پیر, دسمبر 6 Live
Shadow
سرخیاں
امریکی سی آئی اے اہلکاروں کے ایک بار پھر کم عمر بچوں بچیوں کے ساتھ جنسی جرائم میں ملوث ہونے کا انکشافامریکہ کا مشرقی افریقہ میں تاریخ کے سب سے بڑے فوجی آپریشن کا اعلان: 1 ہزار سے زائد مزید کمانڈو تیارروسی صدر کی ثالثی: آزربائیجان اور آرمینیا کے مابین سرحدی جھڑپیں ختم، سرحدی حدود کے تعین پر اتفاق، جنگ سے متاثر آبادی اور دیگر انسانی حقوق کے تحفظ کی بھی یقین دہانینائیجیر: فرانسیسی فوج کی فائرنگ سے 2 شہری شہید، 16 زخمیامریکی فوج میں ہر 4 میں سے 1 عورت اور 5 میں سے 1 مرد جنسی زیادتی کا نشانہ بنتا ہے، بیشتر خود کشی کر لیتے، کورٹ مارشل کے خوف سے کوئی آواز نہیں اٹھاتا: سابقہ اہلکارروس کا غیر ملکی سماجی میڈیا کمپنیوں پر ملک میں کاروباری اندراج کے لیے دباؤ جاری: رواں سال کے آخر تک عمل نہ ہونے پر پابندی لگانے کا عندیاامریکہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی میں چین اور روس سے بہت پیچھے ہے: امریکی جنرل تھامپسنامریکی تفریحی میڈیا صنعت کس عقیدے، نظریے اور مقصد کے تحت کام کرتی ہے؟چوالیس فیصد امریکی اولاد پیدا کرنے کی خواہش نہیں رکھتے: پیو سروے رپورٹچینی کمپنی ژپینگ نے جدید ترین برقی کار جی-9 متعارف کر دی: بیٹری کے معیار اور رفتار میں ٹیسلا کو بھی پیچھے چھوڑ دیا

امریکہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی میں چین اور روس سے بہت پیچھے ہے: امریکی جنرل تھامپسن

امریکی خلائی فوج کے اعلیٰ عہدے دار جنرل ڈیوڈ تھامپسن نے اعتراف کیا ہے کہ ہائپر سونک میزائل ٹیکنالوجی میں امریکہ روس اور چین سے بہت پیچھے رہ گیا ہے۔ جنرل تھامپسن کے مطابق اس کمی کی وجہ امریکی انتظامیہ اور اس پر ہونے والے اخراجات ہیں۔

خلائی فوج کی کارروائیوں کے نائب سربراہ کا کہنا تھا کہ اگر ہائپر سونک ٹیکنالوجی کی بات کی جائے تو امریکہ چین اور روس سے بہت پیچھے ہیں۔ بین الاقوامی ہیلی فیکس سکیورٹی فورم سے خطاب میں جنرل تھامپسن کا کہنا تھا کہ ہمیں اس کمی کو پورا کرنے کے لیے تیزی دکھانا ہوگی۔

تھامپسن کا کہنا تھا کہ یہ تمام مسائل امریکی بیوروکریسی اور سرمایہ کاری کے حوالے سے غلط ترجیحات کے باعث درپیش ہیں۔ ہمیں سستی ترک کر کے، جوش دکھانا ہو گا، شروع میں اس حوالے سے بہت سی غلطیاں، اور رسک بھی ہے لیکن یہ وقت کی اہم ضرورت ہے۔

واضح رہے کہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی کو دفاع کے لیے انتہائی اہم اور حساس گردانا جارہا ہے، آواز کی رفتار سے بھی 5 گناء زیادہ تیز میزائل ریڈار اور دفاعی نظام وک بھی چکمہ دے سکتا ہے، جبکہ دوران پرواز سمت بدلنے کی صلاحیت اسے دشمن کے تمام منصوبے ناکام کرنے کی قوت سے بھی لیس کر دیتا ہے۔

امریکی اعلانات کے مطابق امریکہ 2023 تک دور تک وار کرنے والے ہائپر سونک میزائل تیار کرنے میں کامیاب ہو سکتا ہے، امریکی بحریہ کو یہ قوت دینے میں مزید 2 برس لگیں گے اور 2025 تک عملی طور پر امریکہ پوری طرح اس ٹیکنالوجی کا حامل ملک قرار پا سکتا ہے۔

روس نے گزشتہ ماہ ہائپر سونک کا تجربہ کر لیا ہے جبکہ چین نے رواں سال آگست میں اس میزائل کا تجربہ کیا ہے، جس نے امریکی انتظامیہ کی نیندیں حرام کی ہوئی ہیں۔ یاد رہے اس حوالے سے چین نے امریکی خبروں کی تردید کی ہے، لیکن امریکہ کو یقین ہے کہ چین نے اسی ٹیکنالوجی کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔

امریکی جنرل نے چین کو خلائی ٹیکنالوجی میں امریکہ سے کئی گناء آگے ہونے اور مستقبل میں اس سے بھرپور فائدہ اٹھانے کی حیثیت میں ہونے کا اعتراف بھی کیا ہے۔ جنرل تھامپسن کا مزید کہنا تھا کہ اگر انکی ترقی کی رفتار یہی رہی تو امریکہ اس دوڑ میں بہت پیچھے رہ جائے گا۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us