پیر, جون 14 Live
Shadow
سرخیاں
ترکی: 20 ٹن سونا اور 5 ٹن چاندی کا نیا ذخیرہ دریافت، ملکی سالانہ پیداوار 42 ٹن کا درجہ پار کر گئی، 5 برسوں میں 100 ٹن تک لے جانے کا ارادہحکومت پنجاب کا ویکسین نہ لگوانے والوں کے موبائل سم کارڈ معطل کرنے کی پالیسی لانے کا فیصلہموساد کے سابق سربراہ کا ایرانی جوہری سائنسدان اور مرکز پر سائبر حملے کا اعترافی اشارہ: ایرانی سائنسدانوں کو منصوبہ چھوڑنے پر معاونت کی پیشکش کر دییورپی اشرافیہ و ابلاغی اداروں کے برعکس شہریوں کی نمایاں تعداد نے روس کو اہم تہذیبی شراکت دار و اتحادی قرار دے دیاروسی بحریہ نے سٹیلتھ ٹیکنالوجی سے لیس جدید ترین بحری جہاز کا مکمل نمونہ تیار کر لیا: مکمل جہاز آئندہ سال فوج کے حوالے کر دیا جائےگاٹویٹر کو نائیجیریا میں دوبارہ بحالی کیلئے مقامی ابلاغی اداروں کی طرح لائسنس لینا ہو گا، اندراج کروانا ہو گا: افریقی ملک کا امریکی سماجی میڈیا کمپنی کو دو ٹوک جواب، صدر ٹرمپ کی جانب سے پابندی پر ستائش کا بیانکاراباخ آزادی جنگ: جنگی قیدی چھڑوانے کے لیے آرمینی وزیراعظم کی آزربائیجان کو بیٹے کی حوالگی کی پیشکشمجھ پر حملے سائنس پر حملے ہیں: متنازعہ امریکی مشیر صحت ڈاکٹر فاؤچی کا اپنے دفاع میں نیا متنازعہ بیان، وباء سے شدید متاثر امریکیوں کے غصے میں مزید اضافہچین 3 سال کے بچوں کو بھی کووڈ-19 ویکسین لگانے والا دنیا کا پہلا ملک بن گیاایرانی رویہ جوہری معاہدے کی بحالی میں تعطل کا باعث بن سکتا ہے: امریکی وزیر خارجہ بلنکن

امریکی فوج میں بھرتی کے اشتہار میں علم نجوم کا پرچار: امریکی سخت نالاں

عالمی سطح پر لبرل اور مظاہر پرستوں کے مابین ہونے والے غیراعلانیہ اتحاد/ہم آہنگی کے اثرات بیشتر مغربی ممالک حتیٰ کہ انتظامیہ میں نمایاں نظر آنا شروع ہو گئے ہیں۔ ایسا ہی ایک مظاہرہ امریکی فوج میں بھرتی کے لیے شائع ایک اشتہار میں ہوا جس پر بیشتر مقامی حلقوں کی جانب سے سخت تنقید سامنے آئی ہے، جبکہ کچھ نے اسے مزاح کا نشانہ بنایا ہے۔

اشتہار میں کہا گیا تھا کہ

“کیا آپ کو معلوم ہے کہ آپ کا برج فوج میں کس قسم کا سپاہی بننے کا اشارہ کرتا ہے؟”

اشتہار کو شہریوں نے انتہائی ناپسند کیا ہے اور کہا ہے کہ انہیں حیرانگی ہے کہ دنیا کی بہترین فوج علم نجوم جیسے غیر سائنسی و دقیانوسی پر یقین رکھتی ہے۔

اشتہار پر تبصرے میں ڈیفینس-1 کے مدیر کیون بارون نے ایک طنزیہ مضمون چھاپا ہے۔ ایک اور صحافی نے اظہار خیال میں کہا ہے کہ میں انتظار میں رہا کہ انتظامیہ اس اشتہار کو غلطی/جعلی کہہ دے۔ ایک شہری نے شدید ناامیدی میں کہا کہ “یہ (اشتہار) اس بات کا ثبوت ہے کہ امریکہ پر قبضہ ہو چکا ہے۔” ایک شخص نے لکھا کہ؛ “اگر ہماری فوج کا معیار یہ ہو گیا ہے تو مجھے خوشی ہے کہ میں ریٹائر ہوگیا ہوں۔”

یاد رہے کہ گزشتہ مہینے بھی امریکی فوج کو ‘دی کالنگ’ کے نام سے بھرتی اشتہارات کے ایک سلسلے پر شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑا تھا، جس میں خصوصی طور پر خواتین اور اقلیتوں سے بھرتی کی امتیازی درخواست کی گئی تھی، جسے صدر بائیڈن کی تمام چیزوں میں مساوات کو فروغ دینے کی پالیسی کا آئینہ قرار دیا گیا تھا۔

بھرتی اشتہار میں ایما نامی خاتون دکھائی گئی تھی جو دو ماؤں، روسی اور چینی، کے ساتھ  بڑی ہوئی تھی، اشتہار پر ٹیکساس سے سینیٹر ٹیڈ کروز نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکی فوج انتہائی غیر محفوظ ہو چکی ہے۔ جس پر ڈیموکریٹ کے حامیوں نے ان پر روسی ایجنٹ اور پروپیگنڈا پھیلانے والے کا الزام عائد کیا تھا۔ سیکریٹری دفاع لوئڈ آسٹن نے بھی اسی طرح کے جذبات کا اظہار کیا تھا اور کہا تھا کہ اس طرح کی بات کو چین اور روس جیسے امریکی مخالفین ہی استعمال کرسکتے ہیں۔ آسٹن نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ فوج صحیح قسم کے لوگوں کی بھرتی کرنےکا ایک بہت بڑا کام کر رہی ہے، انہوں نے مزید کہا کہ ہم ریاستہائے متحدہ امریکہ کی نمائندگی کرتے ہیں۔ اور ہمیں امریکہ کی طرح ہی نظر آنا چاہئے، نہ صرف فوجی صفوں میں، بلکہ ہماری سیاسی قیادت کوبھی امریکہ کی طرح نظر آنا چاہیے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us