جمعرات, October 1 Live
Shadow

کورونا کے 1٪ مریضوں کے پھیپھڑوں میں سوراخ ہو جاتے ہیں: تحقیق

معائنے میں پتہ چلا ہے کہ کووڈ19 کے ہر 100 میں سے ایک مریض کے پھیپھڑوں میں سوراخ ہو جاتے ہیں۔ جس کے باعث گہری سانس لینے میں دشواری اور سینے میں شدید درد جیسے مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

ڈاکٹروں کو معائنے میں پتہ چلا ہے کہ پھیپھڑوں میں سوراخ کے باعث ہوا پھیپھڑوں اور سینے کی جھلی کے درمیان جھکڑی رہتی ہے اور دباؤ بناتے ہوئے اندرونی اعضاء کو نقصان پہنچاتی ہے۔ جبکہ ایسے افراد جو پہلے سے پھیپھڑوں کے مرض کا شکار ہوں ان کے پھیپھڑوں میں سوراخ کا خدشہ زیادہ ہوتا ہے۔

اب تک کے اعدادو شمار کے مطابق پھپھڑوں میں سوراخ کے بعد دو تہائی مریض صحت یاب ہو جاتے ہیں، جبکہ پھیپھڑوں میں سوراخ کا مسئلہ بھی کووڈ19 کی طرح خواتین کی نسبت مردوں میں زیادہ دیکھا جا رہا ہے۔ اور تیزابی خون والے مریضوں میں اس مسئلے کے خطرات مزید بڑھ جاتے ہیں۔

یاد رہے کہ تحقیق کے نتائج فی الحال صرف برطانوی شہریوں کے معائنے سے اخذ کیے گئے ہیں۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں