاکستان نے رواں سال سوا لاکھ ٹن آم برآمد کیے، سعودی عرب کو آم کی برآمدات میں دوگنا اضافہ

سعودی عرب نے رواں سال اب تک 7400 ٹن آم پاکستان سے درآمد کیے ہیں۔ سعودی خبر رساں ادارے البلاد کے مطابق اس سال پاکستان سے برآمد کیے گئے آموں کا حجم گزشتہ سال کی نسبت دوگنا تھا، اور اس سے پاکستان کو تقریباً 9 ملین ڈالر کا فائدہ ہوا ہے۔

سعودی عرب میں پاکستانی سفارت خانے کا کہنا ہے کہ گزشتہ سال سعودی عرب نے پاکستان سے 3830 ٹن آم درآمد کیے تھے، جس کی مقدار رواں سال تقریباً دو گنا بڑھائی گئی ہے، اور سلسلہ تاحال جاری ہے۔

پاکستانی سفات خانے میں آم کے موسم کے استقبال میں منعقد خصوصی دعوت کی تقریب کے مناظر

یاد رہے کہ پاکستان میں ہر سال تقریباً پونے دو ملین ٹن آم کی پیداوار ہوتی ہے۔ اور یوں پاکستان دنیا بھر میں آم پیدا کرنے والا چھٹا بڑا ملک ہے، تاہم اپنے منفرد اور اعلیٰ ذائقے کی وجہ سے پاکستانی آم کی دنیا بھر میں بھرپور مانگ پائی جاتی ہے۔ اور اسی لیے اسے پھلوں کا بادشاہ بھی کہا جاتا ہے۔

حکومتی اعدادو شمار کے مطابق رواں سال پاکستان نے سوا لاکھ ٹن آم برآمد کیے ہیں۔ اور یہ دنیا بھر کے 53 ممالک میں بھیجے گئے۔ اس سال کورونا کے باعث برآمدات متاثر اور تاخیر کا شکار ہوئی ہیں۔ تاہم سعودی عرب اور دیگر عرب ممالک میں پاکستانی آم کی طلب میں وقت کے ساتھ ساتھ اضافہ ہی ہوا ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us