ہفتہ, April 9 Live
Shadow
سرخیاں
افغانستان میں امریکی فوج کی جانب سے تشدد کی تربیت کے لیے بلوچی قیدی کو استعمال کرنے کا انکشافہندوستانی میزائل کا مبینہ غلطی سے پاکستانی حدود میں گرنے کا واقعہ: امریکہ کی طرف سے متعصب جبکہ چین کی جانب سے نصیحت آمیز ردعملمیٹا آسٹریلوی سیاستدانوں کو سائبر حملوں اور جھوٹی خبروں سے بچنے کی تربیت دے گییوکرین: مغربی ممالک سے آئے 180 سے زائد جنگجو ہوائی حملے میں ہلاک، روس کی مغربی ممالک کو تنبیہ، سب نشانے پر ہیں، چُن چُن کر ماریں گےاسرائیل پر تاریخ کا بڑا سائبر حملہ: وزیراعظم، وزارت داخلہ اور وزارت صیہونی بہبود کی ویب سائٹیں ہیک اور تلفروس اور یوکرین کے مابین جلد امن معاہدہ طے پا جائے گا: روسی مذاکرات کاریوکرینی مہاجرین کی تعداد 50 لاکھ سے بڑھ گئی: اقوام متحدہفیس بک اور انسٹاگرام کی شدید متعصب پالیسی کا اعلان: روسی صدر اور فوج کیخلاف نفرت اور موت کے پیغامات شائع کرنے کی اجازت، نتیجتاً مغربی ممالک میں آرتھوڈاکس کلیساؤں اور روسی کاروباروں پر حملوں کی خبریںترکی کا بھی روس کے ساتھ مقامی پیسے میں تجارت کرنے کا اعلانمغرب کے دوہرے معیار: دنیا پر روس سے تجارت پر پابندیاں، برطانیہ سمیت بیشتر مغربی ممالک روس سے گیس و تیل کی خریداری جاری رکھیں گے

کورونا وباء کے باعث علیحدگی اور معاشی بدحالی: روس میں نفسیاتی مسائل میں 30٪ تک اضافہ، 75٪ خواتین متاثر

روس میں کووڈ-19 کے باعث پیاروں کو کھونے اور وباء کے باعث معاشی صورتحال نے دیگر ممالک کی طرح روس میں بھی نفسیاتی مسائل میں شدید اضافہ کر دیا ہے۔ روسی مکمہ صحت کے مطابق شہریوں کی بڑی تعداد نے 2020 میں نفسیاتی ماہرین سے رجوع کیا ہے۔

مقامی اخبار نے محکمہ صحت کا حوالہ دیتے ہوئے ایک رپورٹ میں دعویٰ کیا ہے کہ ملک میں 2020 میں نفسیاتی ماہرین سے رجوع کرنے والوں میں ملک کے مختلف حصوں میں 10 سے 30 فیصد تک اضافہ ہوا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 2020 میں مارچ سے دسمبر کے دوران مزدوروں کے محکمہ برائے سماجی بہبود کے نفسیاتی ماہرین سے ٹیلی فون پر 71 ہزار شہریوں نے رابطہ کیا، جن میں سے 75 فیصد خواتین تھیں۔

اعدادوشمار کے مطابق ماسکو اور سینٹ پیرزبرگ ملک کے سب سے زیادہ متاثرہ شہروں میں ہیں جبکہ اورفا کا نمبر ان کے بعد آتا ہے۔ ماہرین نے وجوہات پر گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ اکیلا پن اور گھریلو جھگڑے مسائل کی بڑی وجہ ہیں۔ رپورٹ کے مطابق اس دوران جوانوں میں خودکشی کے واقعات میں بھی اضافہ ہوا ہے۔

طبی ماہرین کا ماننا ہے کہ علیحدگی جیسے غیر انسانی رویے اور معاشی بدحالی کے علاوہ کووڈ-19 خود بھی ذہنی تناؤ کی وجہ ہو سکتا ہے۔ اعدادوشمار کے مطابق کورونا سے صحت یاب ہونے والے 1/3 افراد نفسیاتی ماہرین سے رجوع کررہے ہیں۔

اس کے علاوہ طبی ماہرین انفیکشن کے مریضوں میں بعدازمرض اثرات میں نفسیاتی مسائل ہونے کے بھی قائل ہیں۔ ماہرین کا ماننا ہے کہ انفیکشن کے موزی اثرات سے دماغ کا مرکزی کام متاثر ہوتا ہے، اور یہ زہریلے سیریبرل ایڈیما بنانے کا باعث بنتا ہے جس کے نتیجے میں تقریباً تمام مریض ذہنی دباؤ کا شکار ہوتے ہیں۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us