منگل, دسمبر 7 Live
Shadow
سرخیاں
امریکی سی آئی اے اہلکاروں کے ایک بار پھر کم عمر بچوں بچیوں کے ساتھ جنسی جرائم میں ملوث ہونے کا انکشافامریکہ کا مشرقی افریقہ میں تاریخ کے سب سے بڑے فوجی آپریشن کا اعلان: 1 ہزار سے زائد مزید کمانڈو تیارروسی صدر کی ثالثی: آزربائیجان اور آرمینیا کے مابین سرحدی جھڑپیں ختم، سرحدی حدود کے تعین پر اتفاق، جنگ سے متاثر آبادی اور دیگر انسانی حقوق کے تحفظ کی بھی یقین دہانینائیجیر: فرانسیسی فوج کی فائرنگ سے 2 شہری شہید، 16 زخمیامریکی فوج میں ہر 4 میں سے 1 عورت اور 5 میں سے 1 مرد جنسی زیادتی کا نشانہ بنتا ہے، بیشتر خود کشی کر لیتے، کورٹ مارشل کے خوف سے کوئی آواز نہیں اٹھاتا: سابقہ اہلکارروس کا غیر ملکی سماجی میڈیا کمپنیوں پر ملک میں کاروباری اندراج کے لیے دباؤ جاری: رواں سال کے آخر تک عمل نہ ہونے پر پابندی لگانے کا عندیاامریکہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی میں چین اور روس سے بہت پیچھے ہے: امریکی جنرل تھامپسنامریکی تفریحی میڈیا صنعت کس عقیدے، نظریے اور مقصد کے تحت کام کرتی ہے؟چوالیس فیصد امریکی اولاد پیدا کرنے کی خواہش نہیں رکھتے: پیو سروے رپورٹچینی کمپنی ژپینگ نے جدید ترین برقی کار جی-9 متعارف کر دی: بیٹری کے معیار اور رفتار میں ٹیسلا کو بھی پیچھے چھوڑ دیا

روس نے ناوالنے کے حق میں مظاہروں میں شرکت پر 3 یورپی ممالک کے سفارتی عملے کو ملک سے نکال دیا

روس نے 3 یورپی اقوام کے سفارتی عملے کے سفارتی دستاویزات منسوخ کر دیے ہیں۔ جرمنی، پولینڈ اور سویڈن کے سفارت خانوں کے عملے نے مبینہ طور پر روسی حزب اختلاف کے رہنما الیکژے ناوالنے کے حق میں ہونے والے مظاہروں میں حصہ لیا تھا، جس پر روس نے اسے اندرونی معاملات میں مداخلت گردانتے ہوئے سفارتی عملے کے دستاویزات منسوخ کر دیے ہیں، روس نے مظاہروں میں حصہ لینے والے سفارتی عملے کو ناپسندیدہ شخصیات قرار دیتے ہوئے فوری روسی سرزمین سے نکل جانے کی ہدات بھی کی ہے۔ اس کے علاوہ متعلقہ سفارت خانوں کو اپنا احتجاجی مراسلہ بھی ارسال کیا ہے۔

واضح رہے کہ روس یورپی اقوام کو مسلسل تنبیہ کرتا رہا ہے کہ ناوالنے کو لے کر اندرونی سیاست میں مداخلت نہ کی جائے، جسے عدالت نے باقائدہ کارروائی کے بعد ساڈھے تین سال کی سزا سنائی ہے۔ ترجمان روسی دفتر خارجہ ماریا زاخارووا نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ ہر کسی کو اپنے مسائل پہ توجہ دینی چاہیے، اور خودمختار اقوام کے اندرونی معاملات میں مداخلت کرنے سے باز رہنا چاہیے، ورنہ ہر کسی کے پاس اندرونی سطح پر بہت سے مسائل موجود ہوتے ہیں۔ ماریا زاخارووا کا مزید کہنا تھا کہ سویڈن کے سفارت کار نے مظاہروں میں شرکت کر کے ایک بُری مثال قائم کی۔

سویڈن کے سفارت خانے نے روسی الزامات کی تردید کی ہے، سفارت خانے نے اپنے وضاحتی بیان میں کہا ہے کہ سفارت کار سینٹ پیٹرزبرگ کے مظاہرے میں شریک نہیں تھا بلکہ صرف اسے دیکھنے کی غرض سے گیا تھا، جو کہ ایک عمومی سفارتی عمل ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us