ہفتہ, جنوری 15 Live
Shadow
سرخیاں
قازقستان ہنگامے: مشترکہ تحفظ تنظیم کے سربراہ کا صورتحال پر قابو کا اعلان، امن منصوبے کی تفصیلات پیش کر دیںبرطانوی پارلیمنٹ میں منشیات کا استعمال: اسپیکر کا سونگھنے والے کتے بھرتی کرنے کا عندیاامریکی سی آئی اے اہلکاروں کے ایک بار پھر کم عمر بچوں بچیوں کے ساتھ جنسی جرائم میں ملوث ہونے کا انکشافامریکہ کا مشرقی افریقہ میں تاریخ کے سب سے بڑے فوجی آپریشن کا اعلان: 1 ہزار سے زائد مزید کمانڈو تیارروسی صدر کی ثالثی: آزربائیجان اور آرمینیا کے مابین سرحدی جھڑپیں ختم، سرحدی حدود کے تعین پر اتفاق، جنگ سے متاثر آبادی اور دیگر انسانی حقوق کے تحفظ کی بھی یقین دہانینائیجیر: فرانسیسی فوج کی فائرنگ سے 2 شہری شہید، 16 زخمیامریکی فوج میں ہر 4 میں سے 1 عورت اور 5 میں سے 1 مرد جنسی زیادتی کا نشانہ بنتا ہے، بیشتر خود کشی کر لیتے، کورٹ مارشل کے خوف سے کوئی آواز نہیں اٹھاتا: سابقہ اہلکارروس کا غیر ملکی سماجی میڈیا کمپنیوں پر ملک میں کاروباری اندراج کے لیے دباؤ جاری: رواں سال کے آخر تک عمل نہ ہونے پر پابندی لگانے کا عندیاامریکہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی میں چین اور روس سے بہت پیچھے ہے: امریکی جنرل تھامپسنامریکی تفریحی میڈیا صنعت کس عقیدے، نظریے اور مقصد کے تحت کام کرتی ہے؟

روسی ویکسین کورونا وائرس کی نئی 8 گنا زیادہ خطرناک برطانوی قسم کے خلاف بھی مؤثر: تحقیق

روسی محکمہ صحت کے اہلکاروں نے دعویٰ کیا ہے کہ روسی کورونا ویکسین سپوتنک-5 اور ایپی ویک کورونا ویکسین، وائرس کی نئی برطانوی قسم کے خلاف بھی مؤثر ہے۔ اہلکاروں کا کہنا ہے کہ انہوں نے روسی ویکسین لگوانے والے شہریوں کے خون پر وائرس کی نئی قسم کے حملے کا معائنہ کیا ہے اور پایا ہے کہ ویکسین نئی قسم کے خلاف بھی مؤثر ہے اور مریضوں میں اس کے خلاف بھی اینٹی باڈی پیدا ہو رہی ہیں۔

یاد رہے کہ کورونا کی نئی برطانوی قسم کے بارے میں طبی ماہرین کا ماننا ہے کہ نئی برطانوی قسم پہلی قسم سے 8 گنا زیادہ خطرناک ہے۔

روس پوٹربنازور ایجنسی کا کہنا ہے کہ سپوتنک-5 اور ایپی ویک کورونا ویکسین برطانوی کورونا وائرس کے خلاف بھی اتنا ہی مؤثر ہے جتنا عمومی سارس-کوو-2 کے خلاف مؤثر تھا۔

یاد رہے کہ روسی صدر ولادیمیر پوتن نے مغربی یورپ میں کورونا کی نئی قسم کی وجہ سے بدتر صورتحال کے باعث محققین کو وائرس کی نئی قسم پر تجربوں کا حکم دیا تھا، جس پر سائیبیریا کے ویکٹر انسٹیٹیوٹ نے تحقیق مکمل کرتے ہوئے ویکسین کے مؤثر ہونے کی تصدیق کر دی ہے۔

اس سے قبل دسمبر میں ویکسین کی 45 ہزار خوراکیں بنا کر اسے عوام الناس کے لیے مہیا کر دیا گیا تھا اور اب اسکی بڑے پیمانے پر پیداوار شروع کر دی گئی ہے۔

واضح رہے کہ دنیا بھر میں حکومتیں نئی قسم کے برطانوی وائرس کے باعث شدید پریشان ہیں اور وباء کے حوالے سے مزید سخت تالہ بندی کے قوانین متعارف کروائے جانے کے امکانات کا اظہار کیا جا رہا ہے، جبکہ طبی حلقے اس خوف کا اظہار بھی کر رہے ہیں کہ اس سے وباء کے خلاف لڑنے کی موجودہ کوششوں اور وسائل کے ضیاں کا بھی خطرہ ہے۔

یاد رہے کہ روسی سپوتنک-5 ویکسین دنیا کی پہلی مصدقہ اور رجسٹرڈ ویکسین تھی، جس کے تجربات دنیا کے 26 ممالک بشمول پاکستان کیے گئے تھے۔

جبکہ اب ویکسین کے نئی قسم کے وائرس کے خلاف مؤثر ہونے کی تصدیق روسی اور برطانوی ماہرین نے بھی کر دی ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us