ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

کورونا سے متعلق مبینہ غلط معلومات پھیلانے کے الزام پر فیس بک نے آسٹریلوی رکن پارلیمان کا مصدقہ صفحہ خذف کر دیا: اقدام آسٹریلوی جمہوریت پر حملہ ہے، رکن پارلیمان کا ردعمل

فیس بک نے ایک بار پھر متعصب رویے اور طاقت کا بے جا استعمال کرتے ہوئے ایک اور اہم شخصیت کا صفحہ خذف کر دیا ہے۔امریکی سماجی میڈیا ویب سائٹ کا اگلا ہدف آسڑیلوی رکن پارلیمان کریگ کیلی بنے ہیں جن کا سماجی رابطے کا مصدقہ صفحے کو خذف کر دیا گیا ہے۔ فیس بک کا مؤقف ہے کہ کریگ کیلی کرونا وباء سے متعلق غلط معلومات پھیلانے کے مرتکب ہوئے ہیں۔

فیس بک کے اقدام پر اپنے ردعمل میں مذکورہ آزاد رکن پارلیمان نے کہا ہے کہ یہ امریکی سوشل میڈیا کمپنی کی طرف سے آسٹریلیا کی جمہوریت پر حملہ ہے۔ کیلی کے مطابق انہیں پیر کی صبح فیس بک کی پابندی حوالے سے آگاہ کیا گیا۔ انہوں نے اس اقدام کو آزادی اظہار پر حملہ اور “زبان بندی” قرار دیا اور کہا کہ رکن پارلیمان کے 86 ہزار پیروکار والے مصدقہ صفحے کو کسی غیر ملکی نجی کمپنی کی جانب سے اچانک خذف کیا جانا “آسٹریلوی نظام میں مداخلت” کےمترادف ہے۔

واضح رہے کہ کیلی کا ذاتی کھاتہ اور انسٹاگرام کھاتہ تاحال متحرک ہیں، اور صرف سرکاری مصدقہ صفحے کو خذف کیا گیا ہے۔

 فیس بک کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ آسٹریلوی رکن پارلیمان نے “بار بار” ان کی پالیسیوں کی خلاف ورزی کی ہے۔ ترجمان نے کہا، “ہم منتخب عہدیداروں سمیت کسی کو بھی کوڈ 19 کے بارے میں غلط معلومات پھیلانے کی اجازت نہیں دیتے۔

فیس بک نے دسمبر 2020 میں اعلان کیا تھا کہ وہ کووڈ 19 کے بارے میں کسی بھی ایسی رائے کو غلط تصور کرے گی جسے عالمی ادارہ صحت کی توثیق حاصل نہ ہو، لبرل سماجی میڈیا پالیسی پر دنیا سے سخت تنقید کی گئی لیکن فیس بک تاحال اس پر بضد ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us