ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

چین کا ریکارڈ وزن کے ساتھ دوبارہ استعمال کے قابل راکٹ خلاء روانہ – راکٹ پہلے سے دس گناء زیادہ مؤثر اور ماحول دوست بھی ہے

چین نے دوبارہ استعمال کے قابل اور ریکارڈ وزن کے ساتھ پرواز کرنے کا حامل راکٹ خلاء میں بھیجنے کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔ خلائی راکٹ کے ساتھ پانچ مصنوعی سیارے بھی خلاء میں بھیجے گئے ہیں جن کا مجموعی وزن 336 ٹن تھا، راکٹ کی کل لمبائی 50 اعشاریہ 3 میٹر بتائی جا رہی ہے، جبکہ پرواز کے وقت راکٹ کا مجموعی وزن 480 ٹن تھا۔

چینی نشریاتی ادارے کے مطابق راکٹ کا انجن ماحول دوست ایندھن سے چلنےکے قابل ہے اور اس میں مائع ہائیڈروجن اور آکسیجن کے جلنے سے پانی بنتا ہے، راکٹ کا سارا نظام ماحول دوست اور جدید ترین ٹیکنالوجی کا حامل ہے۔

واضح رہے کہ چین مستقبل قریب میں مزید جدید خلائی جہاز اور تیز ترین خلائی راکٹ بنانے کا ارادہ بھی رکھتا ہے، جن سے نہ صرف خلائی سفر کا خرچہ کم ہو بلکہ یہ ماحول دوست بھی ہو۔ یہاں یہ بھی اہم ہے کہ موجودہ راکٹ پہلے موجود راکٹوں سے دس گناء زیادہ مؤثر تھا۔

چین آئندہ سال مریخ پر ایک خلائی منصوبہ بھیجنے کا ارادہ بھی رکھتا ہے اور اسی ہفتے اسکا چاند سے مٹی کا نمونہ لانے کا ایک الگ منصوبہ بھی کامیابی سے مکمل ہوا ہے، جبکہ چینی خلائی ایجنسی آئندہ دو سالوں میں خلاء میں ایک کثیرالمقاصد اسٹیشن بنانے کا ارادہ بھی رکھتی ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us