منگل, جون 15 Live
Shadow
سرخیاں
ترکی: 20 ٹن سونا اور 5 ٹن چاندی کا نیا ذخیرہ دریافت، ملکی سالانہ پیداوار 42 ٹن کا درجہ پار کر گئی، 5 برسوں میں 100 ٹن تک لے جانے کا ارادہحکومت پنجاب کا ویکسین نہ لگوانے والوں کے موبائل سم کارڈ معطل کرنے کی پالیسی لانے کا فیصلہموساد کے سابق سربراہ کا ایرانی جوہری سائنسدان اور مرکز پر سائبر حملے کا اعترافی اشارہ: ایرانی سائنسدانوں کو منصوبہ چھوڑنے پر معاونت کی پیشکش کر دییورپی اشرافیہ و ابلاغی اداروں کے برعکس شہریوں کی نمایاں تعداد نے روس کو اہم تہذیبی شراکت دار و اتحادی قرار دے دیاروسی بحریہ نے سٹیلتھ ٹیکنالوجی سے لیس جدید ترین بحری جہاز کا مکمل نمونہ تیار کر لیا: مکمل جہاز آئندہ سال فوج کے حوالے کر دیا جائےگاٹویٹر کو نائیجیریا میں دوبارہ بحالی کیلئے مقامی ابلاغی اداروں کی طرح لائسنس لینا ہو گا، اندراج کروانا ہو گا: افریقی ملک کا امریکی سماجی میڈیا کمپنی کو دو ٹوک جواب، صدر ٹرمپ کی جانب سے پابندی پر ستائش کا بیانکاراباخ آزادی جنگ: جنگی قیدی چھڑوانے کے لیے آرمینی وزیراعظم کی آزربائیجان کو بیٹے کی حوالگی کی پیشکشمجھ پر حملے سائنس پر حملے ہیں: متنازعہ امریکی مشیر صحت ڈاکٹر فاؤچی کا اپنے دفاع میں نیا متنازعہ بیان، وباء سے شدید متاثر امریکیوں کے غصے میں مزید اضافہچین 3 سال کے بچوں کو بھی کووڈ-19 ویکسین لگانے والا دنیا کا پہلا ملک بن گیاایرانی رویہ جوہری معاہدے کی بحالی میں تعطل کا باعث بن سکتا ہے: امریکی وزیر خارجہ بلنکن

نیویارک: انتخابات کے بعد پُرتشدد اور جلاؤ گھیراؤ والے مظاہروں کا سلسلہ شروع – ویڈیو

امریکی ریاست نیو یارک میں انتخابات کے اگلے ہی روز مظاہروں کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے، مین ہیٹنمیں ہزاروں افراد نے جلاؤ گھیراؤ کیا اور پولیس کی موجودگی میں املاک کو آگ لگانے کے ساتھ ساتھ توڑ پھوڑ کرتے رہے۔

مظاہرہ بظاہر ڈیموکریٹ کے حامیوں کی جانب سے نکالا گیا تھا جس کا مطالبہ تھا کہ انتخابات میں ڈالے جانے والے تمام ووٹوں کی گنتی کی جائے۔ جس کی وجہ صدر ٹرمپ کی جانب سے ڈاک کے ذریعے ووٹوں پر دھاندلی کی کوشش کا الزام اور انہیں نتائج میں شامل نہ کرنے کی کوشش میں سپریم کورٹ جانے کا اعلان ہے۔

مقامی میڈیا کے مطابق مظاہروں میں انتیفا اور سیاہ فام کے حقوق پر کام کرنے والی تنظیمیں زیادہ متحرک رہیں۔

مقامی پولیس کے مطابق نیویارک میں مختلف مقامات پر 400 سے 500 مظاہرے کیے گئے، جس کے باعث پولیس کے لیے بھی تمام مظاہروں پر نظر رکھنا اور انہیں فسادات سے روکنا مشکل رہا۔ تاہم عملہ اپنی ذمہ داریوں کو مخوبی نبھا رہا ہے۔

پولیس نے املاک کو نظر آتش کرنے اور دوسروں وکو نقصان پہنچانے سے باز رہنے کی تنبیہ کی ہے اور اپنے ٹویٹر کھاتے سے خصوصی پیغام میں کہا ہے کہ اپنی رائے کے اظہار کو ضرور کریں تاہم قانون کو ہاتھ میں لینے سے باز رہیں، اسے برداشت نہیں کیا جائے گا۔

پولیس کے مطابق اس نے 20 سے زائد افراد کو مظاہروں سے گرفتار کیا ہے، گرفتار کیے گئے افراد پر امن جلوس کو فساد پر ابھار رہے تھے اور سڑکوں پر آگ لگانے کے واقعات میں ملوث پائے گئے تھے۔ جبکہ کچھ سے تیز دھار چاقو، بلیڈ اور نقصان پہنچانے والے دیگر ہتھیاربھی برآمد ہوئے ہیں۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us