پیر, جون 14 Live
Shadow
سرخیاں
ترکی: 20 ٹن سونا اور 5 ٹن چاندی کا نیا ذخیرہ دریافت، ملکی سالانہ پیداوار 42 ٹن کا درجہ پار کر گئی، 5 برسوں میں 100 ٹن تک لے جانے کا ارادہحکومت پنجاب کا ویکسین نہ لگوانے والوں کے موبائل سم کارڈ معطل کرنے کی پالیسی لانے کا فیصلہموساد کے سابق سربراہ کا ایرانی جوہری سائنسدان اور مرکز پر سائبر حملے کا اعترافی اشارہ: ایرانی سائنسدانوں کو منصوبہ چھوڑنے پر معاونت کی پیشکش کر دییورپی اشرافیہ و ابلاغی اداروں کے برعکس شہریوں کی نمایاں تعداد نے روس کو اہم تہذیبی شراکت دار و اتحادی قرار دے دیاروسی بحریہ نے سٹیلتھ ٹیکنالوجی سے لیس جدید ترین بحری جہاز کا مکمل نمونہ تیار کر لیا: مکمل جہاز آئندہ سال فوج کے حوالے کر دیا جائےگاٹویٹر کو نائیجیریا میں دوبارہ بحالی کیلئے مقامی ابلاغی اداروں کی طرح لائسنس لینا ہو گا، اندراج کروانا ہو گا: افریقی ملک کا امریکی سماجی میڈیا کمپنی کو دو ٹوک جواب، صدر ٹرمپ کی جانب سے پابندی پر ستائش کا بیانکاراباخ آزادی جنگ: جنگی قیدی چھڑوانے کے لیے آرمینی وزیراعظم کی آزربائیجان کو بیٹے کی حوالگی کی پیشکشمجھ پر حملے سائنس پر حملے ہیں: متنازعہ امریکی مشیر صحت ڈاکٹر فاؤچی کا اپنے دفاع میں نیا متنازعہ بیان، وباء سے شدید متاثر امریکیوں کے غصے میں مزید اضافہچین 3 سال کے بچوں کو بھی کووڈ-19 ویکسین لگانے والا دنیا کا پہلا ملک بن گیاایرانی رویہ جوہری معاہدے کی بحالی میں تعطل کا باعث بن سکتا ہے: امریکی وزیر خارجہ بلنکن

جنوبی کوریا: جنسی زیادتی کی شکار خاتون فوجی اہلکار کی خودکشی پر ہنگامہ برپا، تحقیقات کا دائرہ وسیع

جنوبی کوریا میں خاتون فوجی اہلکار کی خودکشی نے ہنگامہ برپا کر دیا ہے، صدر مون جائن نے معاملے کی مکمل تحقیقات کا حکم دے دیا ہے لیکن سماجی ماہرین کے مطابق اب واقعہ محکمہ دفاع کے ماحول اور خواتین کے معاشرے میں کردار اور قوانین پر گہرے اثرات چھوڑے گا۔

صدر جائن نے سیئول کے قومی قبرستان میں منعقد تقریب سے خطاب میں افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انہیں فوجی بیرکوں میں موجود خواتین کے جنسی استحصال سمیت دیگر جرائم سے شدید دکھ پہنچتا ہے۔

صدر نے متاثرہ خاندان سے ملاقات میں خاتون کی حفاظت میں ریاست کی ناکامی پر معذرت کا اظہار کیا ہے، تاہم خبروں کے مطابق خاتون کے اہل خانہ نے معاملے کی تحقیقات اور انصاف دلانے میں ناکامی کا الزام لگاتے ہوئے نظام کو انکی بیٹی کی موت کا زمہ دار ٹھہرایا ہے۔

صدر مون نے وزیر دفاع کو ہدایت دی ہے کہ نہ صرف واقعے کی مکمل تحقیقات کی جائیں بلکہ بیرکوں میں موجود اس استحصالی عمل کو ختم کرنے کے لیے حکمت عملی مرتب کی جائے۔

یاد رہے کہ جنوبی کوریا کی فضائیہ کی ایک اہلکار نے مارچ کے اوائل میں اپنے ایک مرد ساتھی پر جنسی زیادتی کا الزام لگایا تھا۔ متاثرہ خاندان کے مطابق خاتون نے اپنے اعلیٰ افسران کی طرف سے بھی اس کے ساتھ بدسلوکی کی شکایت کی تھی، متاثرہ خاندان کے مطابق افسران نے ملزم کو سزا دینے کے بجائے اس سے سمجھوتہ کرنے کے لیے بھی دباؤ ڈالا۔

لواحقین کا مزید کہنا ہے کہ فوجی نظام ثبوت کے طور پر کیمرہ ریکارڈنگ جمع کروانے کے باوجود مناسب تفتیش کرنے میں ناکام رہا، جس سے دل برداشتہ ہو کر “لی” نے خودکشی کر لی۔

فضائیہ کے سربراہ لی سیونگ یون نے شدید دباؤ کے باعث زمہ داری قبول کرتے ہوئے استعفیٰ دے دیا ہے، اطلاعات کے مطابق اب فوجی استغاثہ نے بھی فضائیہ کے مرکز میں تحقیقات کا دائرہ بڑھا دیا ہے، اس سے پہلے معاملے کی تحقیقات پر فائز افسر اور سینئر ماسٹر سارجنٹ کو بھی ذمہ داریوں  سے فارغ کردیا گیاہے۔ جبکہ مرکزی ملزم کو بھی حراست میں لے لیا گیا ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں

Contact Us