اتوار, اکتوبر 25 Live
Shadow

کرونا کے وار، تاحال برقرار اور ڈبلیو ایچ او کی تنبیہہ

کورونا وائرس بنا ہوا ہے عوامی دشمن نمبر ایک اور وبائی بیماری بدتر سے بدتر اور خراب تر ہو سکتی ہے

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) نے متنبہ کیا ہے کہ اگر تمام ممالک صحت کی نگہداشت کی سخت ہدایات پر کاربند نہیں رہتے ہیں تو کوڈ 19 وبائی بیماری مزید خراب سے خراب تر ہونے والی ہے۔ اس بیماری سے پہلے ہی عالمی سطح پر پانچ لاکھ سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

جنیوا میں ایجنسی کے ہیڈکوارٹر سے پیر کے روز وڈیو لنک کے ذریعہ پریس سے خطاب کرتے ہوئے ، ڈبلیو ایچ او کے سربراہ ٹیڈروس اذانوم گیبریئسس نے وبائی مرض کے بارے میں گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوۓ کہا کہ بہت سارے ممالک غلط سمت کی طرف جارہے ہیں ، وائرس عوام دشمن نمبر ایک بنا ہوا ہے۔ اگر بنیادی باتوں پر عمل نہیں کیا جاتا ہے تو اس وبائی بیماری کا مسئلہ بد سے بدتر اور خراب تر ہونے جا رہا ہے۔

ڈبلیو ایچ او کی طرف سے وبائی مرض کے آغاز کے بعد سے ہی دنیا بھر میں فعال کورونا وائرس کے کیسز کا ریکارڈ اضافہ درج کیا گیا ہے۔ اتوار کے روز، عالمی ادارہ صحت نے وائرس کے تقریبا 230،370 نئے کیسز درج کیے۔ کوویڈ 19 میں شرح اموات تا حال مستحکم ہے ، جو روزانہ کی بنیاد پر 5000 کے قریب ہے۔
وبائی امراض کے اعداد و شمار کے مطابق ، کرونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 13 ملین سے زیادہ ہے۔ 560،000 سے زیادہ افراد اس بیماری کے ہاتھوں لقمۂ اجل بن چکے ہیں۔ امریکہ ، برازیل اور انڈیا وباء سے سب سے زیادہ متاثرہ ممالک ہیں جہاں کرونا کیسز کی کل تعداد کا نصف حصہ موجود ہے۔

دوست و احباب کو تجویز کریں

تبصرہ کریں