اتوار, نومبر 28 Live
Shadow
سرخیاں
نائیجیر: فرانسیسی فوج کی فائرنگ سے 2 شہری شہید، 16 زخمیامریکی فوج میں ہر 4 میں سے 1 عورت اور 5 میں سے 1 مرد جنسی زیادتی کا نشانہ بنتا ہے، بیشتر خود کشی کر لیتے، کورٹ مارشل کے خوف سے کوئی آواز نہیں اٹھاتا: سابقہ اہلکارروس کا غیر ملکی سماجی میڈیا کمپنیوں پر ملک میں کاروباری اندراج کے لیے دباؤ جاری: رواں سال کے آخر تک عمل نہ ہونے پر پابندی لگانے کا عندیاامریکہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی میں چین اور روس سے بہت پیچھے ہے: امریکی جنرل تھامپسنامریکی تفریحی میڈیا صنعت کس عقیدے، نظریے اور مقصد کے تحت کام کرتی ہے؟چوالیس فیصد امریکی اولاد پیدا کرنے کی خواہش نہیں رکھتے: پیو سروے رپورٹچینی کمپنی ژپینگ نے جدید ترین برقی کار جی-9 متعارف کر دی: بیٹری کے معیار اور رفتار میں ٹیسلا کو بھی پیچھے چھوڑ دیاماحولیاتی تحفظ کی مہم کیوں ناکام ہے؟: کینیڈی پروفیسر نے امیر مغربی ممالک کو زمہ دار ٹھہرا دیااتحادیوں کو اکیلا نہیں چھوڑا جائے گا، تحفظ ہر صورت یقینی بنائیں گے: امریکی وزیردفاعروس اس وقت آزاد دنیا کا قائد ہے: روسی پادری اعظم کا عیسائی گھرانوں کی امریکہ سے روس منتقلی پر تبصرہ

کووڈ-19 کی ویکسین لگوانا گناہ نہیں: برطانوی کیتھولک کلیسے کا ویکسین کی حمایت میں بیان جاری

برطانوی کیتھولک کلیسے نے عوام میں ابھرنے والی ایسی تمام افواہوں کی تردید کی ہے جن میں کووڈ-19 ویکسین کو عیسائیت کی مذہبی تعلیمات کے خلاف قرار دیا جا رہا ہے۔

کیتھولک پادری کی جانب سے بروز جمعرات جاری کی جانے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ کلیسا ویکسین کی پوری حمایت کرتا ہے۔

فتوے میں کلیسے نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ وباء کی ہلاکت خیزیوں کو ہم دیکھ چکے ہیں، اور یہ جواز ویکسین لگوانے پر گناہ نہ ہونے کے لیے کافی ہے۔

برطانوی سماجی میڈیا پر کچھ عرصے سے یہ افواہیں سرگرم ہیں کہ جامعہ آکسفورڈ اور ملحقہ تحقیقی اداروں نے ویکسین بنانے میں اسقاط حمل سے ضائع کردہ بچوں کے خلیوں کو استعمال کیا ہے۔

کیتھولک پادری نے اپنے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ دوا بنانے کے مراحل اور چاہتے ہوئے کوئی گناہ کرنے میں اخلاقی فرق ہوتا ہے۔ ہم پر پہلے یہ فرض ہے کہ ہم ایک دوسرے کو بیماری، اس کے خوف اور موت سے بچائیں، اور کیونکہ ویکسین ایسا کرنے میں اب تک سب سے مؤثر علاج ہے، اس لیے تمام کیتھولک عیسائیوں کو خود کو مذہبی فلسفے سے آگاہ رکھتے ہوئے اپنے فیصلے کرنے چاہیے، آپ یا تو خود کو سماج سے الگ کر لیں یا ویکسین لگوائیں۔

واضح رہے کہ برطانوی کلیسے سے جاری کردہ بیان حکومت کے ویکسین لگانے کے عمل کو شروع کرنے سے ایک ہفتہ پہلے آیا ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us