جمعرات, اکتوبر 28 Live
Shadow
سرخیاں
جمناسٹک عالمی چیمپین مقابلے میں روسی کھلاڑی دینا آویرینا نے 15ویں بار سونے کا تمغہ جیت کر نیا عالمی ریکارڈ بنا دیا، بہن ارینا دوسرے نمبر پر – ویڈیویورپی یونین ہمارے سر پر بندوق نہ تانے، رویہ نہ بدلا تو بریگزٹ کی طرز پر پولیگزٹ ہو گا: پولینڈ وزیراعظمسابق سعودی جاسوس اہلکار سعد الجبری کا تہلکہ خیز انٹرویو: سعودی شہزادے محمد بن سلمان پر قتل کے منصوبے کا الزام، شہزادے کو بے رحم نفسیاتی مریض قرار دے دیاملکی سیاست میں مداخلت پر ترکی کا سخت ردعمل: 10 مغربی ممالک نے مداخلت سے اجتناب کا وضاحتی بیان جاری کر دیا، ترک صدر نے سفراء کو ملک بدر کرنے کا فیصلہ واپس لے لیاترکی کو ایف-35 منصوبے سے نکالنے اور رقم کی تلافی کے لیے نیٹو کی جانب سے ایف-16 طیاروں کو جدید بنانے کی پیشکش: وزیر دفاع کا تکنیکی کام شروع ہونے کا دعویٰ، امریکہ کا تبصرے سے انکارترک صدر ایردوعان کا اندرونی سیاست میں مداخلت پر 10 مغربی ممالک کے سفراء کو ناپسندیدہ قرار دینے کا فیصلہبحرالکاہل میں چینی و روسی جنگی بحری مشقیں مکمل – ویڈیونائجیریا: جیل حملے میں 800 قیدی فرار، 262 واپس گرفتار، 575 تاحال مفرورترکی: فسلطینی طلباء کی جاسوسی کرنے والا 15 رکنی صیہونی جاسوس گروہ گرفتار، تحقیقات جاریامریکی انتخابات میں غیر سرکاری تنظیموں کے اثرانداز ہونے کا انکشاف: فیس بک کے مالک اور دیگر ہم فکر افراد نے صرف 2 تنظیموں کو 42 کروڑ ڈالر کی خطیر رقم چندے میں دی، جس سے انتخابی عمل متاثر ہوا، تجزیاتی رپورٹ

مقبوضہ فلسطین: شام سے صیہونی جوہری مرکز پر حملے کی کوشش ناکام، خود کار دفاعی نظام وقت پر چل نہ سکا، خطرے کی گھنٹیاں بج گئیں، لوگوں میں خوف و ہراس

صیہونی انتظامیہ کے زیر تسلط مقبوضہ فلسطین میں جوہری تحقیق کے مرکز کے قریب دھماکے سنے گئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق رات ابوقریناط نامی گاؤں جو کہ شیمعون پیریز نیگیو جوہری تحقیقاتی مرکز سے صرف 21 کلومیٹر دور ہے میں دھماکے سنے گئے، جس کے فوری بعد علاقہ تنبیہی گھنٹی کی آواز سے گونج اٹھا۔

مقامی میڈیا کے مطابق خود کار دفاعی نظام وقت پر متحرک نہ ہو سکا، جس کے باعث میزائل زمین پر آکر گرا۔

قابض صیہونی فوج کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ایس اے-5 میزائل شام سے داغے گئے، جس کا مبینہ نشانہ شام پر حملہ آور ہوتے جنگی طیارے یا جوہری مرکز تھا، قابض فوج کے ترجمان کے مطابق حملے میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا، اور فوج نے جوابی کارروائی کرتے ہوئے شام میں بمباری کی ہے۔

مقامی صحافی کا کہنا ہے کہ فوج کے دیمونہ کے علاقے کے شہریوں کو موبائل میسج سے مطلع کرنے سے پہلے زور دار دھماکہ سنا گیا اور عمارتیں ہل گئیں، اور لوگ شدید خوف میں مبتلا ہو گئے۔

واضح رہے کہ دیمونہ جوہری مرکز صیہونی انتظامیہ کا اہم جوہری تحقیقی مرکز ہے۔ مرکز 1986 میں قائم کیا گیا، ماضی میں مرکز پر کام کرنے والے جوہری سائنسدان موردیچائے وانونو نے انکشاف کیا تھا کہ مرکز میں جوہری ہتھیاروں کا خفیہ ٹھکانہ ہے، انکشاف کرنے پر صیہونی انتظامیہ نے وانونو کو گرفتار کر لیا تھا، اور ان پر جاسوسی اور ملک سے غداری کا الزام لگایا تھا۔ وانونو کو بعد میں عدالت سے رہائی ملی البتہ وہ اب بھی مقبوضہ علاقے میں سخت نگرانی میں زندگی گزار رہے ہیں۔

وانونو کی دی گئی تفصیل کی بنیاد پر ہی امریکی میگزین ٹائمز نے 1986 میں خبر دی تھی کہ صیہونی انتظامیہ کے پاس 20 ہائیڈروجن اور 80 جوہری بم موجود ہیں۔

یاد رہے کہ صیہونی انتظامیہ نے آج تک جوہری طاقت ہونے کا اعلان نہیں کیا لیکن عالمی اداروں کے مطابق اس کے بعد پاس جوہری ہتھیار موجود ہیں۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us