پیر, دسمبر 6 Live
Shadow
سرخیاں
امریکی سی آئی اے اہلکاروں کے ایک بار پھر کم عمر بچوں بچیوں کے ساتھ جنسی جرائم میں ملوث ہونے کا انکشافامریکہ کا مشرقی افریقہ میں تاریخ کے سب سے بڑے فوجی آپریشن کا اعلان: 1 ہزار سے زائد مزید کمانڈو تیارروسی صدر کی ثالثی: آزربائیجان اور آرمینیا کے مابین سرحدی جھڑپیں ختم، سرحدی حدود کے تعین پر اتفاق، جنگ سے متاثر آبادی اور دیگر انسانی حقوق کے تحفظ کی بھی یقین دہانینائیجیر: فرانسیسی فوج کی فائرنگ سے 2 شہری شہید، 16 زخمیامریکی فوج میں ہر 4 میں سے 1 عورت اور 5 میں سے 1 مرد جنسی زیادتی کا نشانہ بنتا ہے، بیشتر خود کشی کر لیتے، کورٹ مارشل کے خوف سے کوئی آواز نہیں اٹھاتا: سابقہ اہلکارروس کا غیر ملکی سماجی میڈیا کمپنیوں پر ملک میں کاروباری اندراج کے لیے دباؤ جاری: رواں سال کے آخر تک عمل نہ ہونے پر پابندی لگانے کا عندیاامریکہ ہائپر سونک ٹیکنالوجی میں چین اور روس سے بہت پیچھے ہے: امریکی جنرل تھامپسنامریکی تفریحی میڈیا صنعت کس عقیدے، نظریے اور مقصد کے تحت کام کرتی ہے؟چوالیس فیصد امریکی اولاد پیدا کرنے کی خواہش نہیں رکھتے: پیو سروے رپورٹچینی کمپنی ژپینگ نے جدید ترین برقی کار جی-9 متعارف کر دی: بیٹری کے معیار اور رفتار میں ٹیسلا کو بھی پیچھے چھوڑ دیا

ہمارا مقصد ٹرمپ کو نکالنا تھا، ہم کامیاب رہے: سی این این عہدے دار کا صدر ٹرمپ کے خلاف پراپیگنڈے کی مہم کا اعتراف – ویڈیو عیاں

معروف امریکی یو ٹیوب چینل ویریٹاس نے سی این این ڈائیریکٹر چارلی چیسٹر کی ویڈیو نشر کی ہے جس میں معروف ٹی وی چینل کے اعلیٰ عہدے دار سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف باقائدہ پراپیگنڈا مہم چلانے کا اعتراف کرتے دیکھے جا سکتے ہیں۔ ویڈیو میں چارلی بے باکی سے اعتراف کرتے ہیں کہ صدر ٹرمپ کو سرائے ابیض سے ہٹانے میں سی این این کا ہی کردار تھا۔

چارلی نے انکشاف کیا ہے کہ کیسے سی این این نے ٹرمپ کے بیمار ہونے کی مہم چلائی، اور جوبائیڈن کو تندرست اور توانا دکھایا۔ جس کا مقصد عام شہریوں کو یہ باور کروانا تھا کہ ٹرمپ صدارت کے لیے موضوع نہیں۔

چیسٹر کا کہنا ہے کہ ہم نے ڈاکٹروں کو سکرین پر دکھایا جو ٹرمپ کے بارے میں افواہیں پھیلانے میں ہماری مدد کرتے، اور حتیٰ کہ صدر کے بیمار ہونے کا ذمہ دار بھی انہی کو ٹھہراتے، جیسے کہ صدر کی ہاتھ ملانے کی عادت پر باقائدہ رپورٹیں بنائی گئیں، جن میں ڈاکٹر کئی منٹوں تک عوام میں صدر کی نفسیاتی صحت سے متعلق شبہات پیدا کرتے۔ ہم نے ایسی خبریں چلائی، جنہیں ہم خود پیدا کرتے اور پھر انکی خوب تشہیر کرتے، چیسٹر نے سی این این کی ایک خبر کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ دو دن تو برائن سٹیلٹر کی وہ خبر چلائی گئی جس میں صحافیوں کو ٹرمپ کی صحت سے متعلق خبر نکالنے پر ابھارا گیا۔

ویڈیو میں چیسٹر بتاتے ہیں کہ صدر ٹرمپ کے خلاف مہم کے برعکس جوبائیڈن سے متعلق خوب اچھی تشہیری مہم چلائی گئی، سی این این پر جوبائیڈن کو ہمیشہ دوڑ لگاتے، صحت کا خیال رکھتے، اور متحرک دکھایا گیا جس سے عوام میں انکی عمر اور صحت سے متعلق دھوکہ پیدا کیا گیا۔

چارلی چیسٹر کو ویڈیو میں واضح طور پر کہتے سنا جا سکتا ہے کہ؛ “دیکھو ہم نے کیا کیا، ہم (سی این این) نے ٹرمپ کو نکال باہر کیا، مجھے 100٪ یقین ہے کہ اگر سی این این یہ ساری مہم نہ چلاتا تو ٹرمپ کبھی بھی انتخابات نہ ہارتا، میں اسی لیے سی این این میں آیا کیونکہ میں اس سارے کھیل کا حصہ بننا چاہتا تھا۔

چیسٹر کا کہنا ہے کہ صحت سے متعلق بیانیہ مظبوط کرنے کے بعد ماحولیاتی مسئلے کو پکڑا گیا، اور صدر ٹرمپ کا نام لیے بغیر عوام میں ماحولیاتی مسائل پر آگاہی کی مہم شرو ع کردی گئی، ایسی ویڈیو نشر کی گئیں جن میں ماحولیاتی مسائل کو خوف کی علامت بنا دیا گیا، حتیٰ کہ معیشت کو بھی ماحولیاتی مسائل سے لاحق خطرات کا جھوٹ نشر کیا گیا۔ پگھلتی برف سے شہروں کو ڈوبتے اور امریکہ میں صحرائی گرمی کی ویڈیو نشر کی گئیں۔

چیسٹر نے انکشاف کیا کہ صدر ٹرمپ کے خلاف چلنے والی ساری مہم کی زمہ داری جیف زوکر کو دی گئی تھی۔

سی این این نے تاحال ان تمام انکشافات پر کوئی ردعمل نہیں دیا۔ البتہ ویڈیو کو صدر ٹرمپ کے حامیوں نے خوب اٹھایا ہے، انکا کہنا ہے کہ وہ پہلے ہی سی این این کے متعصب کردار سے واقف تھے، لیکن انکشافات سے عام عوام کو لبرل سیاست سے متعلق بہتر آگاہی حاصل ہو گی۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us