جمعرات, اکتوبر 28 Live
Shadow
سرخیاں
جمناسٹک عالمی چیمپین مقابلے میں روسی کھلاڑی دینا آویرینا نے 15ویں بار سونے کا تمغہ جیت کر نیا عالمی ریکارڈ بنا دیا، بہن ارینا دوسرے نمبر پر – ویڈیویورپی یونین ہمارے سر پر بندوق نہ تانے، رویہ نہ بدلا تو بریگزٹ کی طرز پر پولیگزٹ ہو گا: پولینڈ وزیراعظمسابق سعودی جاسوس اہلکار سعد الجبری کا تہلکہ خیز انٹرویو: سعودی شہزادے محمد بن سلمان پر قتل کے منصوبے کا الزام، شہزادے کو بے رحم نفسیاتی مریض قرار دے دیاملکی سیاست میں مداخلت پر ترکی کا سخت ردعمل: 10 مغربی ممالک نے مداخلت سے اجتناب کا وضاحتی بیان جاری کر دیا، ترک صدر نے سفراء کو ملک بدر کرنے کا فیصلہ واپس لے لیاترکی کو ایف-35 منصوبے سے نکالنے اور رقم کی تلافی کے لیے نیٹو کی جانب سے ایف-16 طیاروں کو جدید بنانے کی پیشکش: وزیر دفاع کا تکنیکی کام شروع ہونے کا دعویٰ، امریکہ کا تبصرے سے انکارترک صدر ایردوعان کا اندرونی سیاست میں مداخلت پر 10 مغربی ممالک کے سفراء کو ناپسندیدہ قرار دینے کا فیصلہبحرالکاہل میں چینی و روسی جنگی بحری مشقیں مکمل – ویڈیونائجیریا: جیل حملے میں 800 قیدی فرار، 262 واپس گرفتار، 575 تاحال مفرورترکی: فسلطینی طلباء کی جاسوسی کرنے والا 15 رکنی صیہونی جاسوس گروہ گرفتار، تحقیقات جاریامریکی انتخابات میں غیر سرکاری تنظیموں کے اثرانداز ہونے کا انکشاف: فیس بک کے مالک اور دیگر ہم فکر افراد نے صرف 2 تنظیموں کو 42 کروڑ ڈالر کی خطیر رقم چندے میں دی، جس سے انتخابی عمل متاثر ہوا، تجزیاتی رپورٹ

امریکہ: ریاست وسکونسن کے مخصوص انتخابی حلقوں میں دوبارہ گنتی کے لیے درخواست جمع

صدر ٹرمپ کی انتخابی مہم کی انتظامیہ نے ریاست وسکونسن کے بعض حلقوں میں ووٹوں کی دوبارہ گنتی کے لیے درخواست جمع کروا دی ہے اور اس کے لیے مقررہ 30 لاکھ ڈالر کی ادائیگی بھی کر دی گئی ہے۔ واضح رہے کہ ریاست وسکونسن میں جوبائیڈن کو صدر ٹرمپ پر صرف 20 ہزار ووٹوں کی برتری حاصل ہے۔ امریکی ذرائع ابلاغ کے مطابق دوبارہ گنتی کے لیے درخواست دیے گئے حلقوں میں کل 8 لاکھ ووٹ ڈالے گئے ہیں۔

پوری ریاست میں دوبارہ گنتی کے لیے امیدوار کو 80 لاکھ ڈالر کی بڑی جمع کروانا پڑتے، یہی وجہ تھی کہ صرف مخصوص حلقوں میں دوبارہ گنتی کی درخواست دی گئی ہے، آج اعتراضات کے خلاف درخواست جمع کروانے کا آخری روز تھا۔

صدر ٹرمپ کی انتخابی مہم کی انتظامیہ کی جانب سے درخواست میں اعتراضات اٹھائے گئے ہیں کہ ریاست میں بائیڈن کی فتح کے پیچھے ووٹ نہ ڈالنے والے افراد کے نام سے ووٹوں، غیر قانونی طور پر جاری کردہ بیلٹوں اور مقامی انتظامیہ کی غلط سفارشات کا ہاتھ ہے، اور مشکوک حلقوں میں شدید ترین بدانتظامیوں کی شکایات بھی موجود ہیں۔

جو بائیڈن کو وسکونسن کے تمام 72 حلقوں سے مجموعی طور پر 20 ہزار 612 ووٹوں کی برتری حاصل ہے، جبکہ یہ ان چند ریاستوں میں شامل ہے جہاں صدر ٹرمپ نے اپنی فتح کا اعلان کر رکھا ہے۔

وسکونسن سے جیت جانے کے باوجود صدر ٹرمپ اور جوبائیڈن کے درمیان فرق بہت نمایاں ہو گا، صدر ٹرمپ تاحال میڈیا کی رپورٹوں کے مطابق 222 اور بائیڈن 290 الیکٹورل ووٹ حاصل کر سکے ہیں۔ تاہم اس سے ان کے دھاندلی کے بیانیے کو تقویت ملے گی اور وہ مزید ریاستوں میں دوبارہ گنتی کی درخواست جمع کروا سکتے ہیں۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us