اتوار, April 10 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

برطانیہ شمالی آئرلینڈ کے ساتھ امن معاہدے کا پاس رکھے ورنہ آزاد تجارتی معاہدہ نہیں ہو گا: جو بائیڈن

امریکی صدارتی امیدوار جو بائیڈن نے کہا ہے کہ اگر برطانیہ نے شمالی آئرلینڈ کے ساتھ امن معاہدے کا احترام نہ کیا تو امریکہ برطانیہ کے ساتھ تجارتی معاہدہ نہیں کرے گا۔

دوسری جانب برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کا کہنا ہے کہ شمالی آئرلینڈ میں امن لانے والے معاہدے کو بریگزٹ کے لیے قربانی کا بکرا نہیں بننے دیں گے۔ امریکہ اور برطانیہ میں آزاد تجارتی معاہدے کا شمالی آئرلینڈ سے سرحدی پیچیدگی کا کوئی تعلق نہیں ہونا چاہیے۔

برطانوی وزیراعظم نے یورپی اتحاد کو بھی مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ میز پر پستول رکھ کر بات نہ کرے، ہماری سرحدی پیچیدگی کا ناجائز فائدہ اٹھانے کی کسی کو اجازت نہیں دیں گے۔

واضح رہے کہ بریگزٹ نے شمالی آئرلینڈ اور برطانیہ کے مابین 1998 میں ہوئے امن معاہدے میں نئی پیچیدگیاں پیدا کر دی ہیں۔ معاہدے کے تحت دونوں ممالک نے ایک دوسرے کو قبول کرتے ہوئے، یورپی اتحاد کا حصہ ہونے کے تحت سرحدوں کو ایک دوسرے کے لیے کھول دیا تھا، تاہم اب بریگزٹ ہو جانے کے بعد اگر شمالی آئرلینڈ برطانیہ کے ساتھ سرحدوں کو کھلا رکھتا ہے تو عملی طور پر برطانیہ کا بریگزٹ نہیں ہو گا، کیونکہ یورپی اتحادی ممالک کے شہری باآسانی براستہ شمالی آئرلینڈ برطانیہ سفر کر سکیں گے، اور برطانوی شہری براستہ شمالی آئرلینڈ یورپی ممالک جا سکیں گے۔ لہٰذا اب یا تو شمالی آئرلینڈ سرحد کو بند کر کے یورپی اتحاد میں شمولیت کو جاری رکھ سکتا ہے یا پھر برطانیہ کو نئی پیشکشوں کے ساتھ شمالی آئرلینڈ کو رام کرنا ہے۔

پر یہاں یہ بھی یاد رہے کہ شمالی آئرلینڈ کی بڑی تعداد یورپی اتحاد کے ساتھ رہتے ہوئے برطانیہ سے سرحد کو بند کرنا چاہتی ہے، تاہم یہ برطانیہ کو قبول نہیں، کیونکہ اس سے سیاسی و علاقائی صورتحال دوبارہ امن معاہدے سے پہلے کی شکل اختیار کر سکتی ہے۔

یہی پیچیدہ صورتحال امریکہ اور یورپی اتحاد کو موقع دے رہی کہ وہ برطانیہ سے من چاہی شرائط پر بات کریں۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us