منگل, جولائی 27 Live
Shadow
سرخیاں
لبنان میں سیاسی بحران و معاشی بدحالی: ارب پتی کاروباری شخصیت اور سابق وزیراعظم نجیب میقاطی حکومت بنانے میں کامیاب، فرانسیسی منصوبے کے تحت ملک کو معاشی بدحالی سے نکالنے کا اعلانجنگی جہازوں کی دنیا میں جمہوری انقلاب: روس نے من چاہی خوبیوں کے مطابق جدید ترین جنگی جہاز تیار کرنے کی صلاحیت کا اعلان کر دیا، چیک میٹ نامی جہاز ماکس-2021 نمائش میں پیشکیوبا میں کورونا اور تالہ بندی کے باعث معاشی حالات کشیدہ: روس کا خوراک، ماسک اور ادویات کا بڑا عطیہ، پریشان شہریوں کے انتظامیہ اور امریکی پابندیوں کے خلاف بڑے مظاہرےچینی معاملات میں بیرونی مداخلت ایسے ہی ہے جیسے چیونٹی کی تناور درخت کو گرانے کی کوشش: چین نے سابق امریکی وزیر تجارت سمیت 6 افراد پر جوابی پابندیاں عائد کر دیںمغربی یورپ میں کورونا ویکسین کی لازمیت کے خلاف بڑے مظاہرے، پولیس کا تشدد، پیرس و لندن میدان جنگ بن گئے: مقررین نے ویکسین کو شیطانی ہتھیار قرار دے دیا – ویڈیوجرمنی: پولیس نے بچوں اور جانوروں سے جنسی زیادتی کی ویڈیو آن لائن پھیلانے والے 1600 افراد کا جال پکڑ لیا، مجرمانہ مواد کی تشہیر کیلئے بچوں کے استعمال کا بھی انکشافگوشت کا تبادلہصدر بائیڈن افغانستان سے انخلا پر میڈیا کے کڑے سوالوں کا شکار: کہا، امارات اسلامیہ افغانستان ۱ طاقت ضرور ہے لیکن ۳ لاکھ غنی افواج کو حاصل مدد کے جواب میں طالبان کچھ نہیں، تعاون جاری رکھا جائے گاامریکہ، برطانیہ اور ترکی کا مختلف وجوہات کے بہانے کابل میں 1000 سے زائد فوجی تعینات رکھنے کا عندیا: امارات اسلامیہ افغانستان کی معاہدے کی خلاف ورزی پر نتائج کی دھمکیچینی خلا بازوں کی تیانگونگ خلائی اسٹیشن سے باہر نکل کر خلا میں چہل قدمی – ویڈیو

پاکستان: کورونا تالہ بندی پر عملدرآمد کے لیے فوج طلب

حکومت پاکستان نے ملک میں کرونا کے بڑھتے ہوئے واقعات پر قابو پانے کے لئے ملک کے  16 بڑے شہروں میں فوج کو کو طلب کر لیا ہے۔ اعلیٰ حکومتی عہدے دار کا کہنا ہے کہ وائرس کے بڑھتے ہوئے واقعات پر قابو پانے اور صحت کے نظام پر دباؤ کم کرنے کے پیش نظر حکومت نے یہ فیصلہ کیا ہے۔

فوج کے ترجمان میجر جنرل بابر افتخار نے پیر کو صحافیوں سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ فوج شہریوں کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے پاکستان کے کونے کونے میں جائے گی۔ ان کے بقول اس تعیناتی کا بنیادی مقصد پولیس کی مدد کرنا ہے۔

سرکاری اعدادوشمار کے مطابق پاکستان میں اس وقت کرونا کے 90 ہزارمریض موجود ہیں، جن میں سے 4300 کے قریب افراد تشویشناک حالت میں ہیں، جبکہ 570 وینٹیلیٹروں پرہیں۔ 22 کروڑ آبادی والے ملک میں فی الحال روزانہ لگ بھگ 5500 مریض متاثر ہو رہے ہیں، اور 130 کی موت واقع ہو رہی ہے۔ یاد رہے کہ یہ تعداد 2020 میں پہلی لہر کے عروج کے برابر ہے۔

کورونا کے مثبت مریضوں کی شرح 51 شہروں میں 5 فیصد سے زیادہ کی حد کو چھو رہی ہے، جبکہ 16 شہروں میں یہ شرح اس سے بھی زیادہ ہے۔

اطلاعات کے مطابق فی الحال زیادہ متاثرہ شہروں میں ہی فوج طلب کی گئی ہے۔ ان شہروں میں دارالحکومت اسلام آباد کے علاوہ پنجاب سے راولپنڈی، لاہور، فیصل آباد، ملتان، بہاولپور اور گوجرانوالہ شامل ہیں جبکہ سندھ سے کراچی اور حیدرآباد کو حساس قرار دیا گیا ہے۔ صوبہ خیبر پختونخوا سے پشاور، مردان، نوشہرہ، چارسدہ اور صوابی، جبکہ بلوچستان میں کوئٹہ اور آزاد جموں و کشمیر کے شہر مظفرآباد میں فوج سول انتظامیہ کی مدد کرے گی۔

ملک بھر میں طبی عملے نے فیصلے کا خیرمقدم کیا ہے، اور سختی سے اس پر عملدرآمد کی درخواست کی ہے۔

واضح رہے کہ سماجی حلقوں کی جانب سے یومیہ اجرت پر کام کرنے والے افراد کے حوالے سے تحفطات کا اظہار کیا جا رہا ہے، تاہم حکومت خوف میں مبتلا ہے کہ اگر ہمسایہ ملک ہندوستان جیسی صورتحال پیش آگئی تو ملک کو مکمل بند کرنا پڑ سکتا ہے، لہٰذا بنیادی حفاظتی اصولوں پر عملدرآمد کروا کر صورتحال کو منظم کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ہندوستان میں 352،991 نئے متاثرین سامنے آئے ہیں اور 2812 اموات درج کی گئی ہیں، جبکہ ہندوستان نے بھی مختلف شہروں میں فوج طلب کر رکھی ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us