ہفتہ, اکتوبر 24 Live
Shadow

میں بشار الاسد کو مارنا چاہتا تھا، مجھے جنرل میٹس نے روکے رکھا: صدر ٹرمپ

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے انکشاف کیا ہے کہ وہ 2017 میں شامی صدر بشار الاسد کو جنگی جرائم میں ملوث ہونے پر مارنا چاہتے تھے تاہم سابق وزیردفاع جنرل جیمز میٹس نے انہیں روکے رکھا۔

سن 2017 میں شامی صدر بشار الاسد نے کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا جس پر دنیا بھر سے شدید ردعمل آیا، اور افواہیں بھی چلیں کہ امریکہ بشار الاسد کو نشانہ بنا سکتا ہے۔ تاہم اس وقت صدر ٹرمپ نے ایسے کسی امکان کو رد کر دیا تھا۔

اب فاکس نیوز کے ایک پروگرام میں گفتگو کے دوران صدر ٹرمپ نے انکشاف کیا ہے کہ وہ بشار الاسد کو ختم کرنے والے تھےتاہم جنرل جیمز میٹس نے انہیں روکے رکھا، صدر ٹرمپ کا سابق وزیر دفاع کے بارےمیں کہنا تھا کہ جنرل میٹس کوئی خاص خوبی کے مالک رہنما نہیں، انہیں بڑھا چڑھا کر پیش کیا جاتا ہے، میں نے اس لیے انہیں وزارت سے فارغ کر دیا۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں