بدھ, جنوری 27 Live
Shadow

روس دنیا میں

رپٹلی 2020 میں دنیا کی مقبول ترین ویڈیو خبر رساں ایجنسی رہی

رپٹلی 2020 میں دنیا کی مقبول ترین ویڈیو خبر رساں ایجنسی رہی

روس دنیا میں
رشیا ٹوڈے کی ویڈیو خبر رساں ایجنسی رپٹلی 2020 میں دنیا بھر کی سب سے مقبول ایجنسی رہی ہے۔ رپٹلی نے یو ٹیوب پر اے ایف پی، رائیٹرز، ایسوسی ایٹڈ پریس اور دیگر مقبول ایجنسیوں کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ دنیا بھر میں اہم ترین واقعات کی فوٹیج کے لیے مقامی ٹی وی چینلوں اور صارفین نے بھی رپٹلی پر اعتماد کا اظہار کیا ہے۔آن لائن ویڈیو کی مقبولیت ماپنے والے ادارے ٹیبیولر لیب کے شائع کردہ اعدادوشمار کے مطابق رپٹلی نے 2020 میں سب سے زیادہ بہتر کارکردگی دکھائی، جس کے یوٹیوب چینل کا سال بھرمیں 42 کروڑ 90 لاکھ سے زائد افراد نے دورہ کیا۔ جبکہ اسکے مدمقابل یا دوسرے نمبر پر رہنے والی ویڈیو ویب سائٹ یون ہیپ کے صارفین کی تعداد 36 کروڑ 70 لاکھ تھی۔رپٹلیی کے ڈیجیٹل مواد کے ذمہ دار دمتری کیشیشیو کا کہنا ہے کہ ان سے دنیا بھر میں ہونے والے واقعات کی فوری ویڈیو کی طلب کی جاتی ہے۔ ایسے میں ہمارے صحافی اور عملے ...
کورونا ویکسین: برازیل نے بھی سپوتنک-5 کی پیداوار شروع کر دی

کورونا ویکسین: برازیل نے بھی سپوتنک-5 کی پیداوار شروع کر دی

روس دنیا میں
ہندوستان، چین اور جونبی کوریا کے بعد برازیل دنیا کا چوتھا ملک ہے جس نے مقامی سطح پر کورونا کی روسی ویکسین سپوتنک-5 کی تیاری شروع کر دی ہے۔برازیل کی ادویات ساز کمپنی یونیاؤ کوئیمیکا نے ملک میں قائم دو مراکز میں ویکسین کی تیاری کا کام شروع کیا ہے۔ کمپنی کو روس سے ویکسین کا بنیادی خلوی مواد حاصل کر لیا ہے۔واضح رہے کہ برازیل دنیا کے شدید ترین متاثرہ ممالک میں سے ایک ہے جہاں اب تک 81 لاکھ شہری وائرس سے متاثر ہو چکے ہیں جبکہ 2 لاکھ 3 ہزار سے زائد اموات کی تصدیق ہوئی ہے۔روسی محکمے کے مطابق اب تک 50 سے زائد ممالک نے سپوتنک-5 کی خریداری کے لیے رابطہ کیا ہے۔ جس کے لیے مجموعی طور پر ایک ارب 20 کروڑ ٹیکوں کی تیاری کا کام شروع کر دیا گیا ہے۔ بڑی مقدار ہونے کے باعث روس نے دوست ممالک کی بڑی کمپنیوں کے اشتراک کے ساتھ مقامی سطح پر پیداوار شروع کر دی ہے۔یاد رہے کہ سپوتنک-5 باقائدہ درج ہون...
وینزویلا کا روس سے 1کروڑ ویکسین لینے کا معاہدہ طے

وینزویلا کا روس سے 1کروڑ ویکسین لینے کا معاہدہ طے

روس دنیا میں
وینزویلا کے صدر نیکولس مادورو نے روس سے سپوتنک-5 ویکسین کے ایک کروڑ انجیکشن لینے کا اعلان کیا ہے۔ صدر کا کہنا ہے کہ 2021 کے پہلے تین ماہ میں ملک کی تمام آبادی کو بلا تفرق ویکسین کی پہلی خوراک دے دی جائے گی۔ٹی وی کے ذریعے عوام سے خطاب میں صدر نیکولس کا کہنا تھا کہ سپوتنک ویکسین کی آزمائش ملک میں ہو چکی ہے، اور وہ ویکسین کی بروقت دستیابی پر روسی صدر کے مشکور ہیں۔ تمام شہریوں کو بلا تفریق مفت ویکسین فراہم کی جائے گی، پھر چاہے کوئی لسانی طور پر کولمبیا کا ہو یا پرتگالی، اٹلی کا ہو یا وینزویلا کا، ملک میں رہنے والے تمام باشندوں کو مفت ویکسین فراہم کی جائے گی۔https://twitter.com/NicolasMaduro/status/1343988821424267265?s=20یاد رہے کہ کولمبیا کے صدر ایوان ڈیوک نے ملک میں 9 لاکھ وینزویلی شہریوں کو ویکسین نہ لگانے کا بیان دیا، امتیازی سلوک پر مبنی بیان داغنے پر کولمبیا کے صدر کو کڑی ...
آزربائیجان اور آرمینیا کاراباخ میں جنگ بندی کے لیے ماسکو میں بات چیت پر متفق: ترجمان روسی دفتر خارجہ

آزربائیجان اور آرمینیا کاراباخ میں جنگ بندی کے لیے ماسکو میں بات چیت پر متفق: ترجمان روسی دفتر خارجہ

روس دنیا میں
روسی دفتر خارجہ کی ترجمان ماریا زاخارووا کا کہنا ہے کہ آزربائیجان اور آرمینیا نے ماسکو کی طرف سے کاراباخ میں جنگ بندی کے لیے بات چیت پر حامی بھر لی ہے۔ بات چیت کا آغاز جلد ہو جائے گا، تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں۔بات چیت کی پیشکش روسی صدرولادیمیر پیوتن کی طرف سے کی گئی تھی، جسے دونوں ممالک نے قبول کرتے ہوئے وزراء خارجہ کو بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے۔ روسی منصوبے کے تحت جنگ بندی اور جنگی قیدیوں کی رہائی پر بات چیت ہو گی۔واضح رہے کہ 27 ستمبر سے دونوں ہمسایہ ممالک میں کاراباخ کے علاقے میں شدید لڑائی جاری ہے، جسے عالمی طور پر آزربائیجان کا علاقہ مانا جاتا ہے تاہم آرمینیا نے اس پر قبضہ کر رکھا ہے۔ دونوں حریف اب ایک دوسرے پر عوامی مقامات پر بمباری کا الزام بھی لگا رہے ہیں۔ اور اب تک سینکڑوں عسکری و عوامی ہلاکتیں ہو چکی ہیں۔عالمی برادری بات چیت سے مسئلے کے حل پر زور دے رہی ہے۔ ...
روسی کووڈ19 ویکسین سپوتنک وی کی پہلی کھیپ وینزویلا پہنچ گئی، صدر نیکولس کا روس کا شکریہ

روسی کووڈ19 ویکسین سپوتنک وی کی پہلی کھیپ وینزویلا پہنچ گئی، صدر نیکولس کا روس کا شکریہ

روس دنیا میں
https://youtu.be/n3pDW6tZoFEروس نے کووڈ19 ویکسین کی پہلی کھیپ وینزویلا پہنچا دی ہے۔اطلاعات کے مطابق ویکسین تجرباتی مشق کے لیے پہنچائی گئی ہے۔ویکسین کو وینزویلیا کے نائب صدرنے وصول کیا اور اسے متعلقہ طبی شعبے کے حوالے کر دیا گیا ہے، جو دو ماہ میں تجربے کے بعد اسکی تفصیلی رپورٹ کو پیش کرے گا۔اس موقع پر وینزویلا کے صدر نے روس کا خصوصی شکریہ ادا کیا۔https://twitter.com/NicolasMaduro/status/1312136075972804608?s=20
روسی صدر نے اقوام متحدہ کے عملے کو کووڈ19 کی ویکسین مفت دینے کی پیشکش کر دی

روسی صدر نے اقوام متحدہ کے عملے کو کووڈ19 کی ویکسین مفت دینے کی پیشکش کر دی

روس دنیا میں
روسی صدر ولادیمیر پیوٹن نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب میں کہا ہے کہ روس عالمی ادارے کے عملے کو کووڈ ویکسین کی مفت ویکسین فراہم کر سکتا ہے۔خطاب میں روسی صدر کا کہنا تھا کہ دنیا ایک نئی طرز کے مسئلے کا سامنا کر رہی ہے، کووڈ19 وباء نے پوری دنیا میں کروڑوں افراد کو متاثر کیا ہے، لاکھوں قیمتی جانیں اسکا شکار ہوئی ہیں، سرحدیں بند ہیں اور پوری دنیا میں روزمرہ کی زندگی متاثر ہے، اور یہ سب ایک حقیقت ہے۔صدر پیوٹن کا کہنا تھا کہ عالمی رہنماؤں کو مل بیٹھنا چاہیے اور انسانیت کے تحفظ کے لیے ویکسین کی مفت دستیابی پہ کام کرنا چاہیے، روس دنیا کی پہلی ویکسین بنانے میں کامیاب رہا ہے، جو پائیدار، محفوظ اور اثردار ہے۔ روسی صدر کا مزید کہنا تھا کہ روس ویکسین کی پیداوار کے لیے شراکت داری کرنے کو بھی تیار ہے، اور جلد ہم ایک عالمی سطح کی آن لائن کانفرنس کا انعقاد کر رہے ہیں، جس میں ان تمام ممالک ک...
لیبیا خانہ جنگی میں حالات کشیدہ – ترکی کے بعد مصر بھی فوج اتارنے کو تیار: مسلم  ممالک میں ٹکراؤ کا خطرہ

لیبیا خانہ جنگی میں حالات کشیدہ – ترکی کے بعد مصر بھی فوج اتارنے کو تیار: مسلم ممالک میں ٹکراؤ کا خطرہ

روس دنیا میں, عالمی
لیبیا میں 2011 میں نیٹو کی فوجی مداخلت نے ملک کے معروف حکمران معمر قذافی کا تحتہ تو الٹ دیا تاہم 9 سال گزرنے کے باوجود ملک کی سیاسی و دفاعی صورتحال دگرگوں ہے۔ لیبیا میں اس وقت دو متوازی حکومتیں قائم ہیں۔ بڑے قومی اتحاد (جی این او) کو ترکی، اٹلی اور قطر کے ساتھ ساتھ غیر اعلانیہ طور پر کسی حد تک روس کے علاوہ دیگرعالمی طاقتوں اور اداروں کی حمایت حاصل ہے جبکہ خلیفہ حفتر کی قیادت میں لیبیا کی قومی فوج (ایل این اے) کو بڑی عالمی طاقتوں کی حمایت تو حاصل نہیں تاہم روس، متحدہ عرب امارات اور دیگر عرب ممالک اس گروہ کی سرپرستی کر رہے ہیں۔چند ماہ قبل ترکی، قطر اور اٹلی کے حمایت یافتہ گروہ نے ترک فوج کی براہ راست مداخلت سے خانہ جنگی کا پانسہ پلٹا تو مخالف گروہ کی جانب سے تشویش کا اظہار سامنے آیا۔ تاہم کسی قسم کی سنوائی نہ ہونے پر بالآخر مصر نے میدان میں کودنے کا فیصلہ کر لیا ہے اور قومی پارلیمان م...