اتوار, اکتوبر 17 Live
Shadow
سرخیاں
آؤکس بین الاقوامی سیاست میں کشیدگی و عدم استحکام بڑھانے اور اسلحے کی نئی دوڑ کا باعث ہو گا: چین اور مشرقی ممالک کے خلاف مغرب کے نئے عسکری اتحاد پر روسی ردعملایف بی آئی نے خفیہ کارروائی میں جوہری آبدوز ٹیکنالوجی بیچتے دو فوجی انجینئر گرفتار کر لیےامریکہ مصنوعی ذہانت، سائبر سکیورٹی اور دیگر جدید ٹیکنالوجیوں میں چین سے 15/20 سال پیچھے ہے: پینٹاگون سافٹ ویئر شعبے کے حال ہی میں مستعفی ہونے والے سربراہ کا تہلکہ خیز انٹرویوروسی محققین کووڈ-19 کے خلاف دوا دریافت کرنے میں کامیاب: انسانوں پر تجربات شروعسابق افغان وزیردفاع کے بیٹے کی امریکہ میں 2 کروڑ ڈالر کے بنگلے کی خریداری: ذرائع ابلاغ پر خوب تنقیدہمارے پاس ثبوت ہیں کہ فرانسیسی فوج ہمارے ملک میں دہشت گردوں کو تربیت دے رہی ہے: مالی کے وزیراعظم مائیگا کا رشیا ٹوڈے کو انٹرویوعالمی قرضہ 300کھرب ڈالر کی حدود پار کر کے دنیا کی مجموعی پیداوار سے بھی 3 گناء زائد ہو گیا: معروف معاشی تحقیقی ادارے کی رپورٹ میں تنبیہامریکہ میں رواں برس کورونا وائرس سے مرنے والوں کی تعداد 2020 سے بھی بڑھ گئی: لبرل امریکی میڈیا کی خاموشی پر شہری نالاں، ریپبلک کا متعصب میڈیا مہم پر سوالکورونا ویکسین بیچنے والی امریکی کمپنی کے بانیوں اور سرمایہ کار کا نام امریکہ کے 225 ارب پتیوں کی فہرست میں شامل: سماجی حلقوں کی جانب سے کڑی تنقیدامریکی جاسوس ادارے سی آئی اے کو دنیا بھر میں ایجنٹوں کی شدید کمی کا سامنا، ایجنٹ مارے جانے، پکڑے جانے، ڈبل ایجنٹ بننے، لاپتہ ہونے کے باعث مسائل درپیش، اسٹیشنوں کو بھرتیاں تیز کرنے کا بھی حکم: نیو یارک ٹائمز

کورونا سے بچنے کیلئے گائے کے گوبر اور پیشاب کا استعمال جانوروں سے مزید بیماریوں کے پھیلنے کا باعث بن سکتا: ہندوستانی طبی عملے کی ہندوؤں سے ایسے طریقوں سے بچنے کی درخواست

انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن کے سربراہ نے ہندو شہریوں کو کوڈ-19 سے بچنے کے لیے جسم پر گائے کا گوبر ملنے سے منع کیا ہے۔ انکا کہنا تھا کہ ملک میں کورونا کے مریضوں کی تعداد گزشتہ سات روز کی نئی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے، جہاں گزشتہ روز 3 لاکھ 90 ہزار 995  نئے مریضوں کا اندراج ہوا۔

 واضح رہے کہ ہندوستان پہلے ہی اسپتالوں میں آکسیجن فراہم کرنے میں ناکام جا رہا ہے ایسے میں ڈاکٹر متبادل علاج اور بچاؤ کے خلاف بھی بھرپور مہم چلا رہے ہیں، جو پورے ملک میں انتہائی تیزی سے مقبول ہورہے ہیں۔

ہندو سادھوؤں کا دعویٰ ہے کہ جلد پر گائے کا گوبر اور پیشاب کا مرکب ملنے اور اس کے خشک ہونے تک لگائے رکھنے اور پھر اسے دودھ یا چھاچھ سے دھونے سے انسان کورونا وائرس سے بچا  رہتا ہے۔

انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر جے اے جیالال نے منگل کو میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ گائے کے گوبر یا پیشاب کے بارے میں کوئی ٹھوس سائنسی ثبوت نہیں ملا ہے اور نہ ہی یہ کووڈ۔19 کے خلاف مدافعت  بڑھانے کا کام کرسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ عمل مکمل طور پر توہم پرستی پر مبنی ہے جس سے انسانی صحت کو دیگر خطرات لاحق ہو سکتے ہیں- ڈاکٹر جیالال نے شہریوں کو تنبیہ کی ہے کہ جانوروں سے انسانوں میں منتقل ہونے والی بیماریوں میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے،  شہریوں کو کسی ایسے عمل سے پرہیز کرنا چاہیے جو انکے ساتھ ساتھ دنیا کے لیے خطرے کا موجب بنے۔

واضح رہے کہ اعتقاد کے باعث بظاہر اعلیٰ تعلیم یافتہ ہندو بھی گاے کے گوبر اور پیشاب کے مرکب کے استعمال  کا مشورہ دینے سے نہیں تھکتے، ایسا ہی ایک واقعہ ایک بڑی دوا ساز کمپنی کے منیجر گوتم مانیلال بوریسا سے بھی منسوب ہے، جنہوں نے دعویٰ کیا ہے کہ انہیں گذشتہ سال کووڈ-19 سے  گائے کے گوبر اور پیشاب کے استعمال نے ہی بچایا۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ اس سے ان کی قوت مدافعت بہتر ہوتی ہے اور وہ بغیر کسی ہچکچاہٹ کے لوگوں کو اسکا مشورہ دیتے ہیں۔

مارچ میں، مدھیہ پردیش کی وزیر ثقافت اوشا ٹھاکر نے بھی دعویٰ کیا تھا کہ گھر میں گائے کے گوبر کے “ہاون” (جلانے کی رسم) سے کووڈ-19 کے وائرس کو 12 گھنٹے تک خود سے دور رکھا جا سکتا ہے۔

یاد رہے کہ ہندوؤں کے لیے جو کہ ہندوستان کی ایک ارب 30 کروڑ سے زائد آبادی کا 80 فیصد ہیں، گائے ایک مقدس جانور ہے اور اس سے حاصل اشیاء حتیٰ کہ گوبر اور پیشاب کو بھی کئی مذہبی رسومات میں استعمال کیا جاتا ہے۔ یہاں تک کہ گائے کا گوبر گھروں کو صاف کرنے اور پوجا پاٹ کی رسومات میں بھی استعمال کیا جاتا ہے۔

مارچ اور اپریل میں لاکھوں ہندو ہریدوار اور گنگا ندی پر اترے جہاں کنب میلہ کی یاترا منائی جارہی تھی۔ بھارت میں اس مذہبی تہوار کے بعد ہی کووڈ-19 کی نئی قسم اور اس سےمتاثر افراد کی تعداد میں بے قابو اضافہ ہوا۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us