منگل, جون 15 Live
Shadow
سرخیاں
ترکی: 20 ٹن سونا اور 5 ٹن چاندی کا نیا ذخیرہ دریافت، ملکی سالانہ پیداوار 42 ٹن کا درجہ پار کر گئی، 5 برسوں میں 100 ٹن تک لے جانے کا ارادہحکومت پنجاب کا ویکسین نہ لگوانے والوں کے موبائل سم کارڈ معطل کرنے کی پالیسی لانے کا فیصلہموساد کے سابق سربراہ کا ایرانی جوہری سائنسدان اور مرکز پر سائبر حملے کا اعترافی اشارہ: ایرانی سائنسدانوں کو منصوبہ چھوڑنے پر معاونت کی پیشکش کر دییورپی اشرافیہ و ابلاغی اداروں کے برعکس شہریوں کی نمایاں تعداد نے روس کو اہم تہذیبی شراکت دار و اتحادی قرار دے دیاروسی بحریہ نے سٹیلتھ ٹیکنالوجی سے لیس جدید ترین بحری جہاز کا مکمل نمونہ تیار کر لیا: مکمل جہاز آئندہ سال فوج کے حوالے کر دیا جائےگاٹویٹر کو نائیجیریا میں دوبارہ بحالی کیلئے مقامی ابلاغی اداروں کی طرح لائسنس لینا ہو گا، اندراج کروانا ہو گا: افریقی ملک کا امریکی سماجی میڈیا کمپنی کو دو ٹوک جواب، صدر ٹرمپ کی جانب سے پابندی پر ستائش کا بیانکاراباخ آزادی جنگ: جنگی قیدی چھڑوانے کے لیے آرمینی وزیراعظم کی آزربائیجان کو بیٹے کی حوالگی کی پیشکشمجھ پر حملے سائنس پر حملے ہیں: متنازعہ امریکی مشیر صحت ڈاکٹر فاؤچی کا اپنے دفاع میں نیا متنازعہ بیان، وباء سے شدید متاثر امریکیوں کے غصے میں مزید اضافہچین 3 سال کے بچوں کو بھی کووڈ-19 ویکسین لگانے والا دنیا کا پہلا ملک بن گیاایرانی رویہ جوہری معاہدے کی بحالی میں تعطل کا باعث بن سکتا ہے: امریکی وزیر خارجہ بلنکن

واشنگٹن نارڈ سٹریم2 گیس لائن منصوبے کے خلاف پابندیوں سے باز رہے ورنہ نتائج اچھے نہ ہوں گے: روس

یورپی گیس لائن منصوبے نارڈ سٹریم 2 کے خلاف نئے ممکنہ امریکی اقدامات اور دھمکیوں پر یورپی کمپنیوں اور روسی حکومت کی جانب سے شدید ردعمل سامنے آیا ہے۔

روس اور یورپ کا ردعمل ایسے موقعے پر سامنے آیا ہے جب کہ امریکہ نے منصوبے پر کام کرنے والی کمپنیوں کو 30 روز میں کام بند کرنے کی دھمکی دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایسا نہ ہونے پر انہیں نئی پابندیوں کا سامنا کرنا پڑے گا۔

روسی نشریاتی ادارے کے مطابق اگر امریکہ منصوبے کے خلاف کوئی معاشی پابندیاں لگاتا ہے تو اس سے منصوبے میں سرمایہ کرنے والی کمپنیوں، توانائی کی کمپنیوں اور معاون اداروں کو شدید نقصان پہنچے گا۔

روسی نشریاتی ادارے کے مطابق امریکی پابندیوں سے براہ راست 12 یورپی ممالک کی 120 کمپنیاں متاثر ہوں گی۔

نارڈسٹریم 2 گیس لان منصوبہ جرمنی اور متعدد دیگر یورپی ممالک کو سالانہ 55 ارب کیوبک میٹر گیس کی فراہمی کا منصوبہ ہے۔ منصوبے پر تمام کاغذی کارروائی کے ساتھ ساتھ اس کی سمندر میں 2300 کلومیٹر لائن بچھا دی گئی ہے، یعنی 94 فیصد کام مکمل ہو چکا ہے، اور اب کل منصوبے 2460 کلومیٹر کا صرف 6 فیصد حصہ باقی ہے، جس پر بھی روس تیزی سے کام جاری رکھے ہوئے ہے۔

تاہم امریکہ نیٹو اتحاد کے تحت توانائی کے تحفظ کے نام پر یورپی ممالک کو دھمکا رہا ہے کہ وہ روس پر توانائی کے لیے مکمل انحصار نہیں کر سکتے، جس پر جرمنی سمیت یورپی ممالک امریکہ کو رام کرنے پر تلے ہیں تاہم تاحال صدر ٹرمپ کی طرف سے کسی بھی پیشکش کا مثبت جواب نہیں دیا گیا۔ بلکہ منصوبے کے خلاف آئے روز کوئی نہ کوئی کارروائی سامنے آرہی ہے۔ جس نے ایک مکمل منصوبے پر یورپی و روسی کمپنیوں اور حکومتوں کو مشکل سے دوچار کر رکھا ہے۔

دوسری جانب روس نے اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ ایسے اقدامات باہمی اعتماد کو نقصان پہنچا رہے ہیں، واشنگٹن کو ماسکو سے تعلقات کی حساسیت کو سمجھنا ہو گا۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us