ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

چینی صدر کا کورونا کے خلاف جی-20 اجلاس میں عالمی کیوآر-کوڈ نظام متعارف کروانے کا مشورہ: مغرب میں نجی معلومات کو درپیش خطرے کے باعث سخت تنقید

چینی صدر ژی جن پنگ نے جی-20 اجلاس میں عالمی صحت کیو آر کوڈ متعارف کروانے کا مشورہ دیا ہے۔ چینی صدر کا کہنا تھا کہ اس سے کورونا سے متاثرہ بین الاقوامی تجارت اور انفرادی سفری سہولیات کو بحال کرنے میں مدد ملے گی۔ دنیا بھرمیں متعدد صنعتیں خام مال وقت پر نہ ملنے اور تیار مال کی ترسیل رکنے سے بند ہو رہی ہیں، صحت بار کوڈ کے عالمی سطح پر اپنانے سے تجارت اور محفوظ سفری نقل و حرکت بحال کرنے میں مدد ملے گی۔

چینی صدر کا مزید کہنا تھا کہ تمام ممالک کو چُنگی ٹیکس بھی کم کرنا چاہیے اور مارکیٹوں کو آزاد تجارت کے لیے کھول دینا چاہیے، صدر ژی جن پنگ نے صحت کے شعبے میں انقلابی اقدامات اٹھانے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔

واضح رہے کہ چین کا متعارف کردہ صحت بار کوڈ نیوکلک ایسڈ ٹیسٹ کی بنیاد پر کام کرتا ہے، جو چین میں پہلے ہی ایک آن لائن ایپلیکیشن کی مدد سے انفرادی صحت کی معلومات مہیا کرتا ہے۔ اس سے افراد کی نقل وحرکت اور ملاقاتوں کی تفصیل کے ذریعے عمومی معاشرے کو محفوظ رکھنے میں مدد مل رہی ہے۔ چین کا ماننا ہے کہ جلد دیگر ممالک بھی اس نظام کو اپنا لیں گے تاہم چین کی رائے میں اسے عالمی سطح پر مشترکہ طور پر اپنانے سے کورونا سے نمٹنے میں آسانی اور حالات کو سنبھالنے میں مدد ملے گی۔ یاد رہے کہ کیو آر کوڈ کی بنیاد پر صحت پاسپورٹ نامی ایپلیکیشن کو عالمی اقتصادی فورم کے اجلاس میں بھی استعمال کیا جا چکا ہے۔

صدر ژی جن پنگ کے مشورے کے بعد عالمی سطح پر ایک بار پھر کورونا صحت سرٹیفکیٹ کی بحث شروع ہو گئی ہے، اور اس کے حق اور مخالفت میں زور و شور سے مہم چلائی جا رہی ہے۔

ناقدین کا کہنا ہے کہ اس سے لوگوں کی نجی زندگی میں مداخلت اور انکی کام کرنے کی صلاحیت پر سوال اٹھیں گے۔ چند روز قبل برطانوی سیکرٹری برائے صحت کے کورونا صحت کارڈ کو آزادی کارڈ کے نام سے متعارف کروانے کا بیان دیا تو اسے عوام کی طرف سے غلامی کارڈ کے نام سے رد کر دیا گیا۔ شہریوں کا کہنا ہے کہ حکومت جبر کے نظام کو اپنا رہی ہے، جسے قطعاً قبول نہیں کیا جائے گا۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us