اتوار, نومبر 28 Live
Shadow
سرخیاں
نائیجیر: فرانسیسی فوج کی فائرنگ سے 2 شہری شہید، 16 زخمیامریکی فوج میں ہر 4 میں سے 1 عورت اور 5 میں سے 1 مرد جنسی زیادتی کا نشانہ بنتا ہے، بیشتر خود کشی کر لیتے، کورٹ مارشل کے خوف سے کوئی آواز نہیں اٹھاتا: سابقہ اہلکارروس کا غیر ملکی سماجی میڈیا کمپنیوں پر ملک میں کاروباری اندراج کے لیے دباؤ جاری: رواں سال کے آخر تک عمل نہ ہونے پر پابندی لگانے کا عندیاامریکہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی میں چین اور روس سے بہت پیچھے ہے: امریکی جنرل تھامپسنامریکی تفریحی میڈیا صنعت کس عقیدے، نظریے اور مقصد کے تحت کام کرتی ہے؟چوالیس فیصد امریکی اولاد پیدا کرنے کی خواہش نہیں رکھتے: پیو سروے رپورٹچینی کمپنی ژپینگ نے جدید ترین برقی کار جی-9 متعارف کر دی: بیٹری کے معیار اور رفتار میں ٹیسلا کو بھی پیچھے چھوڑ دیاماحولیاتی تحفظ کی مہم کیوں ناکام ہے؟: کینیڈی پروفیسر نے امیر مغربی ممالک کو زمہ دار ٹھہرا دیااتحادیوں کو اکیلا نہیں چھوڑا جائے گا، تحفظ ہر صورت یقینی بنائیں گے: امریکی وزیردفاعروس اس وقت آزاد دنیا کا قائد ہے: روسی پادری اعظم کا عیسائی گھرانوں کی امریکہ سے روس منتقلی پر تبصرہ

چینی صدر کا کورونا کے خلاف جی-20 اجلاس میں عالمی کیوآر-کوڈ نظام متعارف کروانے کا مشورہ: مغرب میں نجی معلومات کو درپیش خطرے کے باعث سخت تنقید

چینی صدر ژی جن پنگ نے جی-20 اجلاس میں عالمی صحت کیو آر کوڈ متعارف کروانے کا مشورہ دیا ہے۔ چینی صدر کا کہنا تھا کہ اس سے کورونا سے متاثرہ بین الاقوامی تجارت اور انفرادی سفری سہولیات کو بحال کرنے میں مدد ملے گی۔ دنیا بھرمیں متعدد صنعتیں خام مال وقت پر نہ ملنے اور تیار مال کی ترسیل رکنے سے بند ہو رہی ہیں، صحت بار کوڈ کے عالمی سطح پر اپنانے سے تجارت اور محفوظ سفری نقل و حرکت بحال کرنے میں مدد ملے گی۔

چینی صدر کا مزید کہنا تھا کہ تمام ممالک کو چُنگی ٹیکس بھی کم کرنا چاہیے اور مارکیٹوں کو آزاد تجارت کے لیے کھول دینا چاہیے، صدر ژی جن پنگ نے صحت کے شعبے میں انقلابی اقدامات اٹھانے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔

واضح رہے کہ چین کا متعارف کردہ صحت بار کوڈ نیوکلک ایسڈ ٹیسٹ کی بنیاد پر کام کرتا ہے، جو چین میں پہلے ہی ایک آن لائن ایپلیکیشن کی مدد سے انفرادی صحت کی معلومات مہیا کرتا ہے۔ اس سے افراد کی نقل وحرکت اور ملاقاتوں کی تفصیل کے ذریعے عمومی معاشرے کو محفوظ رکھنے میں مدد مل رہی ہے۔ چین کا ماننا ہے کہ جلد دیگر ممالک بھی اس نظام کو اپنا لیں گے تاہم چین کی رائے میں اسے عالمی سطح پر مشترکہ طور پر اپنانے سے کورونا سے نمٹنے میں آسانی اور حالات کو سنبھالنے میں مدد ملے گی۔ یاد رہے کہ کیو آر کوڈ کی بنیاد پر صحت پاسپورٹ نامی ایپلیکیشن کو عالمی اقتصادی فورم کے اجلاس میں بھی استعمال کیا جا چکا ہے۔

صدر ژی جن پنگ کے مشورے کے بعد عالمی سطح پر ایک بار پھر کورونا صحت سرٹیفکیٹ کی بحث شروع ہو گئی ہے، اور اس کے حق اور مخالفت میں زور و شور سے مہم چلائی جا رہی ہے۔

ناقدین کا کہنا ہے کہ اس سے لوگوں کی نجی زندگی میں مداخلت اور انکی کام کرنے کی صلاحیت پر سوال اٹھیں گے۔ چند روز قبل برطانوی سیکرٹری برائے صحت کے کورونا صحت کارڈ کو آزادی کارڈ کے نام سے متعارف کروانے کا بیان دیا تو اسے عوام کی طرف سے غلامی کارڈ کے نام سے رد کر دیا گیا۔ شہریوں کا کہنا ہے کہ حکومت جبر کے نظام کو اپنا رہی ہے، جسے قطعاً قبول نہیں کیا جائے گا۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us