اتوار, نومبر 29 Live
Shadow

صدر ٹرمپ نے جارجیا میں تاخیر سے آنے والے غیر حاضر اور ڈاک ووٹوں کو مسترد کرنے کی عدالت میں استدعا کر دی

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتخابی مہم کی ٹیم نے ریاست جارجیا میں غیر موجود افراد اور تاخیر سے ڈاک کے ذریعے آنے والے ووٹوں کو شامل نہ کرنے کی عدالت میں استدعا کر دی ہے۔ یوں ریپبلکن کی جانب سے انتخابی عمل میں دھاندلی کو لے کر اب تک یہ تیسری درخواست ہے۔

واضح رہے کہ جارجیا میں 2 لاکھ سے زائد غیر حاضر اور ڈاک سے آنے والے ووٹ ہیں جنہیں اب تک گنا نہیں گیا، جبکہ مزید ووٹوں کے آنے کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ اس کے علاوہ ریپبلکن کارکنان نے مقامی سطح پردھاندلی کی کوشش کو پکڑنے کا دعویٰ بھی کیا ہے۔

مقامی میڈیا کے مطابق درخواست میں فوری ووٹوں کی گنتی رکوانے کا کہا گیا جبکہ اس کے ساتھ ساتھ انتخابات کے دن 7 بجے کے بعد ڈاک کے ذریعے آںے والے ووٹوں کو الگ کرنے کی استدعا کی ہے۔

درخواست میں تمام ووٹوں کو محفوظ رکھنے کی استدعا بھی کیا گئی ہے، جس کا مقصد ریپبلکن کی جانب سے دھاندلی کو ثابت کرنے کے ثبوت فراہم کرنے کے لیے جعلی بیلٹ کو استعمال کرنا ہے۔

ریپبلکن کے مقامی کارکنان کا کہنا ہے کہ انہوں نے پولنگ اسٹیشن پر عملے کو خود سے لائے گئے تھیلے سے غیر حاضر افراد کے ووٹوں میں ووٹ کی پرچی شامل کرتے دیکھا ہے۔ ایک کارکن کا کہنا ہے کہ اس نے اپنے حلقے میں 53 سے زائد غیر تصدیق شدہ ووٹوں کو شامل کرتے پکڑا ہے۔

واضح رہے کہ ڈیموکریٹ جماعت اپنے کارکنان کو انتخابات کے بعد بھی گھر گھر جا کر لوگوں کو ڈاک سے ووٹ ڈالنے پر ابھار رہے ہیں، اور اسکی سماجی میڈیا پر بھی استدعا کی جا رہی ہے۔

عدالت میں درخواست سے قبل صدر ٹرمپ جارجیا سے فتح کا اعلان کر چکے ہیں، تاہم مزید آنے والے ووٹوں پر انہیں شک ہے اور اسی وجہ سے انکی ٹیم نے عمل کو رکوانے کی درخواست کی ہے۔ اس کے علاوہ صدر ٹرمپ شمالی کیرولائنا، پنسلوینیا اور مشی گن سے بھی فتح کا اعلان کر چکے ہیں، تاہم ادھر بھی جارجیا جیسی صورتحال کا سامنا ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں