ہفتہ, جنوری 15 Live
Shadow
سرخیاں
قازقستان ہنگامے: مشترکہ تحفظ تنظیم کے سربراہ کا صورتحال پر قابو کا اعلان، امن منصوبے کی تفصیلات پیش کر دیںبرطانوی پارلیمنٹ میں منشیات کا استعمال: اسپیکر کا سونگھنے والے کتے بھرتی کرنے کا عندیاامریکی سی آئی اے اہلکاروں کے ایک بار پھر کم عمر بچوں بچیوں کے ساتھ جنسی جرائم میں ملوث ہونے کا انکشافامریکہ کا مشرقی افریقہ میں تاریخ کے سب سے بڑے فوجی آپریشن کا اعلان: 1 ہزار سے زائد مزید کمانڈو تیارروسی صدر کی ثالثی: آزربائیجان اور آرمینیا کے مابین سرحدی جھڑپیں ختم، سرحدی حدود کے تعین پر اتفاق، جنگ سے متاثر آبادی اور دیگر انسانی حقوق کے تحفظ کی بھی یقین دہانینائیجیر: فرانسیسی فوج کی فائرنگ سے 2 شہری شہید، 16 زخمیامریکی فوج میں ہر 4 میں سے 1 عورت اور 5 میں سے 1 مرد جنسی زیادتی کا نشانہ بنتا ہے، بیشتر خود کشی کر لیتے، کورٹ مارشل کے خوف سے کوئی آواز نہیں اٹھاتا: سابقہ اہلکارروس کا غیر ملکی سماجی میڈیا کمپنیوں پر ملک میں کاروباری اندراج کے لیے دباؤ جاری: رواں سال کے آخر تک عمل نہ ہونے پر پابندی لگانے کا عندیاامریکہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی میں چین اور روس سے بہت پیچھے ہے: امریکی جنرل تھامپسنامریکی تفریحی میڈیا صنعت کس عقیدے، نظریے اور مقصد کے تحت کام کرتی ہے؟

ہندوستان میں مرغوں کی لڑائی میں پنجوں سے بندھا بلیڈ لگنے سے مالک خود ہلاک: مرغا عدالت میں بطور ملزم پیش

ہندوستان میں راجا نامی مرغا مالک کے قتل کے الزام میں عدالت میں پیش ہو گا۔ 23 فروری کو ریاست تیلانگانا کے ضلع جگتیال میں مرغوں کی لڑائی کا مقابلہ منعقد تھا، جہاں سے راجا نامی مرغے کی فرار کی کوشش میں اسکے پنجوں میں بندھے بلیڈ سے اسکا اپنا مالک شدید زخمی ہو گیا اور پھر زیادہ خون بہنے سے اسکی اسپتال جاتے موت واقع ہو گئی۔

اطلاعات کے مطابق مرغے کے مالک ستیش نے لڑائی میں حصے لینے والے اپنے مرغے کے پنجوں پر 3 انچ لمبے بلیڈ لگائے اور اسے لڑائی کے لیے میدان میں چھوڑ دیا۔ تاہم مرغا میدان سے بھاگا تو مالک اسے پکڑنے کے لیے اس کے پیچھے بھاگا اور اسے دبوچ لیا، لیکن اسی دوران پنجوں میں بندھے بلیڈ سے ستیش کے چڈوں پر گہرا کٹ آگیا اور خون زیادہ بہہ جانے سے اسکی موت واقع ہو گئی۔

گواہوں کے بیانات کے مطابق پولیس نے راجا کو پکڑ کر حوالات میں بند کر رکھا ہے اور اسکے پنجوں میں بندھے بلیڈ بھی نہیں اتارے گئے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ مرغے کو بطور ملزم عدالت میں پیش کیا جائے گا، اور واقع کے چشمدید گواہ بھی عدالت میں گواہی دیں گے۔

واضح رہے کہ ہندوستان میں بھی مرغوں کی لڑائی کروانا غیر قانونی ہے، پولیس کا کہنا ہے کہ وہ مقابلہ منعقد کرنے والے افراد کو بھی تلاش کررہے ہیں۔ قانونی ماہرین کے مطابق مقابلہ منعقد کروانے والے افراد بھی ستیش کے قتل میں مجرم ٹھہرائے جا سکتے ہیں۔

یاد رہے کہ مرغوں کی لڑائی جنوبی ایشیا کے تمام ممالک میں غیر قانونی ہے لیکن اکثر دیہات میں اب بھی یہ کافی مقبول کھیل ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us