جمعرات, اکتوبر 22 Live
Shadow

افغان نائب صدر امراللہ صالح بم حملے میں بال بال بچ گئے

افغانستان کے نائب صدر امر اللہ صالح بم حملے میں بال بال بچ گئے۔ افغان خبر رساں ادارے کے مطابق بدھ کی صبح افغان دارالحکومت کابل میں سڑک کنارے بم دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں 10 افراد جاں بحق اور 20 زخمی ہوگئے۔

بم مبینہ طور پر افغانستان کے نائب صدر امراللہ صالح پر حملے کے لیے نصب کیا گیا تھا۔ نائب صدر کے ترجمان کا کہنا ہے کہ بم حملے میں افغان نائب صدر کے قافلے کو نشانہ بنایا گیا جس میں ان کے محافظ زخمی ہوئے ہیں۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ آج ایک مرتبہ پھر افغانستان کے دشمنوں نے امراللہ صالح کو نقصان پہنچانے کی کوشش کی لیکن وہ اپنے مقاصد میں ناکام ہوگئے، امراللہ صالح دھماکے میں محفوظ رہے اور انہیں کوئی نقصان نہیں پہنچا۔

افغان میڈیا کا بتانا ہےکہ دھماکا مقامی وقت کے مطابق صبح ساڑھے 7 بجے کے قریب کابل کے علاقے تیمانی میں ہوا۔

حملے کا وقت انتہائی اہمیت کا حامل ہے، اس وقت بین الافغان مذاکرات کا آغاز ہونے والا ہے اور غنی انتظامیہ اس میں مسلسل رکاوٹیں کھڑی کر رہی ہے۔

افغان ذرائع ابلاغ کےمطابق فوری طور پر دھماکے کی ذمہ داری کسی تنظیم نے قبول نہیں کی، تاہم طالبان کی جانب سے ملوث ہونے کی تردید کی گئی ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں