ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

امریکہ نے جرمنی کو جدید ترین پی8اے پوسیدون طیارے بیچنے کی منظوری دے دی: معاہدہ پونے دو ارب ڈالر میں طے ہوا

امریکہ نے جرمنی کو جدید ترین طیارے “پی8-اے پوسیدون” دینے کی منظوری دے دی ہے۔ جرمنی جدید ترین ہتھیاروں اور فضائی نظام سے لیس 5 طیارے 1 اعشاریہ 7 ارب ڈالر میں خرید رہا ہے۔ اس کے علاوہ تربیت، سافٹ ویئر، راڈار اور دیگر آلات کی خریداری کے لیے الگ سے ادائیگی کی جائے گی۔

اطلاعات کے مطابق جرمنی بوئنگ کمپنی کے تیار کردہ گشتی طیاروں کو 2025 میں زیراستعمال لائے گا، اور طیارے پی-3 اوریون طیاروں کے متبادل کے طور پر کام کریں گے۔ یاد رہے کہ پی8اے طیارے اب تک صرف امریکی اور آسٹریلوی بحریہ کے زیر استعمال ہیں۔

امریکی دفتر خارجہ نے طیاروں کی فروخت کی اطلاع دیتے ہوئے کہا کہ اس سے نیٹو اتحادی کی سکیورٹی میں اضافہ ہو گا اور یورپ میں امریکی مفادات کو بھی تحفظ ملے گی۔

اطلاعات کے مطابق جرمنی کی فوج کو جدید ترین طیاروں کی تربیت اور دیگر معاملات کے لیے امریکی اہلکار دو سال تک جرمنی میں رہیں گے۔

واضح رہے کہ بوئنگ کے پی8-اے طیارے صرف گشتی طیارے نہیں ہیں۔ طیارے آبدوز کو نشانہ بنانے، بحری جہازوں کو نشانہ بنانے، جاسوسی کرنے اور معلومات اکٹھی کرنے کی صلاحیت بھی رکھتے ہیں، طیارہ اس وقت دنیا کا جدید ترین طیارہ ہے۔ طیارے سے نہ صرف جاسوسی بلکہ سمندر، زمین اور فضاء میں بھی حملہ بھی کیا جا سکتا ہے، طیاریہ میزائل برداری کا کام بھی کر سکتا ہے اور سمندر کی تہوں چھپے اہداف کو بھی بخوبی نشانہ بنا سکتا ہے۔

عسکری ماہرین کا کہنا ہے کہ جرمنی طیارہ روسی سرحد پر جاسوسی بڑھانے کے لیے خرید رہا ہے، گزشتہ ایک سال سے نیٹو نے روس کی جاسوسی مزید بڑھا دی ہے، روسی فضائیہ کے مطابق ایک سال میں نیٹو نے روسی سرحد پر 2900 لڑاکا طیاروں کی پروازیں کیں اور 1100 جاسوس طیارے اڑائے گئے، جن میں سے متعدد نے حدود کی خلاف ورزی کی، جس پر روس فوج نے انہیں حدود سے باہر دھکیلا۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us