ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

کووڈ-19 وائرس سورج کی روشنی میں 8 گناء تیزی سے غیرمتحرک ہو جاتا: تحقیق

کورونا ماہرین نے سورج کی روشنی کا وائرس کے خلاف امید سے زیادہ مؤثر ہونے کا دعویٰ کیا ہے جسے اب وائرس کی برطانوی قسم کے خلاف بطور دوا استعمال کیے جانے پر غور کیا جا رہا ہے۔ ماہرین کے مطابق کورونا وائرس سورج کی روشنی میں مفروضات سے بھی 8 گناء زیادہ رفتار سے غیر متحرک ہو جاتا ہے۔

ماہرین نے سورج اور اس میں موجود شعاعوں کا مطالعہ کیا تو اسے وائرس کے خلاف بہت مؤثر پایا۔ جولائی 2020 میں ماہرین نے وائرس پر الٹراوائلٹ روشنی کے اثرات کا مطالعہ شروع کیا تھا، جس میں سامنے آیا کہ وائرس 20 منٹ میں غیر متحرک ہو جاتا ہے، اس سے ماہرین نے اخذ کیا کہ سورج کی روشنی کے حوالے سے کووڈ-19 وائرس انفلوئنزہ وائرس سے بھی زیادہ حساس ہے۔

ماہرین کا مفروضہ ہے کہ کیونکہ الٹراوائلٹ سی کی شعاعیں تو اوزون کی وجہ سے زمین تک نہیں پہنچ سکتیں لہٰذا الٹراوائلٹ اے کی لمبی لہر والی شعاعیں ہی وائرس کے آر این اے کے پیداواری ماحول یعنی تھوک پر اثرانداز ہوتی ہیں اور وائرس کو غیر متحرک کر دیتی ہیں۔ ماہرین نے وائرس کی جانب سے ایسا ہی رویہ نکاسی کے پانی میں بھی درج کیا ہے۔

مطالعہ میں یہ بھی دیکھنے میں آیا ہے کہ وائرس گرمیوں میں سردیوں کی نسبت زیادہ جلدی غیر متحرک ہوتا ہے۔ ماہرین اس کی وجوہات تلاش کرنے کی کوشش میں ہیں۔

ماہرین نے طبی عملے کو ہوا کی صفائی اور دیگر عمومی استعمال والے آلات میں الٹراوائلٹ اے کی شعاعوں والی روشنی کے بلب لگانے کی تجویز دی ہے۔ واضح رہے کہ الٹروائلٹ روشنی عام آنکھ سے دیکھی نہیں جا سکتی، اور اسے مصنوعی طریقے سے آسانی سے پیدا بھی کیا جا سکتا ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us